உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    دو گولی لگنے کے بعد بھی دہشت گردوں پر دہشت بن کر ٹوٹے IAF کے گروڈ کمانڈو، پلوامہ انکاونٹر کی اِنسائیڈ اسٹوری

    پلوامہ آپریشن میں گروڑ اسپیشل فورس کے اسکواڈرن لیڈر سندیپ جھانجھریا زخمی۔ (اے این آئی)

    پلوامہ آپریشن میں گروڑ اسپیشل فورس کے اسکواڈرن لیڈر سندیپ جھانجھریا زخمی۔ (اے این آئی)

    زخمی ہونے کے باوجود گروڑ فورس کا جوان دہشت گردوں کے ساتھ اس وقت تک لڑتا رہا جب تک فرار ہونے والے تینوں دہشت گردوں کو ہلاک نہیں کر دیا گیا۔ اس میں مزید کہا گیا ہے کہ جب فوجی تینوں کو ختم کرنے کے بعد گھر میں مزید دہشت گردوں کی تلاش کر رہے تھے تو وہاں چھپے ہوئے ایک دہشت گرد نے باہر آکر گروڑ فوجیوں کی پارٹی پر فائرنگ شروع کر دی۔

    • Share this:
      سرینگر:ہندوستانی فوج (Indian Army)کی قیادت میں گروڈ اسپیشل فورسز (Garud Special Forces)کے جوانوں نے ہفتے کے روز پلوامہ میں کیے گئے انکاونٹر (Pulwama Encounter)میں اہم کردار ادا کیا، جس میں چار دہشت گرد مارے گئے۔ پلوامہ انکاونٹر کے دوران اسپیشل فورس کے اہلکار کو دو مرتبہ گولی ماری گئی لیکن اس کے باوجود وہ دہشت گردوں پر گولیاں چلانا جاری رکھا۔ نیوز ایجنسی اے این آئی نے سیکورٹی اسٹیبلشمنٹ میں اپنے ذرائع کے حوالے سے یہ اطلاع دی۔

      گروڈ کمانڈوز چار سال قبل ایک بڑے آپریشن کے لیے سرخیوں میں آئے تھے جب انہوں نے 2017 میں دو بڑی کارروائیوں میں آٹھ دہشت گردوں کو ہلاک کر دیا تھا۔ ذرائع نے بتایا کہ پلوامہ آپریشن کے لیے فوج کی 55 راشٹریہ رائفلز، جموں و کشمیر پولیس سمیت سیکورٹی فورسز نے ہفتہ کی شام تقریباً سات بجے پلوامہ علاقے کے نائرہ گاؤں میں محاصرے اور تلاشی کی مہم چلائی تھی۔

      کچھ دیر بعد فوج، مقامی لوگوں سے ملنے والی معلومات کی بنیاد پر ایک گھر کے اندر دہشت گردوں کی موجودگی کا پتہ لگانے میں کامیاب رہی۔ سیکورٹی فورسز نے فوری طور پر گھر اور اس کے آس پاس رہنے والے شہریوں کو باہر نکالا اور اس بات کو یقینی بنایا کہ انہیں محفوظ دوری پر بھیج دیا جائے تاکہ کسی شہری کو نقصان نہ پہنچے۔

      گروڈ اسپیشل فورس کے جوان کو لگی دو گولیاں
      سیکیورٹی فورسز نے مکان کو گھیرے میں لے لیا، دہشت گردوں کو موقع سے فرار ہونے کے لیے فائرنگ کرنی پڑی۔ جب دہشت گرد بھاری فائرنگ کی آڑ میں گھیرا توڑنے کی کوشش کر رہے تھے تو وہ فوج اور گروڈ اسپیشل فورس کے اہلکاروں کی براہ راست فائرنگ کی زد میں آگئے جس کے نتیجے میں دونوں طرف سے شدید فائرنگ ہوئی۔ ذرائع نے بتایا کہ اس کارروائی میں گروڈ اسپیشل فورس کے اسکواڈرن لیڈر سندیپ جھانجھریا (Sandeep Jhanjaria)کو سینے اور بائیں ہاتھ پر دو گولیاں لگی۔



      تینوں دہشت گردوں کے مارے جانے تک جوان کرتا رہا فائرنگ
      ذرائع نے بتایا کہ زخمی ہونے کے باوجود گروڑ فورس کا جوان دہشت گردوں کے ساتھ اس وقت تک لڑتا رہا جب تک فرار ہونے والے تینوں دہشت گردوں کو ہلاک نہیں کر دیا گیا۔ اس میں مزید کہا گیا ہے کہ جب فوجی تینوں کو ختم کرنے کے بعد گھر میں مزید دہشت گردوں کی تلاش کر رہے تھے تو وہاں چھپے ہوئے ایک دہشت گرد نے باہر آکر گروڑ فوجیوں کی پارٹی پر فائرنگ شروع کر دی، جس میں کارپورل آنند کو گولی لگی، جس کے بعد فورسز نے چھپے ہوئے دہشت گرد کو بھی مار گرایا۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: