ہوم » نیوز » عالمی منظر

چین نے LAC پر تعینات کر رکھے ہیں 10000 فوجی، اب ہندوستان نے دیا یہ زبردست جواب

ہندوستان نے واضح طور پر کہا ہے کہ ایل اے سی پر جاری کشیدگی تبھی کم ہوسکتا ہے جب چین ایل اے سی پر تعینات اپنے 10000 فوجی، ٹینک اور توپ کو وہاں سے ہٹائے۔ یہ فوجی اور ہتھیار چین نے ہندوستانی علاقوں کے پاس تعینات کئے ہوئے ہیں۔

  • Share this:
چین نے LAC پر تعینات کر رکھے ہیں 10000 فوجی، اب ہندوستان نے دیا یہ زبردست جواب
چین کی دھمکی

نئی دہلی: ہندوستان اور چین (India - china) کے درمیان لداخ (Ladakh) میں اصلی کنٹرول لائن (LAC) پر سرحدی تنازعہ کو لے کر تعطل برقرار ہے۔ 6 جون کو ہندوستان اور چین کے درمیان فوجی سطح پر بات چیت ہوئی تھی۔ اب ہندوستان نے چین پر دو ٹوک نشانہ سادھا ہے۔ ہندوستان نے واضح طور پر کہا ہے کہ ایل اے سی پر جاری کشیدگی تبھی کم ہوسکتا ہے جب چین ایل اے سی پر تعینات اپنے 10000 فوجی، ٹینک اور توپ کو وہاں سے ہٹائے۔ یہ فوجی اور ہتھیار چین نے ہندوستانی علاقوں کے پاس تعینات کئے ہوئے ہیں۔


نیوز ایجنسی اے این آئی کو حکومتی ذرائع نے بتایا، ’مشرقی لداخ علاقے میں چین اور ہندوستان کی فوجیں پیچھے ہٹنا شروع ہوگئی ہیں، لیکن ہم چاہتے ہیں کہ چین کی طرف سے ایل اے سی پر اپنے علاقے میں تعینات کئے گئے ڈویژن سائز (10000 سے زیادہ) فوجیوں اور بھاری ہتھیاروں کو وہاں سے ہٹائے۔ ایل اے سی سے پیچھے ہٹنا تو شروع ہوگیا ہے، لیکن جب تک چین ایل اے سی پر فوجیوں، ٹینک اور بھاری ہتھیاروں کو نہیں ہٹاتا، تب تک کشیدگی کم نہیں ہوسکتی‘۔


مشرقی لداخ علاقے میں چین اور ہندوستان کی فوجیں پیچھے ہٹنا شروع ہوگئی ہیں۔
مشرقی لداخ علاقے میں چین اور ہندوستان کی فوجیں پیچھے ہٹنا شروع ہوگئی ہیں۔


ذرائع کے مطابق چین کی سرگرمیوں پر نظر رکھنے اور اسے ضرورت پڑنے پر منہ توڑ جواب دینے کے لئے ہندوستان کی طرف سےبھی لداخ علاقے میں 10 ہزار فوجی تعینات کئے۔ چین نے ایل اے سی پر اپنے علاقےمیں ہوٹن اور گر گنسا ایئر بیس پر جنگجو طیارہ کی بھی تعیناتی کی ہے۔

ہندوستان اور چین کے درمیان 6 جون کو فوجی سطح پر بات چیت ہوئی تھی۔ اس کے بعد دونوں ممالک کی طرف سے کہا گیا تھا کہ ہندوستان اور چین سفارتی اور فوجی سطح پر بات چیت کرکے کشیدگی کم کرنے کی سمت میں آگے بڑھیں گے۔ ذرائع کے مطابق اب بدھ یا جمعرات کو بھی دونوں ممالک کے درمیان میجر جنرل سطح پر بھی بات چیت ہوسکتی ہے۔ ہندوستان اگلے 10 دنوں میں ممکنہ کئی سطح کی بات چیت میں چین کے ساتھ ان موضوعات کو اٹھا سکتا ہے۔
First published: Jun 10, 2020 05:25 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading