ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

دوبارہ نہ کریں RT-PCR ٹیسٹ ، جانئے کورونا جانچ پر آئی سی ایم آر کی نئی ایڈوائزری

Corona Testing: آئی سی ایم آر کا کہنا ہے کہ ملک میں کورونا وائرس کی دوسری لہر کے دوران جانچ کرنے والی لیباریٹریز کافی دباو میں کام کررہی ہیں ۔

  • Share this:
دوبارہ نہ کریں RT-PCR ٹیسٹ ، جانئے کورونا جانچ پر آئی سی ایم آر کی نئی ایڈوائزری
دوبارہ نہ کریں RT-PCR ٹیسٹ ، جانئے کورونا جانچ پر آئی سی ایم آر کی نئی ایڈوائزری ۔ (File pic)

نئی دہلی : ملک میں کورونا وائرس انفیکشن کی دوسری لہر چل رہی ہے ۔ اس دوران روزانہ بڑی تعداد میں نئے کورونا معاملات سامنے آرہے ہیں ۔ ایسے میں ملک میں کورونا ویکسین کا ٹیکہ کاری پروگرام اور جانچ کو لے کر مہم مہم جاری ہے ۔ اس میں لیباریٹری کا دباو کم کرنے کیلئے آر ٹی ۔ پی سی آر جانچ کو کم سے کم کرنے اور ریپڈ انٹیجن جانچ کو بڑھانے کی بات کہی گئی ہے ۔


آئی سی ایم آر کا کہنا ہے کہ ملک میں کورونا وائرس کی دوسری لہر کے دوران جانچ کرنے والی لیباریٹریز کافی دباو میں کام کررہی ہیں ۔ ایسے میں بڑھتے کورونا کیسز کو دیکھتے ہوئے جانچ کے ہدف کو پورا کرنے  میں مشکلات پیش آرہی ہیں ، کیونکہ لیباریٹریز کا کچھ اسٹاف بھی متاثر ہے ۔


آئی سی ایم آر کے اہم مشورے


جن لوگوں کو ایک مرتبہ آرٹی پی سی آر یا ریپڈ انٹیجن ٹیسٹ کی جانچ میں متاثر پایا گیا تھا ، ان کا دوسری مرتبہ آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ نہیں کرنا چاہئے ۔

اسپتالوں میں کورونا انفیکشن سے شفایاب ہونے بعد ڈسچارج کے وقت مریضوں کا ٹیسٹ کرنے کی ضرورت نہیں ہے ۔



لیباریٹریز میں دباو کم کرنے کیلئے بین ریاستی سفر کرنے والے صحتمند لوگوں کے آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ کی لازمیت کو پوری طرح سے ہٹایا جائے۔

فلیو یا کورونا کی علامتوں والے لوگوں کو غیر ضروری سفر اور بین ریاستی سفر کرنے سے بچنا چاہئے ۔ اس سے انفیکشن کا پھیلاو کم ہوگا ۔

کورونا کے سبھی غیر علامتی لوگوں کو سفر کے دوران کورونا گائیڈ لائنس پر عمل کرنا ہوگا ۔

ریاستوں کی آر ٹی پی سی آر ٹیسٹ کو موبائل سسٹم کے ذریعہ فروغ دینے کیلئے حوصلہ افزائی کی جارہی ہے ۔



ریپڈ انٹیجن ٹیسٹ کو بتایا فائدہ مند

آئی سی ایم آر نے اپنی نئی ایڈوائزری میں کہا ہے کہ ریپڈ اینٹیجن ٹیسٹ کو کورونا ٹیسٹ کیلئے جون 2020 میں اپنایا گیا تھا ۔ موجودہ دور میں یہ کنٹینمنٹ زون اور کچھ ہیلتھ سینٹر پر ہی محدود ہے ۔ اس ٹیسٹ کا فائدہ یہ ہے کہ اس سے 15 سے 20 منٹ میں ہی کورونا کا پتہ چل جاتا ہے ۔ ایسے میں مریض کو جلد ٹھیک ہونے میں مدد ملتی ہے ۔

ریپڈ ٹیسٹ سے متعلق مشورے

ریپڈ اینٹیجن ٹیسٹ کو سبھی سرکاری اور پرائیویٹ ہیلتھ کیئر فیسیلیٹی میں لازمی کرنا چاہئے ۔

شہروں ، قصبوں ، گاوں میں لوگوں کی بڑی سطح پر جانچ کیلئے آر اے ٹی بوتھ لگائے جائیں ۔

شہروں ، گاوں میں یہ آر اے ٹی بوتھ کئی مقامات پر لگائے جائیں ۔ ان میں اسکول ، کالج ، کمیونٹی سینٹر اور خالی مقامات شامل ہوں ۔

یہ بوتھ 24 گھنٹے اور سات دن کام کریں ۔

مقامی انتظامیہ اپنی سطح پر ڈرائیو تھرو بوتھ بھی شروع کرسکتی ہیں ۔
Published by: Imtiyaz Saqibe
First published: May 04, 2021 11:56 PM IST