ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

بنگلورو کے شیواجی نگر میں سرکاری سپر اسپیشلٹی اسپتال کا افتتاح، ابتداء میں کورونا کے مریضوں کا ہوگا علاج

معروف درگاہ حضرت کمبل پوش رحمۃ اللہ علیہ کے قریب کثیر منزلہ سرکاری سپر اسپیشلٹی اسپتال قائم ہوا ہے۔ ریاست کے وزیر اعلیٰ بی ایس یدی یورپا کے ہاتھوں آج اس اسپتال کا افتتاح عمل میں آیا۔

  • Share this:
بنگلورو کے شیواجی نگر میں سرکاری سپر اسپیشلٹی اسپتال کا افتتاح، ابتداء میں کورونا کے مریضوں کا ہوگا علاج
بنگلورو کے شیواجی نگر میں سرکاری سپر اسپیشلٹی اسپتال کا افتتاح

بنگلورو: کرناٹک کے بنگلورو کے شیواجی نگر کے عوام کیلئے یہ ایک یادگار دن تھا۔ یہاں کی معروف درگاہ حضرت کمبل پوش رحمۃ اللہ علیہ کے قریب کثیر منزلہ سرکاری سپر اسپیشلٹی اسپتال قائم ہوا ہے۔ ریاست کے وزیر اعلیٰ بی ایس یدی یورپا کے ہاتھوں آج اس اسپتال کا افتتاح عمل میں آیا۔ مقامی ایم ایل اے رضوان ارشد کی صدارت میں ہوئی اسپتال کی افتتاحی تقریب میں نائب وزیر اعلی ڈاکٹر اشوتھ نارائن، وزیر برائے طبی تعلیم ڈاکٹر سدھاکر، وزیر برائے رہائش وی سومنا، بنگلورو کے میئر گوتم کمار جین اور دیگر نے شرکت کی۔


وزیر اعلی بی ایس یدی یورپا نے اس موقع پر انفوسیس فاونڈیشن کی صدر سدھا مورتی کا خصوصی طور پر شکریہ ادا کیا۔ انفوسیس فاونڈیشن نے اس اسپتال میں جدید ترین ٹیکنالوجی، مشینری اور انفراسٹرکچر کیلئے 11 کروڑ روپئے کی مالی مدد فراہم کی ہے۔ وزیر اعلی نے کہا کہ یہ سپر اسپیشلٹی اسپتال 24 کروڑ 38 لاکھ روپئے کی لاگت سے بروہت بنگلورو مہانگر پالیکے (بی بی ایم پی) کے تحت تعمیر کیا گیا ہے۔ اس اسپتال کی ترقی کیلئے انفوسیس فاؤنڈیشن کی صدر ڈاکٹر سدھا مورتی نے 11 کروڑ روپئے کا عطیہ دیتے ہوئے حکومت کا ساتھ دیا ہے۔


معروف درگاہ حضرت کمبل پوش رحمۃ اللہ علیہ کے قریب کثیر منزلہ سرکاری سپر اسپیشلٹی اسپتال قائم ہوا ہے۔
معروف درگاہ حضرت کمبل پوش رحمۃ اللہ علیہ کے قریب کثیر منزلہ سرکاری سپر اسپیشلٹی اسپتال قائم ہوا ہے۔


وزیر اعلی بی ایس یدی یورپا نے کہا کہ اس اسپتال سے یہاں کے لوگوں کو معیاری طبی سہولت حاصل ہوگی۔ وزیر طبی تعلیم ڈاکٹر سدھاکر نے کہا کہ نجی ادارے اگر حکومت کا ساتھ دیں تو عوام کیلئے بہترین سہولیات مقررہ وقت میں فراہم کی جاسکتی ہیں، یہ نیا سرکاری اسپتال حکومت اور نجی اداروں کی مشترکہ کوشش کی بہترین مثال ہے۔ رہائشی وزیر وی سومنا نے اس خصوصی اسپتال کے قیام میں سابق ریاستی وزیر آر روشن بیگ اور موجودہ ایم ایل اے رضوان ارشد کی کوششوں کی ستائش کی۔ شیواجی نگر کے ایم ایل اے رضوان ارشد نے کہا کہ اس اسپتال کی عمارت قائم ہوئے 4 سال ہوچکے ہیں۔ دل اور دماغی امراض کے علاج کیلئے اس خصوصی عمارت کی تعمیر عمل میں لائی گئی ہے۔ عمارت کی تعمیر کے بعد اس اسپتال کو  کون چلائے گا اس سلسلے میں کوئی فیصلہ نہیں ہوا تھا۔

 وزیر اعلی بی ایس یدی یورپا نے کہا کہ اس اسپتال سے یہاں کے لوگوں کو معیاری طبی سہولت حاصل ہوگی۔

وزیر اعلی بی ایس یدی یورپا نے کہا کہ اس اسپتال سے یہاں کے لوگوں کو معیاری طبی سہولت حاصل ہوگی۔


رضوان ارشد نے کہا کہ انہوں نے شیواجی نگر میں ہی موجود سرکاری باورنگ اسپتال کی انتظامیہ کے ساتھ میٹنگ کرتے ہوئے اس اسپتال کو چلانے کی درخواست کی تھی۔ لہٰذا باورنگ اسپتال کی انتظامیہ نے اس نئے اسپتال کو چلانے کی ذمہ داری قبول کرلی۔ حکومت سے بھی تعاون حاصل ہوا، انفوسیس فاونڈیشن نے بھی انفراسٹرکچر کیلئے مالی تعاون فراہم کیا اس طرح صرف چار مہینوں کے وقفہ میں یہ اسپتال عوام کیلئے دستیاب ہوا ہے۔ ایم ایل اے رضوان ارشد نے کہا کہ 150 بیڈ پر مشتمل یہ اسپتال دل اور دماغ کے امراض کے علاج کیلئے خصوصی طور خدمات انجام دے گا۔ فی الوقت کورونا کی بیماری سب سے بڑا مسئلہ ہے، لہٰذا یہ نیا اسپتال فوری طور پر کورونا کے مریضوں کیلئے استعمال کیا جائے گا۔ کورونا کی وبا کے قابو میں آنے کے بعد یہ اسپتال دل اور دماغی امراض، نسوں کے علاج کیلئے دستیاب ہوگا۔ رضوان ارشد نے کہا کہ دل اور دماغ سے جڑے امراض کے علاج کیلئے شیواجی نگر کے لوگوں کو جے دیوا اور نمہانس اسپتالوں کو جانا پڑتا تھا۔ اب اسی اسپتال میں یہ سہولت عوام کیلئے حاصل ہوگی۔ باورنگ اسپتال کے ڈائریکٹر ڈاکٹر منوج نے کہا کہ اسپتال میں موجود تمام 150 بیڈ کیلئے آکسیجن کی سہولت حاصل رہے گی۔ 30 بیڈ پر مشتمل انتہائی نگہداشت یونٹ (آئی سی یو) اسپتال میں قائم کیا گیا ہے۔ ڈاکٹر منوج نے کہا کہ عظیم پریم جی کی سرپرستی میں موجود ویپرو فاونڈیشن نے ابتدائی مرحلے میں ڈاکٹر اور طبی عملہ فراہم کیا ہے۔ اس کے ساتھ باورنگ اسپتال کا عملہ بھی یہاں خدمات انجام دے گا۔ اس نئے سرکاری اسپتال کو "چرک" سپر اسپیشیا لیٹی اسپتال کا نام دیا گیا ہے۔
Published by: Nisar Ahmad
First published: Aug 26, 2020 11:44 PM IST