உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Maharashtra:اُدھو ٹھاکرے بولے- شیوسینا نے بی جے پی کے ساتھ اتحاد کر کے اپنے 25 سال برباد کردئیے

    مہاراشٹر کے وزیراعلیٰ اور شیوسینا صدر اُدھو ٹھاکرے۔ (فائل فوٹو)

    مہاراشٹر کے وزیراعلیٰ اور شیوسینا صدر اُدھو ٹھاکرے۔ (فائل فوٹو)

    وزیراعلیٰ نے کہا کہ شیوسینا نے بی جے پی کا ساتھ چھوڑا ہے نہ کہ ہندوتوا کا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی صرف اقتدار کے لئے ہندوتوا کا استعمال کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہلی میں بالا صاحب ٹھاکرے کا مجسمہ لگایا جائے اور مستقبل میں ہم دلی کے اقتدار میں بھی ہوںگے۔

    • Share this:
      ممبئی:مہاراشٹر کے وزیراعلیٰ اور شیوسینا صدر اُدھو ٹھاکرے (Uddhav Thackeray) نے اتوار کو کہا ہے کہ اب بھی میرا ماننا ہے کہ شیوسینا (Shivsena) نے بی جے پی کے ساتھ اتحاد کر کے اپنے 25 سالوں کو برباد کردیا۔ یہ بات انہوں نے اپنے والد اور پارٹی کے بانی بال ٹھاکرے کی 96ویں یوم پیدائش کے موقع پر کہی۔ شیوسینکوں سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ بی جےپی کا ہندوتوا صرف اقتدار کے لئے ہے۔

      وزیراعلیٰ نے کہا کہ شیوسینا نے بی جے پی کا ساتھ چھوڑا ہے نہ کہ ہندوتوا کا۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی صرف اقتدار کے لئے ہندوتوا کا استعمال کرتی ہے۔ انہوں نے کہا کہ دہلی میں بالا صاحب ٹھاکرے کا مجسمہ لگایا جائے اور مستقبل میں ہم دلی کے اقتدار میں بھی ہوںگے۔

      آپ کو بتادیں کہ 2019 کے مہاراشٹر انتخابات کے بعد شیوسینا بی جے پی سے الگ ہوگئی اور مہا وکاس اگھاڑی (MVA) حکومت بنانے کے لئے این سی پی اور کانگریس کے ساتھ اتحاد کیا۔

      وزیراعلیٰ اُدھو ٹھاکرے کے ساتھ ساتھ شیوسینا لیڈر سنجے راوت نے بھی بی جے پی پر تنقید کی۔ بالا صاحب کی یوم پیدائش کے موقع پر منعقدہ ورچول پروگرام میں انہوں نے کہا کہ اگر ادھو ٹھاکرے ریاستی حکومت کے وزیراعلیٰ نہیں ہوتے تو مرکزی حکومت ریاستی حکومت کو پنگو بنادیتی۔ انہوں نے شیوسینکوں سے کہا کہ ہمیں اپنے پارٹی سربراہ، ریاست کے وزیراعلیٰ اور شیوسینا کے ساتھ مضبوطی کے ساتھ کھڑے رہنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ لڑائی آسان نہیں ہے۔

      شیوسینا لیڈر نے کہا کہ وزیراعلیٰ اور پارٹی کے کام سے اپوزیشن بری طرح سے پریشان ہے۔ ریاستی حکومت ترقی کے کام کو آگے بڑھا رہی ہے اور اپوزیشن پوری طرح سے مایوس ہے۔ سنجے راوت نے کہاکہ اسی کوشش میں اپوزیشن لگاتار شیوسینا اور حکومت پر الزام لگارہے ہیں اور ہر دن راج بھون میں جا کر اپوزیشن حکومت کو برخاست کرنے کی مانگ کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ دو سال سے اپوزیشن کو کوئی اور دوسرا کام نہیں مل پایا ہے۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: