بڑی لاپرواہی: پاکستان کے ایف۔16 نے غلط کوڈ کی وجہ سے اسپائس جیٹ طیارے کو گھیرا تھا

بتایا جاتا ہے کہ اتنی بڑی لاپرواہی ہو جانے کے بعد بھی پاکستان کے ایف۔16 طیارہ نے ہندوستانی طیارے کو بغیر کوئی نقصان پہنچائے اپنی سرحد سے باہر کر دیا۔

Oct 19, 2019 01:05 PM IST | Updated on: Oct 19, 2019 01:06 PM IST
بڑی لاپرواہی: پاکستان کے ایف۔16 نے غلط کوڈ کی وجہ سے اسپائس جیٹ طیارے کو گھیرا تھا

غلط کوڈ کی وجہ سے پاکستان کے ایف۔16 نے ہندوستان کے اسپائس جیٹ طیارے کو گھیرا تھا

ہندوستان کے اسپائس جیٹ طیارے کو پاکستان کے ایف۔16 جنگی طیارے سے گھیرے جانے کے معاملہ میں ایک بڑا انکشاف ہوا ہے۔ اس پورے معاملہ میں ڈائریکٹوریٹ جنرل آف سول ایوی ایشن( ڈی جی سی اے) کے ایک آفیسر کی لاپرواہی سامنے آئی ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ آفیسر نے مسافر طیارہ کو کمرشیل ائیرلائن کی جگہ ملٹری کا ٹرانسپونڈر کوڈ دے دیا تھا۔

غور طلب ہے کہ اسپائس جیٹ کا بوئنگ 737 طیارہ پچھلے مہینے دہلی سے کابل کی طرف جا رہا تھا۔ تبھی آسمان میں اسے پاکستان کے ایف۔ 16 جنگی طیارے نے گھیر لیا تھا۔ غنیمت یہ رہی کہ پاکستان کے جنگی طیارے نے کوئی ایکشن نہیں لیا۔

Loading...

یہاں پر جاننے والی بات یہ ہے کہ ملٹری ٹرانسپونڈر کوڈ اور کمرشیل کوڈ میں فرق ہوتا ہے۔ اگر کمرشیل کوڈ والے راستے میں کوئی ملٹری کوڈ والا طیارہ پرواز بھرتا ہے تو اس کی جانکاری رڈار سے اس ملک کی سیکورٹی ایجنسیوں کو مل جاتی ہے۔ میڈیا رپورٹوں کے مطابق، ڈی جی سی اے نے لاپرواہی برتنے پر آفیسر کو معطل کر دیا ہے۔

میڈیا رپورٹوں کے مطابق، اسپائس جیٹ ائیرکرافٹ کو غلطی سے این 32 کوڈ دیا گیا تھا جس کا استعمال ہندوستانی فوج کی طرف سے کیا جاتا ہے۔ یہ غلطی ایسے وقت پر سامنے آئی ہے جب جیٹ ائیرویز کا آپریشن پوری طرح سے بند ہونے کے بعد اسپائس جیٹ اپنے طیاروں کو تیزی سے بڑھا رہا ہے۔ بتایا جاتا ہے کہ اتنی بڑی لاپرواہی ہو جانے کے بعد بھی پاکستان کے ایف۔16 طیارہ نے ہندوستانی طیارے کو بغیر کوئی نقصان پہنچائے اپنی سرحد سے باہر کر دیا۔ پاکستان کے حکام کی اس سمجھداری پر ہندوستان کے حکام نے ان کا شکریہ ادا کیا ہے۔

 

Loading...