ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

سنسنی خیز ! یکطرفہ محبت میں سرپھرے عاشق نے خاتون پروفیسر کو پٹرول ڈال کر زندہ جلایا ، موت

  • Share this:
سنسنی خیز ! یکطرفہ محبت میں سرپھرے عاشق نے خاتون پروفیسر کو پٹرول ڈال کر زندہ جلایا ، موت
یکطرفہ محبت میں سرپھرے عاشق نے خاتون پروفیسر کو پٹرول ڈال کر زندہ جلایا ، موت

مہاراشٹر کے وردھا ضلع میں پٹرول ڈال کر زندہ جلائے جانے والی خاتون پروفیسر نے آخر کار ایک ہفتہ کے بعد اسپتال میں دم توڑ دیا ۔ گزشتہ ہفتہ 24 سال کی متاثرہ کو یکطرفہ پیار کرنے والے سرپھرے عاشق نے بیچ سڑک پر زندہ جلا دیا تھا ۔ اس حملے میں متاثرہ 40 فیصد تک جل گئی تھی ۔ متاثرہ کی حالت بگڑنے کے بعد دو دن پہلے ہی وینٹی لیٹر پر شفٹ کیا گیا تھا ۔ کئی سرجری کے بعد بھی اس کی حالت میں کوئی بہتری نہیں آئی ۔ بیٹی کی موت سے مشتعل اہل خانہ نے ملزم کو ان کے حوالے کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔ والد نے کہا کہ ان کی بیٹی کے قاتل کو انہیں سونپ دیا جائے اور وہ اس کو خود ہی سزا دیں گے ۔


اطلاعات کے مطابق ملزم ویکیش نگرالے نے خاتون پروفیسر پر اس وقت حملہ کیا تھا ، جب وہ ریاستی ٹرانسپورٹ کی بس سے نیچے اتری تھی ۔ ملزم نے اس کے چہرے اور سر پر پٹرول ڈال کر اس کو آگے کے حوالے کردیا اور جائے واقعہ سے فرار ہوگیا ۔ ملزم بائیک لے کر آیا تھا اور اس نے اسی سے پٹرول نکالا تھا ۔ جائے واقعہ پر موجود لوگوں نے کسی طرح آگ کو بجھایا اور خاتون پروفیسر کو علاج کیلئے نزدیک کے اسپتال میں پہنچایا ۔


ہنگن گھاٹ کے پولیس افسر ستویر بنڈیوار نے کہا کہ ڈاکٹر نے پیر صبح چھ بج کر 55 منٹ پر خاتون پروفیسر کو مردہ قرار دیا ۔ انہوں نے بتایا کہ خاتون کی موت کے بعد کسی بھی ناخوشگوار واقعہ کو رولنے کیلئے اسپتال کے آس پاس سیکورٹی سخت کردی گئی ہے ۔ کئی مقامی لوگوں ، خواتین اور کالج طلبہ نے ملزم کو موت کی سزا دینے کا مطالبہ کرتے ہوئے وردھا میں جمعرات کو مارچ نکالا تھا ۔ ریاستی حکومت نے معاملہ میں مشہور وکیل اجول نکم کو خصوصی سرکاری وکیل مقرر کیا ہے ۔


ابتدائی جانچ میں انکشاف ہوا ہے کہ ملزم نے ایک طرفہ محبت کی وجہ سے اس سنسنی خیز واردات کو انجام دیا ۔ جانچ میں پتہ چلا ہے کہ ملزم اور متاثرہ پہلے ایک دوسرے کے دوست تھے ، لیکن بعد میں دونوں کی دوستی ختم ہوگئی تھی ۔ اسی بات سے ناراض ہوکر ملزم نے بدلہ لینے کیلئے خاتون پروفیسر کو زندہ جلانے کی سازش رچی تھی ۔ پولیس نے ملزم کو نزدیک کے گاوں سے گرفتار کرکے عدالت میں پیش کیا ۔
First published: Feb 10, 2020 08:41 PM IST