ہوم » نیوز » مشرقی ہندوستان

Sputnik V in India:روسی ویکسین اسپوتنک۔وی کی قیمت کاکیاگیا تعین،948روپئے فی خوراک

روسی ویکسین کی قیمت 948 روپے فی خوراک رکھی گئی ہے۔ تاہم ، اس قیمت میں 5 فیصد جی ایس ٹی علحدہ طو رپر عائد کیا جائے گا۔ یہ جانکاری ڈاکٹر ریڈی لیبارٹریز نے دی ہیں۔ یہ امکان ظاہر کیاجارہاہے کہ مقامی طورپر سپلائی شروع ہونے کے بعد ویکسین اسپوتنک-وی کی قیمتوں میں کمی ہوسکتی ہے۔

  • Share this:
Sputnik V in India:روسی ویکسین اسپوتنک۔وی کی قیمت کاکیاگیا تعین،948روپئے فی خوراک
روسی ویکسین کی قیمت 948 روپے فی خوراک رکھی گئی ہے۔ تاہم ، اس قیمت میں 5 فیصد جی ایس ٹی علحدہ طو رپر عائد کیا جائے گا۔ یہ جانکاری ڈاکٹر ریڈی لیبارٹریز نے دی ہیں۔ یہ امکان ظاہر کیاجارہاہے کہ مقامی طورپر سپلائی شروع ہونے کے بعد ویکسین اسپوتنک-وی کی قیمتوں میں کمی ہوسکتی ہے۔

نئی دہلی: ہندوستان میں ، بالآخر روسی ویکسین اسپوتنک۔وی کی قیمت کو مقر ر کردیاگیاہے۔ روسی ویکسین کی قیمت 948 روپے فی خوراک رکھی گئی ہے۔ تاہم ، اس قیمت میں 5 فیصد جی ایس ٹی علحدہ طو رپر عائد کیا جائے گا۔ یہ جانکاری ڈاکٹر ریڈی لیبارٹریز نے دی ہیں۔ یہ امکان ظاہر کیاجارہاہے کہ مقامی طورپر سپلائی شروع ہونے کے بعد ویکسین اسپوتنک-وی کی قیمتوں میں کمی ہوسکتی ہے۔ جمعہ کو حیدرآباد میں اسپوتنک۔وی کی پہلی خوراک دی گئی ہے۔ ڈاکٹر ریڈی کی لیبارٹریز نے بتایا کہ اسپوتنک۔وی کا پہلا کھیپ 1 مئی کو ہندوستان پہنچی تھی۔ اسے 13 مئی کو ہماچل پردیش کے قصاؤلی میں واقع سنٹرل ڈرگس لیبارٹری نے منظور دیدی ہے۔ بتایاجارہاہے کہ اس ویکسین کی افادیت کی شرح 91.6 فیصد ہے۔



اگلے ہفتے تک مارکٹ آنے کا امکان

جمعرات کو ، مرکز ی حکومت کی جانب سے یہ کہا گیا تھا کہ اگلے ہفتے سے یہ اسپوتنک۔وی ویکسین بازار میں دستیاب رہے گی ۔ ڈاکٹر ریڈیز نے کہا کہ ویکسین کو زیادہ سے زیادہ مقدار میں بازار میں دستیاب کرنے کے لئے ، وہ نجی شعبے اور حکومت کے اسٹیک ہولڈرز کے ساتھ مل کر کام کریں گے۔ جمعرات کو کوڈ ٹاسک فورس کے چیف ڈاکٹر ونود کمار پال نے کہا تھا کہ دسمبر تک تمام شہریوں کو ویکسین دی جائیگی ۔انہوں نے کہا کہ سال کے آخر تک ، ملک میں و یکسی نیشن کے عمل کو تیزی کے جاری رکھا جائے گا ۔ انہوں نے اگست اور دسمبر کے درمیان 216 کروڑ خوراکوں کی تیاری کا منصوبہ بنایاگاہے۔ حکومت نے اپنے روڈ میپ میں سپوتنک - وی کا نام شامل کرلیاہے۔


دو انسانی اڈینو وائرس ، ایڈ 5 اور ایڈ 6 ، سپوتنک-وی میں وائرل ویکٹر ویکسین میں استعمال ہوئے ہیں۔ اڈینو وائرس خلیوں سے ٹکراتے ہیں اور ان کی سطح پر پروٹین لیتے ہیں۔ ایک بار جسم میں انجکشن لگانے کے بعد ، یہ ویکسین وائرس ہمارے خلیوں کو متاثر کرنا شروع کردیتے ہیں۔ اس کے بعد ، انسانی خلیوں کا اینٹیجن تیار کرنا شروع کر دیتا ہے گویا یہ اس کا اپنا پروٹین ہے۔
Published by: Mohammad Rahman Pasha
First published: May 14, 2021 03:30 PM IST