உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    LAC پر اب چین کو ہر غلط حرکت کا ملے گا منہ توڑ جواب، SWITCH1.0 ڈرون خریدنے جارہی ہے فوج، جانیے کیا ہے خصوصیت؟

    چین کی حرکتون پر ڈرون سے رکھی جائے گی نظر۔

    چین کی حرکتون پر ڈرون سے رکھی جائے گی نظر۔

    فوج نے سابق میں جنوری 2021 میں ممبئی میں واقع کمپنی کے ساتھ سوئچ 1.0 ڈرون کی زیادہ تعداد میں سپلائی کے لئے دو کروڑ ڈالر کے ایک سمجھوتے پر دستخط کیے تھے۔

    • Share this:
      نئی دہلی:ہندوستانی فوج (Indian Army) نے حقیقی کنٹرول لائن (Line of Actual Control) پر اپنی نگرنای کو مضبوط کرنے کے لئے سوئچ 1.0 ڈرون (Switch 1.0 Drone)کے زیادہ اونچائی پر اڑان بھرنے والے آلات کی خرید کے لئے پھر سے آئیڈیا فورج کے ساتھ ایک معاہدہ پر دستخط کیے ہیں۔ فوجی عہدیداروں نے اس کی اطلاع دی۔ فوج نے سابق میں جنوری 2021 میں ممبئی میں واقع کمپنی کے ساتھ سوئچ 1.0 ڈرون کی زیادہ تعداد میں سپلائی کے لئے دو کروڑ ڈالر کے ایک سمجھوتے پر دستخط کیے تھے۔

      آئیڈیا فورج (ideaForge) نے پیر کو ایک بیان میں کہا ہے کہ اس نے مقررہ معیاد کے اندر ہندوستانی فوج کو سوئچ 1.0 ڈرون کی مقررہ تعداد کی سپلائی کرنے کا جنوری 2021 کو معاہدہ مکمل کردیا ہے۔ کمپنی نے کہا کہ ہندوستانی فوج نے اسے اسی ڈرون کے لئے ایک ’اضافی آرڈر‘ دیا ہے۔ اس نے کہا کہ نیا آرڈر پہلے جیسا ہی ہے۔

      شمالی اور مشرقی سرحدیں ہوں گی مضبوط
      SWITCH1.0 UAV ایک فکسڈ وِنگ ڈرون ہے جو ورٹیکل ٹیک آف اور لینڈنگ کرنے کی صلاحیت رکھتا ہے۔ اسے دن رات نگرانی کے لئے انتہائی اونچائی اور سخت ماحول میں تعینات کیا جاسکتا ہے۔ اپنے ایک بیان میں کمپنی نے ایک دفاعی عہدیدار کے حوالے سے کہا، ’ہمیں سوئچ 1.0 یو اے وی کی ڈیلیوری وقت پر مل گئی ہے اور ہم اس فورس ملٹی پلائر ٹیکنالوجی کے تیزی سے انڈکشن کے ساتھ اپنی شمالی اور مشرقی سرحدوں کو مضبوط کرنے کے لئے پرتجسس ہیں۔

      آئیڈیافورج کے CEO نے کیا کہا؟
      آئیڈیافورج کے سی ای او انکت مہتا (ideaForge CEO Ankit Mehta) کے حوالے سے بیان میں کہا گیا ہے کہ Switch 1.0 UAV کے لئے اضافی آرڈر اس کی کلاس لیڈنگ صلاحیتوں کا ثبوت ہے، جسے نہ صرف ایک درجن گلوبل پلیئرس کے خلاف پروڈکٹ ٹرائل کے دوران بلکہ آپریشنل انوائرنمنٹ میں بھی ایگزبٹ کیا گیا ہے۔ مہتا نے کہا، ‘ہم نے پچھلے آرڈر کی ڈیلیوری وقت پر پوری کرلی ہے اور مقررہ ڈیڈلائن کے اندر اضافی آرڈر دینے کے لئے کمر کس رہے ہیں۔‘
      Published by:Shaik Khaleel Farhaad
      First published: