اپنا ضلع منتخب کریں۔

    IAF Mi-17V5 Helicopter Crash: کیا ہےHTAWS اور اس کی ضرورت کیوں ہو رہی محسوس؟

    مغربی ملکوں نے CFITجہاز حادثوں کے پیش نظر اپنے یہاں اڑان بھرنے والے ہیلی کاپٹر کے لئے ہیلی کاپٹر ٹیرین ایورنیس اینڈ وارننگ سسٹم (HTAWS) کو لازمی کردیا ہے۔

    مغربی ملکوں نے CFITجہاز حادثوں کے پیش نظر اپنے یہاں اڑان بھرنے والے ہیلی کاپٹر کے لئے ہیلی کاپٹر ٹیرین ایورنیس اینڈ وارننگ سسٹم (HTAWS) کو لازمی کردیا ہے۔

    مغربی ملکوں نے CFITجہاز حادثوں کے پیش نظر اپنے یہاں اڑان بھرنے والے ہیلی کاپٹر کے لئے ہیلی کاپٹر ٹیرین ایورنیس اینڈ وارننگ سسٹم (HTAWS) کو لازمی کردیا ہے۔

    • Share this:
      نئی دہلی: کنٹرولڈ فلائٹ ان ٹو ٹیرین (CFIT)کی وجوہات کئی لوگ جان گئے ہیں اور کئی سارے ہوائی حادثے (Air Crash) ہوچکے ہیں۔ یہ اس لئے ہوتا ہے کیونکہ ہیلی کاپٹر انجانے میں IMC (انسٹرومنٹ میٹیریولوجیکل کنڈیشن) میں داخل ہوجاتا ہے، جیسا کہ ممکنہ انڈین ایئر فورس کے ہیلی کاپٹر Mi-17V5) ہیلی کاپٹر کے ساتھ ہوا تھا جو جنرل بپن راوت اور 13 دیگر کو لے جارہا تھا۔ آئیے جانتے ہیں کیا ہے CFIT اور IMC؟ اس طرح کے حادثوں سے بچنے کے لئے کیوں ضروری ہے HTAWS.

      کیا ہے CFIT
      CFIT ایک ایسا ہوائی جہاز حادثہ ہے، جس میں پوری طرح سے سروس کے قابل اور فٹ جہاز انجانے میں زمین، پانی یا پھر کسی چیز سے ٹکرا جاتا ہے۔ ایسے حادثے جس میں جہاز کنٹرول کھودیتا ہے اور اُسے UFIT کہا جاتا ہے، لیکن اس طرح کے حادثے کم ہوتے ہیں۔ CFIT حادثے آنے والی صورتحال کی جانکاری نہ ہونے کی وجہ ہوتے ہیں۔ اس طرح کے حادثے زیادہ تر موسم کی وجہ سے نہیں بلکہ جہاز کے زمین پر پہنچنے سے پہلے ہوتے ہیں۔ حالانکہ CFIT حادثے صرف انہی حالات تک محدود نہیں ہیں، کئی CFIT حادثے اونچائی پر بھی ہوئے ہیں۔ حادثوں پر کیے گئے سروے سے پتہ چلتا ہے کہ آدھے CFIT ہیلی کاپٹر حادثے صاف موسم کی حالت میں ہوئے ہیں۔ یہ اعدادوشمار بتاتے ہیں کہ زیادہ تر جہاز حادثے موسم کی وجہ سے نہیں بلکہ حالات کا پتہ نہیں (LOSA)ہونے کی وجہ سے ہوتے ہیں۔ پچھلے کئی حادثوں پر نظر ڈالیں تو زیادہ حادثات پہاڑی علاقوں میں رات/کہرے یا بادلوں کے ساتھ کم دکھائی دینے کی وجہ سے ہوئے ہیں۔ ہیلی کاپٹر کو اس طرح سے ڈیزائن کیا گیا ہے کہ وہ کسی تکنیکی سے نہیں بلکہ پائلٹ کی نظر سے چلتا ہے۔ زیادہ کیسیز میں CFIT زمین پر اُترنے کے دوران ہوئے ہیں۔ حالانکہ کبھی کبھی انجن فیل ہوجانے یا پھر نیویگیٹر نہ چلنے کی وجہ سے بھی حادثے ہوئے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ ایک ہیلی کاپٹر پائلٹ حادثے کے دوران باہر نکلنے کے راستے دیکھتا ہے۔

      کیا ہے IMC
      ویجوول فلائٹ رولس (VFR) وہ ہے جو نہ صرف پرواز کے لئے بلکہ نیوی گیٹ کرنے کے لئے بھی استعمال ہوتا ہے۔ حالانکہ کبھی کبھی ہیلی کاپٹر یا ہوائی جہاز پائلٹ کی جانکاری سے پہلے ہی اپنے آپ IMC سسٹم میں چلا جاتا ہے۔ حادثے ہونے کے امکانات تب بڑھ جاتے ہیں جب پائلٹ کو جہاز کے IMC میں چلے جانے کی جانکاری نہیں ہوتی اور وہ ہیلی کاپٹر یا جہاز کو VMC میں چلا رہا ہوتا ہے۔ اس کی وجہ سے جہاز وقت پرنہیں پہنچتے، ڈائورٹ کیے جاتے ہیں اسے گیٹ ہوم اِٹس کہا جاتاہے۔

      ہیلی کاپٹر ٹیرین ایورنیس اینڈ وارننگ سسٹم (HTAWS)
      مغربی ملکوں نے CFITجہاز حادثوں کے پیش نظر اپنے یہاں اڑان بھرنے والے ہیلی کاپٹر کے لئے ہیلی کاپٹر ٹیرین ایورنیس اینڈ وارننگ سسٹم (HTAWS) کو لازمی کردیا ہے۔ HTAWS تکنیکی رئیل ٹائم میں کسی بھی جہاز کی حالت اور ویگ کا حساب لگاتا ہے۔ یہ علاقے کی اونچائی اور خطرناک مقامات کا بالکل صحیح ڈیٹابیس سے جائزہ لیتا ہے اور اس کی صحیح جانکاری پائلٹ تک پہنچاتا رہتا ہے۔ HTAWS تکنیک پائلٹ کو ہر طرح کی جانکاری دیتی ہے۔ اس تکنیک سے پائلٹ کو پتہ چلتا ہے کہ اُسے کب دائیں جانا ہے اور کب بائیں اور جب کبھی کوئی چیز سامنے آجاتی ہے تو اُس کے بارے میں بھی پہلے ہی یہ تکنیک پائلٹ کو جانکاری دے دیتی ہے۔


      قومی، بین الاقوامی اور جموں وکشمیر کی تازہ ترین خبروں کےعلاوہ تعلیم و روزگار اور بزنس کی خبروں کے لیے نیوز18 اردو کو ٹویٹر اور فیس بک پر فالو کریں ۔
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: