ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

مغربی بنگال: کورونا سےمقابلے کےلئے ائمہ کرام اورمٶذنین نےمددکےلئےبڑھائےہاتھ

بنگال کے امام ایسوسی ایشن نے بھی اپنی محدود آمدنی میں سےکچھ حصہ وزیر اعلی ریلف فنڈمیں دینےکا فیصلہ کیا ہے۔ کل 90 لاکھ روپٸےائمہ وموذنین کی جانب سے حکومت کو دیٸےجایٸں گے۔

  • Share this:
مغربی بنگال: کورونا سےمقابلے کےلئے ائمہ کرام اورمٶذنین نےمددکےلئےبڑھائےہاتھ
مغربی بنگال میں کورونا سے مقابلے کےلٸےائمہ کرام اور مٶذنین نے مدد کے لئے بڑھائے ہاتھ۔

نئی دہلی: کورونا واٸرس کےبڑھتےخطرات کو روکنےکےلٸے حکومت کی جانب سے جہاں پورے ملک میں لاک ڈاٶن کیا گیا۔ وہیں اس بیماری سے لڑنےکی حکومت کی مہم میں ہر عام و خاص پیش پیش ہیں۔ حکومت کی جانب سے لوگوں سے مدد کی اپیل کی جارہی ہے۔ ایسے میں کیا امیر اورکیا غریب ہرطبقہ حکومت کی امدادی مہم میں حکومت سے تعاون کرنےکو تیارہے۔


بنگال کے امام ایسوسی ایشن نے بھی اپنی محدود آمدنی میں سےکچھ حصہ وزیر اعلی ریلف فنڈ میں دینےکا فیصلہ کیا ہے۔ کل 90 لاکھ روپٸے ائمہ وموذنین کی جانب سے حکومت کو دیٸےجایٸں گے۔ بنگال وقف بورڈ سے ماہانہ دو ہزار وظیفہ پانے والے امام اپنے وظیفےکی رقم سے 200 اور مٶذن اپنے ایک ہزار وظیفےکی رقم سےایک سو روپٸے وزیر اعلی ریلیف فنڈ میں دینےکا فیصلہ کیا ہے۔ اس طرح امام و مٶذنین 90 لاکھ روپٸے وزیر اعلی ریلف فنڈ میں جمع کریں گے۔


 بنگال کے امام ایسوسی ایشن نےاپنی محدود آمدنی میں سےکچھ حصہ وزیر اعلی ریلف فنڈ میں دینےکا فیصلہ کیا ہے۔

بنگال کے امام ایسوسی ایشن نےاپنی محدود آمدنی میں سےکچھ حصہ وزیر اعلی ریلف فنڈ میں دینےکا فیصلہ کیا ہے۔


امام و مٶذن ایسو سی ایشن کی ویڈیو کانفرنس کے ذریعہ آج ہوٸی میٹنگ میں فیصلہ لیا گیا۔ بنگال میں برسر اقتدار آنےکےبعد وزیر اعلیٰ ممتا بنرجی نے ریاست کے اٸمہ و مٶذنین کو وظیفہ دینےکا اعلان کیا، جو وقف بورڈکےذریعہ ادا کیا جاتا ہے۔ اٸمہ و موٶذن بورڈ سے وظیفےکی رقم میں اضافےکا مطالبہ کرتے رہے ہیں۔ ریاست کے34 ہزار اماموں کو وظیفہ دیا جاتا ہے جبکہ مٶذنین کی تعداد بھی اتنی ہے۔ مجموعی طور پرکل 60 ہزاراٸمہ و مٶذن کو وظیفہ دیا جاتا ہے۔
First published: Apr 10, 2020 10:18 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading