ہند۔ پاک بات چیت: ہندوستان نے پاکستانی دعویٰ کو کیا مسترد ۔ کہا نہیں لکھا گیاکوئی بھی خط

ہندوستان نے پاکستانی میڈیا کے اس دعوے کو مسترد کردیاہے جس میں کہا گیاتھا کہ ہندوستان نے اس کے ساتھ بات چیت کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔

Jun 20, 2019 03:08 PM IST | Updated on: Jun 20, 2019 03:08 PM IST
ہند۔ پاک بات چیت: ہندوستان نے پاکستانی دعویٰ کو کیا مسترد ۔ کہا نہیں لکھا گیاکوئی بھی خط

علامتی تصویر

ہندوستان نے پاکستانی میڈیا کے اس دعوے کو مسترد کردیاہے جس میں کہا گیاتھا کہ ہندوستان نے اس کے ساتھ بات چیت کی خواہش کا اظہار کیا ہے۔ پاکستان میں میڈیا رپورٹوں میں دفتر خارجہ کے ذرائع کے حوالہ سے یہ اطلاع دی گئی ہے۔ اس کے مطابق ہندوستانی وزیر اعظم نریندر مودی نے پاکستانی وزیر اعظم عمران خان اور ہندوستانی وزیرخارجہ ایس جے شنكر نے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کو اس سلسلہ میں خط لکھا ہے۔ اس سے پہلے پی ایم عمران خان نے پی ایم مودی کے دوبارہ اقتدار میں آنے پر انہیں بھیجے مبارکباد کے خط میں دونوں ممالک کے درمیان بات چیت کی خواہش ظاہر کی تھی۔ انہوں نے جموں وکشمیر تنازعہ اور دہشت گردی سمیت مختلف مسائل پر بات چیت کی پیشکش کی تھی۔

دوسری جانب ہندوستان نے جمعرات کو پاکستان کی ان میڈیا رپورٹوں کی تردید کی ہے جن میں کہا گیا ہے کہ ہندوستان پاکستان کے ساتھ بات چیت شروع کرنے کے لیے تیار ہے۔ وزارت خارجہ کے ترجمان رويش کمار نے پاکستانی میڈیا رپورٹوں کے بارے میں پوچھے جانے پر ان رپورٹوں کو مکمل طور پر بے بنیاد بتایا۔ انہوں نے کہا کہ سفارتی روایات کے مطابق وزیر اعظم نریندر مودی اور وزیر خارجہ ڈاکٹر ایس جے شنكر نے پاکستان کے وزیر اعظم عمران خان اور وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی جانب سے ملنے والے مبارکباد کے پیغامات کا جواب دیا تھا۔ اپنے پیغامات میں مسٹر مودی اور ایس جے شنكر نے کہا تھا کہ ہندوستان ، پاکستان سمیت اپنے تمام پڑوسیوں سے عام اور مکمل تعاون کا تعلقات چاہتا ہے۔

Loading...

رويش کمار نے بتایا کہ وزیر اعظم نے اپنے پیغام میں کہا تھا کہ اس کے لئے یہ بہت اہم ہے کہ اعتماد و بھروسہ کا ایک ماحول بنایا جائے جو دہشت گردی، تشدد اور بدنیتی سے آزاد ہو. وزیر خارجہ نے بھی دہشت گردی اور تشدد کے سائے سے آزاد ایک سازگار ماحول بنائے جانے کی ضرورت پر زور دیا تھا۔

واضح رہے کہ پاکستان کے ایک اخبار میں شائع ایک رپورٹ میں کہا گیا کہ ہندوستان جنوبی ایشیائی خطے میں امن اور خوشحالی کے لئے پاکستان اور دیگر علاقائی ممالک کے ساتھ بات کرنے كو تیار ہے۔ ہندوستانی قیادت کا کہنا ہے کہ بات چیت شروع کرنے کے ساتھ ساتھ دہشت گردی کے خاتمے پر خصوصی توجہ مرکوز رہے گا۔ رويش کمارنے کہا کہ یہ رپورٹ مکمل طور پر غلط ہے۔ وزیر اعظم اور وزیر خارجہ نے مبارکباد پیغامات کا جواب سفارتی روایات کے مطابق دیا تھا۔

 

Loading...