உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Shri Krishna Janmabhoomi:ہندو تنظیموں کا دعویٰ-گیانواپی کی طرح متھرا کی مسجد میں دفن ہے مندر کے ثبوت

    ہندوتوادی تنظیموں کی متھرا کی شاہی عید گاہ مسجد کو لے کر متنازع مانگ ہوئی تیز۔

    ہندوتوادی تنظیموں کی متھرا کی شاہی عید گاہ مسجد کو لے کر متنازع مانگ ہوئی تیز۔

    Shri Krishna Janmabhoomi: بتادیں کہ ان تنظیموں کے عہدیداروں کی جانب سے متھرا کی عدالت میں مقدمہ بھی دائر کیا گیا ہے، جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ شاہی عیدگاہ مسجد مندر کی زمین پر بنائی گئی ہے۔ ہندوتوا تنظیمیں تجاوزات ہٹانے کا مطالبہ کر رہی ہیں۔ یہ مقدمات مقامی عدالت میں زیر سماعت ہیں۔

    • Share this:
      Shri Krishna Janmabhoomi: وارانسی کی گیانواپی مسجد کے احاطے میں سروے کے بعد ہندو فریق کے وکیل نے دعویٰ کیا ہے کہ یہاں ایک شیولنگ مل گیا ہے۔ یہاں متھرا کے گیانواپی کی طرح ہندو تنظیموں کی جانب سے شری کرشن کی جائے پیدائش کے قریب واقع شاہی عیدگاہ مسجد کا سروے کرانے کے لیے عدالت میں درخواست دی گئی ہے۔ عدالت میں اس معاملے کی سماعت یکم جولائی کو ہونی ہے۔ اس درمیان، ہندوتوادی تنظیموں اور ایک فریق نے دعویٰ کیا ہے کہ گیانواپی کی طرح شری کرشنا کی جائے پیدائش کے قریب شاہی عیدگاہ میں بھی ایک مندر ہونے کا ثبوت موجود ہے۔ یہاں سروے کیا جائے تو مندر کے ثبوت مل جائیں گے۔

      مندر توڑ کر بنائی گئی عیدگاہ!
      شری کرشن جنم بھومی مکتی نیاس کے صدر ایڈوکیٹ مہیندر پرتاپ سنگھ نے کہا کہ متھرا میں مندر کو گرا کر شاہی عیدگاہ مسجد بنائی گئی ہے۔ گیان واپی کی طرز پر یہاں کمیشن کا سروے جلد کیا جائے۔ یہاں بھی ثبوت مل جائیں گے۔ نارائنی سینا کے قومی صدر منیش یادو نے کہا کہ ثبوت عیدگاہ مسجد کی دیواروں سے ہی ملیں گے، کیونکہ اورنگ زیب نے شاہی عید گاہ بنائی ہے۔ اس میں مندر کا ملبہ ہی استعمال ہوا تھا۔ جس طرح سے دیواریں بنی ہیں، اس سے بھی مندر کا ثبوت ملتا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Gyanvapi Mosque کے بعد اب متھرا کے شاہی عیدگاہ کو سیل کرنے کیلئے کورٹ میں دائرل ہوئی عرضی

      جنم بھومی-عیدگاہ معاملے کو لے کر دائر ہوچکے ہیں کیس
      اکھل بھارت ہندو مہاسبھا کے خزانچی دنیش شرما نے کہا کہ ہم عدالت سے مطالبہ کرتے ہیں کہ شاہی عیدگاہ مسجد کا سروے بھی گیانواپی جیسا ہونا چاہیے، جس طرح سے وہاں ثبوت ملے ہیں، وہ عیدگاہ میں بھی ملیں گے۔

      یہ بھی پڑھیں:
      مسلم دانشوروں کی اپیل-مسلم بھائی بڑادل کرکے ہندوبھائیوں کوسونپ دیں Gyanvapi مسجد

      آپ کو بتادیں کہ ان تنظیموں کے عہدیداروں کی جانب سے متھرا کی عدالت میں مقدمہ بھی دائر کیا گیا ہے، جس میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ شاہی عیدگاہ مسجد مندر کی زمین پر بنائی گئی ہے۔ ہندوتوا تنظیمیں تجاوزات ہٹانے کا مطالبہ کر رہی ہیں۔ یہ مقدمات مقامی عدالت میں زیر سماعت ہیں۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: