ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

عمر خالد اور شرجیل امام پر UAPA کے تحت چلے گا کیس، وزارت داخلہ نے دی منظوری

وزارت داخلہ (Home Ministry) نے یہ منظوری ایک ہفتے قبل ہی دے دی ہے۔ اب دہلی پولیس جلد ہی ایکٹ کے تحت عدالت میں دونوں کے خلاف چارج شیٹ پیش کرے گی۔

  • Share this:
عمر خالد اور شرجیل امام پر UAPA کے تحت چلے گا کیس، وزارت داخلہ نے دی منظوری
عمر خالد اور شرجیل امام پر UAPA کے تحت چلے گا کیس، وزارت داخلہ نے دی منظوری

نئی دہلی: دہلی تشدد کے معاملے میں وزارت داخلہ اور دہلی پولیس نے بڑا فیصلہ لیا ہے۔ اب غیر قانونی سرگرمیاں (روک تھام) ایکٹ (UAPA) کے تحت عمر خالد (Umar Khalid) اور شرجیل امام (Sharjeel Imam) پر مقدمہ چلانے کے لئے اجازت دے دی ہے۔ واضح رہے کہ دہلی پولیس نے تشدد کے معاملے میں عمر خالد کو یو اے پی اے ایکٹ کے تحت گرفتار کیا تھا۔ قانون کے مطابق، یو اے پی اے کے تحت کسی بھی شخص پر مقدمہ چلانے سے پہلے وزارت داخلہ کی منظوری لینا ضروری ہوتا ہے۔ اب بتایا جا رہا ہے کہ وزارت داخلہ نے تقریباً ایک ہفتہ پہلے ہی یہ منظوری دی ہے۔ جانکاری کے مطابق اب دہلی پولیس جلد ہی عمر خالد اور شرجیل امام کے خلاف عدالت میں چارج شیٹ داخل کرنے جا رہی ہے۔


پہلے شرجیل امام پر عمر خالد کو کیا گیا تھا گرفتار


دہلی پولیس کی طرف سے عمر خالد کو 14 ستمبر کو دہلی تشدد سے متعلق معاملوں میں گرفتار کیا گیا تھا۔ کڑکڑ ڈوما عدالت نے عمر خالد کی حراست 20 نومبر تک کے لئے بڑھا دی ہے۔ دہلی پولیس کی طرف سے ان کی عدالتی حراست 30 دن مزید بڑھانے کی عرضی لگائی گئی تھی۔ عمر خالد کے وکیل نے دہلی پولیس کی عرضی کی مخالفت کرتے ہوئے کہا کہ پولیس کی جانچ میں سبھی طرح سے تعاون کیا ہے۔ ایسے میں یہ الزام لگا کر کہ عمر خالد جانچ میں تعاون نہیں کر رہا ہے۔ اس کی عدالتی حراست کو بڑھانے کے لئے دہلی پولیس کے ذریعہ لگائی گئی عرضی غلط ہے۔


جانکاری کے مطابق اب دہلی پولیس جلد ہی عمر خالد اور شرجیل امام کے خلاف عدالت میں چارج شیٹ داخل کرنے جا رہی ہے۔
جانکاری کے مطابق اب دہلی پولیس جلد ہی عمر خالد اور شرجیل امام کے خلاف عدالت میں چارج شیٹ داخل کرنے جا رہی ہے۔


دہلی پولیس نے کڑ کڑ ڈوما عدالت کو بتایا تھا کہ فی الحال اس معاملے میں جانچ جاری ہے اور ایسے میں جانچ کی اس اسٹیج پر عمر خالد کو ضمانت نہیں دی جانی چاہئے۔ اس کے بعد عدالت نے عمر خالد کی عدالتی حراست کو 20 نومبر تک بڑھا دیا تھا۔ ابھی عمر خالد عدالتی حراست میں ہی ہے۔

کیا ہے یو اے پی اے

غیر قانونی سرگرمیاں (روک تھام) ایکٹ (یو اے پی اے) کے تحت ملک اور ملک کے باہر غیر قانونی سرگرمیوں کو روکنے کے مقصد سے بے حد سخت التزام کئے گئے۔ 1967 کے اس قانون میں گزشتہ سال حکومت نے کچھ ترمیم کرکے اسے سخت بنا دیا ہے۔

 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 06, 2020 05:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading