உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    CPEC Project: چین پاکستان اقتصادی کوریڈور میں دیگر ممالک کو شامل ہونے کیلئے بلانے پر ہندوستان سخت، دی یہ بڑی وارننگ

    جموں و کشمیر پر او آئی سی کے بیان کی ارندم باغچی نے کی شدید مذمت۔

    جموں و کشمیر پر او آئی سی کے بیان کی ارندم باغچی نے کی شدید مذمت۔

    China-Pakistan Economic Corridor Project : ہندوستان نے چین پاکستان اقتصادی کوریڈیور پروجیکٹ میں دونوں ممالک کی جانب سے دیگر ممالک کو اس میں شامل ہونے کی دعوت دینے پر شدید ناراضگی کا اظہار کیا ہے۔ ہندوستان نے اس معاملہ میں سخت وارننگ بھی دی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • New Delhi | New Delhi | Delhi
    • Share this:
      نئی دہلی : چین پاکستان اقتصادی کوریڈور پروجیکٹ کا معاملہ ایک بار پھر گرم ہوگیا ہے۔ ہندوستان نے چین پاکستان اقتصادی کوریڈیور پروجیکٹ میں دونوں ممالک کی جانب سے دیگر ممالک کو اس میں شامل ہونے کی دعوت دینے پر شدید ناراضگی کا اظہار کیا ہے۔ ہندوستان نے اس معاملہ میں سخت وارننگ بھی دی ہے۔

      ہندوستان کی وزارت خارجہ کے ترجمان ارندم باگچی نے اس معاملہ کو لے کر ایک ٹویٹ کیا ہے۔ انہوں نے لکھا کہ سی پی ای سی غیر قانونی طور پر قبضہ کی گئی ہندوستان کی زمین (پی او کے) میں بنائی جارہی ہے ، جس کو منظور نہیں کیا جا سکتا۔


      باگچی نے کہا کہ سی پی ای سی پروجیکٹ غیر قانونی ہے۔ ہم نے سی پی ای سی پروجیکٹ میں تیسرے فریق کو شامل ہونے کیلئے بلانے والی تجویز کی رپورٹس دیکھی ہیں ۔ ایسی کسی بھی کارروائی کو کسی بھی فریق کے ذریعہ ہندوستان کی خودمختاری اور علاقائی سالمیت کی براہ راست خلاف ورزی تصور کیا جائے گا۔ ہندوستان کا یہ بیان ایک ایسے وقت میں سامنے آیا ہے جب متنازعہ سی پی ای سی پروجیکٹ میں تیسرے ممالک کی شرکت کی تجویز پیش کی جا رہی ہے۔

      ایسی اطلاعات اور میڈیا رپورٹس آرہی تھیں کہ پاکستان اور چین نے اربوں ڈالر کے سی پی ای سی پروجیکٹ میں تیسرے ممالک کو شرکت کی دعوت دی ہے۔ یہ اقدام 22 جولائی کو سی پی ای سی کے بین الاقوامی تعاون اور کوآرڈینیشن کے مشترکہ ورکنگ گروپ کے تیسرے اجلاس میں اٹھایا گیا۔ سی پی ای سی پر پاکستان اور چین کی یہ مشترکہ میٹنگ گزشتہ ہفتے ورچوئل طریقے سے منعقد ہوئی تھی ۔ بتادیں کہ CPEC پروجیکٹ 2013 میں شروع ہوا تھا۔ یہ پروجیکٹ پاکستان کی سڑک، ریل اور توانائی کے انفراسٹرکچر کو بہتر بنانے کے نام پر شروع کیا گیا تھا۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: