محکمہ ریل نے ممبران پارلیمنٹ کی ریزرویشن سہولت میں تخفیف کی

نئی دہلی۔ محکمہ ریل نے ممبران پارلیمنٹ کے ذریعے ایک ساتھ کئی ٹرینوں میں ریزرویشن کرالینے اور ضرورت نہ ہونے پر ریزرویشن کینسل نہ کرانے سے محکمہ ریل اور عام مسافروں کو پیش آنے والی مشکلات کے پیش نظر ان کے ایک ساتھ کئی ٹرینوں میں ریزرویشن لینے کی سہولت ختم کردی ہے۔

Sep 27, 2015 09:11 AM IST | Updated on: Sep 27, 2015 09:11 AM IST
محکمہ ریل نے ممبران پارلیمنٹ کی ریزرویشن سہولت میں تخفیف کی

نئی دہلی۔ محکمہ ریل نے ممبران پارلیمنٹ کے ذریعے ایک ساتھ کئی ٹرینوں میں ریزرویشن کرالینے اور ضرورت نہ ہونے پر ریزرویشن کینسل نہ کرانے سے محکمہ ریل اور عام مسافروں کو پیش آنے والی مشکلات کے پیش نظر ان کے ایک ساتھ کئی ٹرینوں میں ریزرویشن لینے کی سہولت ختم کردی ہے۔

اعلی سطحی ذرائع نے  یہاں بتایا کہ ممبران پارلیمنٹ اکثر و بیشتر کئی ٹرینوں میں ریزرویشن لے کر اے سی فرسٹ کلاس اور اے سی سیکنڈ کلاس کے کوچوں میں سیٹیں بک کرلیتے ہیں۔ چونکہ انہیں اس کے لئے کوئی پیسہ نہیں دینا ہوتا ہے ، اس لئے ضرورت نہ ہونے پر دوسری گاڑی میں بک ٹکٹ کینسل بھی نہیں کراتے ہیں۔ ایسی صورت میں ان کے ریزرویشن کے بیجا استعمال ہونے کا بھی اندیشہ رہتا ہے اور دوسرے مسافروں کو ٹکٹ الاٹ نہ کرپانے کی وجہ سے محکمہ ریل کو ریونیو کا بھی نقصان ہوتا ہے۔

Loading...

ذرائع نے بتایا کہ ممبران پارلیمنٹ کو ایک فون پر ان کی مرضی سے ٹکٹ بک کرنے اور کنفرم ٹکٹ پانے کی سہولت حاصل ہوتی ہے۔ ایسی صورت میں انہیں کئی ٹرینوں میں احتیاطاً ٹکٹ بک کرنے کی ضرورت نہیں ہے۔ خیال رہے کہ محکمہ ریل نے حال ہی میں سابق ممبران پارلیمنٹ اور سابق ممبران اسمبلی کو انتہائی خصوصی مسافروں کے زمرے سے ہٹانے کا فیصلہ کیا تھا۔

Loading...