உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Hyderabad:اجتماعی زیادتی کے معاملے میں تیسرا ملزم گرفتار، پانچ میں سے تین ملزمین ہیں نابالغ

    حیدرآباد گینگ ریپ معاملے میں مجرموں کی گرفتاریوں کاسلسلہ جاری۔

    حیدرآباد گینگ ریپ معاملے میں مجرموں کی گرفتاریوں کاسلسلہ جاری۔

    Hyderabad: پولیس نے کہا کہ جن پانچ ملزموں کی پہچان کی گئی ہے ان میں سے تین نابالغ ہیں۔ ایک ملزم سعدالدین ملک کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ وزیرداخلہ کے پوتے کے شامل ہونے کا الزام بے بنیاد ہے۔

    • Share this:
      حیدرآباد: تلنگانہ کے دارالحکومت حیدرآباد میں پولیس نے اجتماعی عصمت دری کے تین ملزمان کو گرفتار کرلیا ہے۔ قبل ازیں ڈپٹی کمشنر آف پولیس (ویسٹ زون) جوئل ڈیوس نے ایک پریس کانفرنس میں کہا کہ ملزم سعد الدین ملک کو پولیس نے گرفتار کر لیا ہے۔ پولیس نے بتایا کہ شناخت کیے گئے پانچ افراد میں سے تین نابالغ ہیں۔ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے ڈی سی پی نے کہا کہ پولیس نے سی سی ٹی وی فوٹیج اور متاثرہ کے بیان کے مطابق پانچ مجرموں کی شناخت کر لی ہے۔ ان میں سے تین نابالغ ہیں۔ ڈپٹی کمشنر آف پولیس کا کہنا تھا کہ متاثرہ لڑکی ملزمان کے بارے میں کچھ نہیں بتا سکی۔ اس نے صرف ایک نام ظاہر کیا اور فوری طور پر اس کی گرفتاری کے لیے خصوصی ٹیمیں تشکیل دی گئیں۔ سی سی ٹی وی فوٹیج برآمد کر لی گئی ہے۔ ہم نے سی سی ٹی وی فوٹیج اور متاثرہ کے بیان کے مطابق پانچوں مجرموں کی شناخت کر لی ہے۔

      ایک نوعمر لڑکے کی کرلی گئی ہے پہچان: پولیس
      ان آگے کہنا تھا کہ پولیس نے ایک نوعمر لڑکے کی شناخت کر لی ہے اور اس کی لوکیشن ٹریس کر لی گئی ہے۔ تاہم قانون کے مطابق نابالغوں کو رات کے وقت گرفتار نہیں کیا جا سکتا۔ ڈیوس نے کہا، "مجھے امید ہے کہ ہم کل (ہفتہ) کو نابالغوں کو پکڑنے میں کامیاب ہو جائیں گے۔"

      اس سے پہلے کئی نیوز رپورٹوں میں کہا گیا تھا کہ تلنگانہ کے وزیرداخلہ محمد محمود علی کا پوتا اس واقعہ میں شامل ہیں، تاہم تلنگانہ پولیس نے اسے تمام دعووں کو بے بنیاد بتاتے ہوئے مسترد کردیا تھا۔

      یہ بھی پڑھیں:
      Kanpur Violence: پولیس نے جاری کیا 40 مشتبہ افراد کا پوسٹر، لوگوں سے کی یہ اپیل

      یہ بھی پڑھیں:
      Pakistan: پاکستان میں ISI کو مضبوط بنانے پر اٹھا سوال، خود حکومتی اتحاد میں مچی کھلبلی!

      پولیس نے کہا کہ جن پانچ ملزموں کی پہچان کی گئی ہے ان میں سے تین نابالغ ہیں۔ ایک ملزم سعدالدین ملک کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔ وزیرداخلہ کے پوتے کے شامل ہونے کا الزام بے بنیاد ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: