ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

کورونا وائرس کاقہر:مہلوکین کی تعداد ہوئی 4،دہلی میں ہوٹلوں میں کھانا کھانے پر لگی پابندی

پنجاب میں کورونا وائرس (كووڈ -19) سے متاثر ایک بزرگ کی جمعرات کو موت ہو گئی۔ جس کے ساتھ ہی ملک میں اس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر چار ہوگئی اور متاثرہ مریضوں کی تعداد بڑھ کر 173 ہو گئی ہے ۔

  • UNI
  • Last Updated: Mar 19, 2020 07:17 PM IST
  • Share this:
کورونا وائرس کاقہر:مہلوکین کی تعداد ہوئی 4،دہلی میں ہوٹلوں میں کھانا کھانے پر لگی پابندی
کورونا وائرس (كووڈ -19)

نجاب میں کورونا وائرس (كووڈ -19) سے متاثر ایک بزرگ کی جمعرات کو موت ہو گئی۔ جس کے ساتھ ہی ملک میں اس سے مرنے والوں کی تعداد بڑھ کر چار ہوگئی اور متاثرہ مریضوں کی تعداد بڑھ کر 173 ہو گئی ہے ۔پنجاب میں نواشهر ضلع کے پٹھلاوا گاؤں میں کورونا وائرس سے متاثر مریض کی کل صبح موت ہو گئی۔ بزرگ سات مارچ کو اٹلی سے جرمن کے راستے ہندوستان آیا تھا۔ نواں شهر کے سول سرجن ڈاکٹر راجندر بھاٹیہ نے بتایا کہ بزرگ کی آج آئی رپورٹ میں کورونا وائرس کے انفیکشن کی تصدیق ہوئی ہے۔ ملک میں کورونا وائرس کے انفیکشن سے یہ چوتھی موت ہے۔ اس سے پہلے كرناٹ، دہلی اور مہاراشٹر میں ایک ایک شخص کی موت ہو گئی ہے۔وزارت صحت نے جمعرات کی شام بتایا کہ ملک میں کورونا وائرس کے 173 معاملوں کی تصدیق ہو چکی ہے جن میں سے 148 مریض ہندوستانی ہیں جبکہ 25 غیر ملکی شہری ہیں۔ کورونا وائرس سے متاثرہ 20 افراد علاج کے بعد صحت مند ہو چکے ہیں۔



مرکزی حکومت نے کورونا وبا سے نمٹنے کے لئے 22 مارچ سے ایک ہفتے تک بین الاقوامی طیاروں کے ہندوستان آنے پر روک لگا دی ہے۔ مرکزی حکومت کی جانب سے جمعرات کو جاری ایک حکم میں کہا گیا ہے کہ بیرون ملک سے ہو رہے انفیکشن کو روکنے کے لئے یہ قدم اٹھایا گیا ہے اور اب 22 مارچ سے ہندوستان میں بیرون ملک سے کوئی بھی پرواز نہیں آئے گی۔اس کے علاوہ یہ بھی کہا گیا ہے کہ ہوائی جہاز اور ریلوے میں فی الحال کسی طرح کے رعایتی ٹکٹ جاری نہیں کئے جائیں گے۔ یہ طلبا ، مریضوں اورمعذوروں پر لاگو نہیں ہو گا۔


حکم میں 65 سال سے زائد عمر (طبی وجوہات کے علاوہ، عوامی نمائندے، سرکاری ملازمین اور طبی ماہرین کے علاوہ) اور دس سال سے کم عمر کے بچوں کو گھر میں رہنے کا مشورہ دیا گیا ہے۔ نجی شعبوں میں کام کرنے والوں کو گھر سے ہی کام کا مشورہ دیا جارہا ہے۔ یہ حکم ضروری خدمات اور ہنگامی خدمات میں ملازم لوگوں پر لاگو نہیں ہو گا۔ بھیڑ بھاڑ کو کم کرنے کے لئے گروپ بی اور سی کے مرکزی ملازمین کو ایک ہفتے چھوڑ کر دفتر آنے کو کہا گیا ہے۔

دہلی حکومت نے بھی کورونا وائرس انفیکشن سے بچاؤ کے لئے ایک بڑا فیصلہ کرتے ہوئے دارالحکومت کے تمام ریستوراں میں بیٹھ کر کھانا کھانے پر روک لگا دی۔ وزیر اعلی اروند کیجریوال نے یہاں نامہ نگاروں سے کہا کہ دارالحکومت کے تمام ریستوران میں 31 مارچ تک لوگوں کے بیٹھ کر کھانا کھانے پر پابندی لگا دی گئی ہے ۔اگرچہ لوگ پیک کرواکر کھانا لے جا سکیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکم کی خلاف ورزی کرنے والے ریستوران آپریٹروں کے خلاف کارروائی کی جائے گی۔ لاپرواہی برتنے والوں کو گرفتار بھی کیا جائے گا۔
First published: Mar 19, 2020 07:17 PM IST