ہوم » نیوز » وطن نامہ

جموں وکشمیر کے دورہ پر راجناتھ سنگھ، جنگ بندی پر لے سکتے ہیں بڑا فیصلہ

جموں وکشمیر کے کپواڑہ میں فوج کے گشتی ٹیم پر حملے کے تقریباً ایک ہفتہ کے بعد مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ وہاں دو روزہ دورہ پر جارہے ہیں۔ اس دوران وہ شمالی کشمیر میں حالات کا جائزہ لیں گے۔ ذرائع کے مطابق اس دوران مرکزی حکومت کی طرف سے اعلان شدہ یکطرفہ جنگ بندی کے فیصلے پر بھی از سر نو غور کیا جاسکتا ہے۔

  • Share this:
جموں وکشمیر کے دورہ پر راجناتھ سنگھ، جنگ بندی پر لے سکتے ہیں بڑا فیصلہ
جموں وکشمیر کے کپواڑہ میں فوج کے گشتی ٹیم پر حملے کے تقریباً ایک ہفتہ کے بعد مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ وہاں دو روزہ دورہ پر جارہے ہیں۔ اس دوران وہ شمالی کشمیر میں حالات کا جائزہ لیں گے۔ ذرائع کے مطابق اس دوران مرکزی حکومت کی طرف سے اعلان شدہ یکطرفہ جنگ بندی کے فیصلے پر بھی از سر نو غور کیا جاسکتا ہے۔

سری نگر: جموں وکشمیر کے کپواڑہ میں فوج کے گشتی ٹیم پر حملے کے تقریبا ایک ہفتہ کے بعد مرکزی وزیر داخلہ راجناتھ سنگھ وہاں دو روزہ دورہ پر جارہے ہیں۔ اس دوران وہ شمالی کشمیر میں حالات کا جائزہ لیں گے اور ذرائع کی مانیں تو اس دوران مرکزی حکومت کی طرف سے اعلان شدہ یکطرفہ جنگ بندی کے فیصلے پر بھی از سر نو غور کیا جاسکتا ہے۔


ذرائع نے نیوز 18 کو بتایا کہ راجناتھ سنگھ نے وادی کے اس  دورہ میں کپواڑہ کے حالات پر تفصیل سے بات کریں گے۔ ایک افسر نے بتایا کہ وزیرداخلہ یہاں سرحدی علاقوں میں رہنے والے لوگوں سے بھی ملاقات کریں گے۔


اس کے علاوہ وہاں گوجروں، پہاڑیوں اور کپواڑہ کے لوگوں کے ساتھ ساتھ سیکورٹی  عملہ کے افسران کے ساتھ بھی بات چیت کریں گے۔


افسران نے بتایا کہ پورے ملک کے 28 ریاستوں کے 115 اضلاع میں سماجی اقتصادی حالت کو سدھارنے کے مقصد سے مرکزی حکومت کی اسکیمیں چلا رہی ہے۔ ایسے میں راجناتھ سنگھ  کپواڑہ اور بارہ مولہ میں ان منصوبوں کی رفتار کا معائنہ کریں گے۔

راجناتھ سنگھ کے اس دورہ کے دوران سب کی نظریں ریاست میں جاری جنگ بندی پر ہوگی۔ وزارت داخلہ نے اس جنگ بندی کو عید کے بعد آگے بھی جاری رکھنے کے امکانات کو خارج نہیں کیا ہے۔ ذرائع نے بتایا کہ راجناتھ سنگھ سری نگر میں ریاستی حکومت، خفیہ بیورو، فوجی افسران، اور ریاستی پولیس کے سینئر افسران کے ساتھ حالات کا جائزہ لینے کے بعد اس پر فیصلہ کریں گے۔

دراصل مرکزی حکومت نے رمضان کے پاک اور مقدس مہینہ کو دیکھتے ہوئے یہاں یکطرفہ جنگ بندی کا اعلان کیا تھا۔ حالانکہ اس کے ایک ہی دن بعد کپواڑہ میں دہشت گردوں اور سیکورٹی اہلکاروں کے درمیان زبردست مڈبھیڑ ہوا، جس میں تین دہشت گرد مارے گئے تھے۔ اس کے علاوہ دہشت گردوں نے 31 مئی کو بھی یہاں فوج کی گشتی ٹیم کو نشانہ بناتے ہوئے ان پر گرینیڈ سے حملہ کیا۔ حال کے دنوں میں شمالی کشمیر میں سیکورٹی اہلکاروں میں گرینیڈ حملوں کی وارداتوں میں کافی اضافہ ہوا۔ پیر کو  یہاں شوپیاں میں ہوئے گرینیڈ حملے میں 4 پولیس اہلکاروں سمیت 16 لوگ زخمی ہوگئے۔ گزشتہ چار دنوں کے دوران وادی میں ہوا یہ 10 واں گرینیڈ حملہ تھا۔
First published: Jun 05, 2018 01:42 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading