உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جانسن اینڈ جانسن کی ویکسین کے لیے ہندوستان کی جانب سے ہوسکتی ہے دوبارہ بات چیت شروع: ذرائع

    ابھی تک عہدیدار نے کہا کہ حکومت ویکسین کی کل ماہانہ پیداوار میں سے 50 فیصد حصہ مانگنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔ اگر ویکسین ہندوستان میں تیار کی جا رہی ہے تو ہمیں اس کی پیداوار سے اپنے لوگوں کے لیے 50 فیصد حصہ لینے کی اجازت ہونی چاہیے۔

    ابھی تک عہدیدار نے کہا کہ حکومت ویکسین کی کل ماہانہ پیداوار میں سے 50 فیصد حصہ مانگنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔ اگر ویکسین ہندوستان میں تیار کی جا رہی ہے تو ہمیں اس کی پیداوار سے اپنے لوگوں کے لیے 50 فیصد حصہ لینے کی اجازت ہونی چاہیے۔

    ابھی تک عہدیدار نے کہا کہ حکومت ویکسین کی کل ماہانہ پیداوار میں سے 50 فیصد حصہ مانگنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔ اگر ویکسین ہندوستان میں تیار کی جا رہی ہے تو ہمیں اس کی پیداوار سے اپنے لوگوں کے لیے 50 فیصد حصہ لینے کی اجازت ہونی چاہیے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Share this:

      نیوز 18 ڈاٹ کام کو معلوم ہوا ہے کہ حکومت ہند امریکی دوا ساز کمپنی جانسن اینڈ جانسن Johnson & Johnson کے ساتھ مذاکرات کا ایک نیا دور شروع کرے گی تاکہ گھریلو استعمال اور ہندوستان میں بائیولوجیکل ای Biological E کی تیار کردہ ویکسین کی برآمد پر درمیانی بنیاد تلاش کی جاسکے۔


      یہ اقدام وزیر اعظم مودی کے کواڈ سمٹ کے دوران اسی ویکسین کی 80 لاکھ خوراکیں اکتوبر تک امریکہ کو برآمد کرنے کا وعدہ کرنے کے بعد سامنے آیا ہے۔ ایک سینئر حکومتی عہدیدار کے مطابق اس ترقی سے متعلق مرکز اور کمپنی کو ایک درمیانی میدان تلاش کرنا ہوگا۔

      ذرائع کے مطابق وعدہ کردہ خوراکیں بغیر کسی شک کے برآمد کی جائیں گی۔ تاہم ایک حکمت عملی بنانے کی ضرورت ہے جہاں ہندوستان گھریلو استعمال کے لیے جانسن اینڈ جانسن کی ویکسین کی ماہانہ پیداوار کا حصہ لے۔ اس کے لیے ہمیں ان کے معاوضے کے مطالبے کو حل کرنے کی ضرورت ہے۔ یہ تمام مذاکرات ایک درمیانی بنیاد تلاش کرنے کے لیے شروع کیے جائیں گے۔

      ابھی تک عہدیدار نے کہا کہ حکومت ویکسین کی کل ماہانہ پیداوار میں سے 50 فیصد حصہ مانگنے کی منصوبہ بندی کر رہی ہے۔ اگر ویکسین ہندوستان میں تیار کی جا رہی ہے تو ہمیں اس کی پیداوار سے اپنے لوگوں کے لیے 50 فیصد حصہ لینے کی اجازت ہونی چاہیے۔ ایک بار جب ہم اپنی پوری آبادی کو ویکسین دیں گے۔ نیوز 18 ڈاٹ کام جانسن اینڈ جانسن کے تبصرے کے لیے پہنچا۔ تاہم میل پر فوری طور پر کوئی جواب نہیں دیا گیا

      ہندوستان اکتوبر کے آخر تک جانسن اینڈ جانسن ویکسین کی 80 لاکھ خوراکیں دستیاب کرائے گا ، پی ایم مودی نے گزشتہ ہفتے کے آخر میں کواڈ سمٹ کے دوران اعلان کیا تھا۔ امریکی دوا ساز کمپنی کووڈ 19 کی ویکسین بھارت کی حیدرآباد میں قائم ویکسین بنانے والی کمپنی بائیولیجیکل ای تیار کر رہی ہے۔ جہاں ہندوستان کو گھریلو مارکیٹ میں زیادہ مانگ کی وجہ سے ویکسین کی برآمد روکنی پڑی وہیں پی ایم مودی نے کواڈ ویکسین شراکت داری کے تحت ویکسین کی برآمدات دوبارہ شروع کرنے کا بھی اعلان کیا۔

      انہوں نے کہا تھا کہ ہم کسی سخت جگہ پر نہیں ہیں جہاں ہمیں غیر ملکی ویکسینوں کی ضرورت ہے جن میں فائزر اور ماڈرنا شامل ہیں۔ ان کے ساتھ ہونے والی بات چیت کو بیک برنر پر ڈال دیا گیا ہے۔ تاہم جے اینڈ جے ہندوستان میں تیار کیا جا رہا ہے‘‘۔ جے اینڈ جے اور بائیولیجیکل ای نے پہلے ہی ویکسین کی 35 لاکھ خوراکیں کوالٹی ٹیسٹنگ کے لیے کسولی کی سنٹرل ڈرگ لیبارٹری کو بھیج دی ہیں۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: