ہوم » نیوز » مغربی ہندوستان

کانگریس کے سابق رکن پارلیمنٹ نے سونیا گاندھی کو لکھا خط، راہل گاندھی سے متعلق کیا یہ بڑا مطالبہ

راہل گاندھی کو کانگریس کمیٹی کی قیادت کا موقع دیے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے آل آنڈیا کانگریس کمیٹی کے رکن اورسابق رکن پارلیمنٹ حسین دلوائی نے سونیا گاندھی کو سفارشی خط میں کہا ہے کہ راہل گاندھی کی شخصیت سب کے لیے ایک قابل قبول اور مقبول عام شخصیت ہے۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 25, 2020 12:09 AM IST
  • Share this:
کانگریس کے سابق رکن پارلیمنٹ نے سونیا گاندھی کو لکھا خط، راہل گاندھی سے متعلق کیا یہ بڑا مطالبہ
کانگریس کے سابق رکن پارلیمنٹ حسین دلوائی نے نے سونیا گاندھی کو خط لکھ کر راہل گاندھی کو یہ ذمہ داری دینی کی اپیل کی ہے۔

ممبئی: راہل گاندھی کو کانگریس کمیٹی کی قیادت کا موقع دیے جانے کا مطالبہ کرتے ہوئے آل آنڈیا کانگریس کمیٹی کے رکن اورسابق رکن پارلیمنٹ حسین دلوائی نے سونیا گاندھی کو سفارشی خط میں کہا ہے کہ راہل گاندھی کی شخصیت سب کے لیے ایک قابل قبول اور مقبول عام شخصیت ہے۔ انھوں نے مزید لکھا کہ راہل کی شخصیت گوناگو خوبیوں اور صفات کی حامل شخصیت ہیں، اور ان کو کانگریس کمیٹی کا صدر منتخب کئےجانے سے پارٹی مزید ترقی کرے گی۔

واضح رہے کہ کل دہلی میں کانگریس کمیٹی کا ایک اجلاس منعقد ہوا۔ اس موقع پر بھی کئی قائدین نے راہل گاندھی کو صدارت دیئے جانے کی خواہش اور مطالبہ کیا۔ آج سابق رکن پارلیمنٹ حسین دلوائی نے بھی سونیا گاندھی کو خط لکھ کر اسی مطالبہ کی حمایت کی اور کہا کہ انھیں موقع دیا جائے تا کہ پارٹی مزید ترقی کرسکے۔




سابق رکن پارلیمنٹ حسین دلوائی نے سونیا گاندھی کو خط لکھ کر راہل گاندھی کو پارٹی کی قیادت دینے کے مطالبہ کی حمایت کی اور کہا کہ انھیں موقع دیا جائے تا کہ پارٹی مزید ترقی کرسکے۔
سابق رکن پارلیمنٹ حسین دلوائی نے سونیا گاندھی کو خط لکھ کر راہل گاندھی کو پارٹی کی قیادت دینے کے مطالبہ کی حمایت کی اور کہا کہ انھیں موقع دیا جائے تا کہ پارٹی مزید ترقی کرسکے۔

اپنے خط میں انھوں نے راہل گاندھی کی خوبیوں کا تذکرہ کرتے یوئے کہا کہ راہل ایک ایسا چہرہ ہیں جو ہر خاص و عام میں مقبول ہے۔اور اس وقت ملک جن معاشی پریشانیوں ،میں مبتلاء ہے اور چین کے ساتھ جو سرحدی تنازعہ ہے ایسے حالات میں، پارٹی اور ملک کی بہتری کے لیے انھیں صدارت سونپی جانی چاہیے۔ انھوں نے لکھا کہ جو خوبیاں راہل میں ہیں وہ دوسری پارٹیوں کے کسی بھی لیڈر میں دکھائی نہیں دیتی۔ ارہل گاندھی آپ کی راہنمائی اور سرپرستی میں تمایاں خدمات انجام دینے کی صلاحیت رکھتے ہیں اس لیے انھیں موقع دیاجانا چاہیے۔

First published: Jun 24, 2020 11:58 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading