ایکسکلوزیو: امت شاہ نےکہا- سبھی مسلمان درانداز نہیں، 2024 سے پہلے پورے ملک میں نافذ کردیں گے این آرسی

نیوز 18 نیٹ ورک گروپ کےایڈیٹران چیف راہل جوشی کودئیےایکسکلوزیوانٹرویومیں وزیر داخلہ امت شاہ نے کہا کہ این آرسی کو ہم 2024 سے پہلے نافذ کردیں گے۔

Oct 17, 2019 01:54 PM IST | Updated on: Oct 17, 2019 07:46 PM IST
ایکسکلوزیو: امت شاہ نےکہا- سبھی مسلمان  درانداز نہیں، 2024 سے پہلے پورے ملک میں نافذ کردیں گے این آرسی

امت شاہ نےکہا کہ یونیفارم سول کوڈ یقینی طور پر ہمارے ایجنڈے میں شامل ہے۔

نئی دہلی: مرکزی وزیرداخلہ اوربی جے پی کےقومی صدرامت شاہ نے نیشنل رجسٹرفار سٹیزن (این آرسی) کولےکربڑا بیان دیا ہے۔ نیوز18 نیٹ ورک  گروپ کےایڈیٹرراہل جوشی کودیئے گئے ایکسکلوزیوانٹرویومیں امت شاہ نےکہا کہ این آرسی کو ہم 2024 سے پہلے نافذ کردیں گے۔ ایڈیٹران چیف راہل جوشی نےملک کے وزیرداخلہ سے پوچھا کہ این آرسی کب تک نافذ ہوپائےگا، اس کا کوئی روڈ میپ ہے؟ اس پرامت شاہ نےکہا کہ یہ یقینی طورپر2024 سے پہلے نافذ کردیا جائے گا۔

عزت بچانے کےلئےآنے والے دراندازنہیں

Loading...

حال ہی میں ایک خطاب میں امت شاہ نے کہا تھا کہ جتنے بھی ہندو ہیں، عیسائی ہیں، بودھ مذہب کےلوگ ہیں اورجین ہیں، وہ سب ہمارے ملک میں محفوظ ہیں، لیکن انہوں نے مسلمانوں کا ذکرنہیں کیا تھا۔ اس پرجب وزیرداخلہ کی رائے جانی گئی توانہوں نےکہا 'محفوظ ہیں، ایسا نہیں کہا۔ ان لوگوں کوشہریت دیں گے، یہ کہا تھا۔ اس کے پیچھے بھی ایک وجہ ہے۔ افغانستان، پاکستان اوربنگلہ دیش کے مائنارٹی (اقلیت) اگراپنا مذہب بچانےکے لئےاس ملک کی پناہ میں آتے ہیں اورہراساں ہوکرآئے ہیں، اپنی ماؤں، بہنوں اوربچیوں کی عزت بچانے کےلئے یہاں آتے ہیں تو وہ پناہ گزیں ہیں، درانداز نہیں'۔

سبھی مسلمان درانداز، ایسا میرا کہنا نہیں

وزیرداخلہ نےمزید کہا، 'اگرکوئی روزی روٹی کےلئےآتا ہے یا لاء اینڈ آرڈرخراب کرنے کےلئے آتا ہے تو وہ درانداز ہوتا ہے۔ سبھی مسلمان دراندازہیں ایسا میرا کہنا نہیں ہے۔ ان پر مذہبی استحصال ہونےکے امکانات نہیں ہیں'۔ اس کے ساتھ ہی انہوں نے سوال پوچھا 'تقسیم کے وقت دونوں پاکستان ملا کر30 فیصد مسلمان تھے، اب 6.5 فیصد ہوگئے، باقی کےکہاں گئے'؟

بی جے پی کےاگلے ایجنڈے اوریونیفارم سول کوڈ پرپوچھے گئے سوال کے جواب میں امت شاہ نےکہا کہ یہ ہمارے انتخابی منشورکا حصہ ہے۔ مناسب وقت پراس معاملے پرپارٹی اور حکومت دونوں غوروخوض کریں گے۔ ابھی اس بارے میں کوئی تاریخ دینا ممکن نہیں ہے۔ ہمارے انتخابی منشورمیں ہے توہمارا ایجنڈا توآٹومیٹک بنتا ہے۔

Loading...