ہوم » نیوز » وطن نامہ

ہندوستان اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے جا رہے میچ میں روہت اوروراٹ نے لگائی رنوں کی جھڑی

پرتھ،۔ روہت شرما (ناٹ آوٹ 171) کے زبردست سنچری اور وراٹ کوہلی (91) کے درمیان دوسرے وکٹ کے لئے 207 رن کی ڈبل سنچری کی شراکت کی بدولت ہندوستان نے واكا کی پچ پر منگل کو پہلے ون ڈے میچ میں میزبان آسٹریلیا کو اسی کی دھن پر نچاتے ہوئے رنوں کی جھڑی لگا دی اور تین وکٹ پر 309 رن کا مضبوط اسکور بنایا۔

  • IBN7
  • Last Updated: Jan 12, 2016 02:56 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
ہندوستان اور آسٹریلیا کے درمیان کھیلے جا رہے میچ میں روہت اوروراٹ نے لگائی رنوں کی جھڑی
پرتھ،۔ روہت شرما (ناٹ آوٹ 171) کے زبردست سنچری اور وراٹ کوہلی (91) کے درمیان دوسرے وکٹ کے لئے 207 رن کی ڈبل سنچری کی شراکت کی بدولت ہندوستان نے واكا کی پچ پر منگل کو پہلے ون ڈے میچ میں میزبان آسٹریلیا کو اسی کی دھن پر نچاتے ہوئے رنوں کی جھڑی لگا دی اور تین وکٹ پر 309 رن کا مضبوط اسکور بنایا۔

پرتھ،۔  روہت شرما (ناٹ آوٹ 171) کے زبردست سنچری اور وراٹ کوہلی (91) کے درمیان دوسرے وکٹ کے لئے 207 رن کی ڈبل سنچری کی شراکت کی بدولت ہندوستان نے واكا کی پچ پر منگل کو پہلے ون ڈے میچ میں میزبان آسٹریلیا کو اسی کی دھن پر نچاتے ہوئے رنوں کی جھڑی لگا دی اور تین وکٹ پر 309 رن کا مضبوط اسکور بنایا۔ ہندوستانی کپتان مہندر سنگھ دھونی نے ٹاس جیت کر پہلے بلے بازی کا فیصلہ کیا اور مقررہ 50 اوور میں آسٹریلیا کے سامنے جیت کے لیے 310 رن کا مضبوط ہدف رکھ دیا۔ اوپنر روہت نے فارم کے مسئلے کو دور کرتے ہوئے اپنی نویں ون ڈے سنچری بنائی اور وراٹ کے ساتھ دوسرے وکٹ کے لئے 207 رنوں کا اضافہ کیا۔


روہت نے 163 گیندوں میں 13 چوکے اور سات چھکے لگائے جبکہ وراٹ نے 97 گیندوں کی اننگز میں نو چوکے اور ایک چھکا لگایا۔ وراٹ اگرچہ سنچری بنانے سے صرف نو رن سے چوک گئے اور چھکا لگانے کی کوشش میں جیمزفاكنر کے ہاتھوں آرون فنچ کی گیند پر بالکل باؤنڈری پر کیچ ہوگئے لیکن ان کے بعد دھونی میدان پر آئے اور رنوں کی رفتار کو بڑھاتے ہوئے 13 گیندوں میں ایک چوکا اور ایک چھکا لگا کر 18 رن بنائے۔ دھونی نے روہت کے ساتھ تیسرے وکٹ کے لئے 3.5 اوور میں تابڑ توڑ 43 رن کی اہم ساجھےداری کی۔ اس میچ میں 28 سالہ روہت نے اپنے 150 رن پورے کرنے سے پہلے چھکا لگاتے ہوئے آسٹریلیا کے خلاف بھی اپنے 1000 رن پورے کئے۔ روہت نے 63 گیندوں میں اپنے 50 رن، 122 گیندوں میں 100 رن اور 155 گیندوں میں 12 چوکوں اور پانچ چھکوں کی مدد سےاپنے 150 رن پورے کئے۔ وہ پرتھ کے میدان پر سنچری بنانے والے پہلے ہندوستانی بلے باز بھی بن گئے ہیں۔


دھونی کے تیسرے بلے باز کے طور پر آؤٹ ہونے کے بعد آل راؤنڈر رویندر جڈیجہ میدان پر آئے اور پہلی ہی گیند پر چوکا لگا کر بہترین شروعات کی۔ جڈیجہ نے پانچ گیندوں میں ناٹ آؤٹ 10 رنوں میں ایک چوکا لگایا اور روہت کے ساتھ چوتھے وکٹ کے لئے 23 رن کی ناٹ آوٹ ساجھیداری کرکے ہندوستان کے اسکور کو 300 کے پار پہنچایا۔ آسٹریلیائی گیند بازوں کو رلانے والے روہت نے 300 کا ہندسہ پار ہوتے ہی اپنا ساتواں چھکا لگایا۔ ہندوستان نے میچ میں بھی شاندار آغاز کیا لیکن شکھر دھون توقعات پر کھرے نہیں اترسکے اور 22 گیندوں میں ایک چوکا لگا کر صرف نو رن ہی بنا سکے۔ دھون کو تیز گیند باز جوش ہیزل وڈ نے مشیل مارش کے ہاتھوں کیچ کراکر ہندوستان کو چھٹے اوور میں پہلا جھٹکا دیا لیکن اس کے بعد ہندوستانی بلے باز روہت اور وراٹ نے میدان پر ٹک کر ایسے رن بنانا شروع کئے کہ آسٹریلیائی فیلڈر میدان پر چاروں طرف بھاگتے ہی رہ گئے۔ ٹیم انڈیا نے 44 ویں اوور میں جا کر پھر اپنا دوسرا وکٹ وراٹ کی شکل میں گنوایا۔ 


اس اوور میں روہت کو بھی نئی زندگی ملی جو بڑا شاٹ کھیل بیٹھے تھے لیکن فيلڈروں نے باؤنڈری کے قریب ان کی گیند چھوڑ دی۔ تاہم اس کی اگلی ہی گیند پر پھر وراٹ چھکا لگانے کی کوشش کرتے ہوئے فاكنر کی گیند پر آؤٹ ہوگئے اور بالکل باؤنڈری کے پاس کیچ ہوئے۔ وراٹ نے ون ڈے میں اپنی 35 ویں نصف سنچری بنائی اور سنچری سے صرف نو رن سےپیچھے رہ گئے۔ وراٹ نے 61 گیندوں میں پانچ چوکوں اور ایک چھکے کی مدد سے اپنے 50 رن پورے کئے۔ اس کے بعد ہندوستان کا تیسرا وکٹ دھونی کی صورت میں 48 ویں اوور میں گرا۔ فاكنر کی گیند پر اپنا پہلا میچ کھیلنے والے اسكاٹ بولاڈ کے ہاتھوں دھونی لپکے گئے اور 18 کے اسکور پر پویلین لوٹے۔ دھونی نے مختصر اننگز میں کافی تیزی سے رن بنائے اور زبردست شاٹس کھیلے اور واكا اسٹیڈیم میں بڑی تعداد میں موجود ہندوستان حامیوں کو خوش کیا۔


تبدیلیوں سے گزر رہی آسٹریلیائی ٹیم میں تجربے کی کمی نظر آئی اور اس کے گیند باز ہندوستانی بلے بازوں کو روکنے میں بالکل ناکام رہے۔ آسٹریلیا کے ابھرتے ہوئے گیند باز بولاڈ 10 اوور میں 74 رن لٹاكر سب سے مہنگے بولر ثابت ہوئے۔ انہیں کوئی وکٹ نہیں ملا جبکہ دوسرے نئے کھلاڑی جویل پیرس نے آٹھ اوور میں 53 رن دے کر کوئی وکٹ نہیں لیا۔ مشیل مارش بھی 53 رن دے کر وکٹ نہیں نکال سکے۔ شراب پی کر گاڑی چلانے کے معاملے میں معطلی کا سامنا کے بعد ٹیم میں واپس آئے آسٹریلیا کے ماہر گیند باز فاكنر 60 رن پر دو وکٹ لے کر سب سے کامیاب گیند بازرہے جبکہ فاسٹ بولر ہیزل وڈ کو 41 رن پر ایک وکٹ حاصل ہوا۔ ہیزل وڈ نے شکھر (نو) کو آؤٹ کیا جبکہ فاكنر نے وراٹ (91) اور دھونی (18) کے اہم وکٹ لئے۔


First published: Jan 12, 2016 09:50 AM IST