உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Indian Railway: ایک سال کے بچے کا بھی لگے گا ٹکٹ؟ جانئے وزارت ریل کا اس پر جواب

    Indian Railway: ایک سال کے بچے کا بھی لگے گا ٹکٹ؟ جانئے وزارت ریل کا اس پر جواب۔ فائل فوٹو ۔

    Indian Railway: ایک سال کے بچے کا بھی لگے گا ٹکٹ؟ جانئے وزارت ریل کا اس پر جواب۔ فائل فوٹو ۔

    Indian Railway: سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی خبروں کو لے کر اب وزارت ریلوے نے وضاحت جاری کی ہے۔ وزارت کے مطابق اس طرح کا کوئی نیا حکم نامہ جاری نہیں کیا گیا ہے ۔

    • Share this:
      نئی دہلی : ہندوستانی ریلوے میں سفر کے دوران ایک سال کے بچے کے لئے چائلڈ ٹکٹ لگے گا، ایسی خبریں سوشل میڈیا پر کافی وائرل ہو رہی ہیں۔ خبر آنے کے بعد ٹرینوں میں سفر کرنے والے مسافر بھی حیران رہ گئے۔ سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی خبروں کو لے کر اب وزارت ریلوے نے وضاحت جاری کی ہے۔ وزارت کے مطابق اس طرح کا کوئی نیا حکم نامہ جاری نہیں کیا گیا ہے ۔

       

      یہ بھی پڑھئے: J&K News: راجوری اور پونچھ میں ہائی الرٹ، دہشت گردانہ حملے کا اندیشہ


      وزارت ریلوے کے مطابق پانچ سال تک کے بچے کا کوئی کرایہ نہیں لگے گا۔ اس سلسلہ میں سال 2015 میں ایک سرکلر جاری کیا گیا تھا، جس میں کہا گیا تھا کہ پانچ سے 12 سال تک کے بچے کا ٹکٹ آدھا لگے گا۔ اگر آپ بچے کیلئے سیٹ بک کروانا چاہتے ہیں تو پھر پورا چارج ادا کرنا ہوگا۔ سرکلر آنے کے بعد جن والدین کو ضرورت ہوتی تھی، وہ سیٹ بک کروا لیتے تھے، ورنہ بچے کو اپنی سیٹ پر لے جانے کا کوئی کرایہ نہیں لگتا ہے۔



       

      یہ بھی پڑھئے: روہنگیا پناہ گزینوں کونہیں ملیں گے گھر،وزارت داخلہ نے خبروں کو بتایا غلط


      وزارت ریلوے کے مطابق اس کے بعد مسافروں نے مطالبہ کیا اور مشورہ دیا کہ اگر بچہ پانچ سال سے کم کا ہے اور اسے گود میں لے کر سفر نہیں کرنا چاہ رہے ہیں تو اس کے لئے بچے کی سیٹ بھی بک ہونی چاہئے ، تاکہ وہ آسانی سے سفر کر سکیں۔

      مسافروں کی اس تجویز کے بعد ریلوے نے 6 مارچ 2020 کو ایک اور سرکلر جاری کیا، جس میں پانچ سال سے کم عمر بچوں کیلئے بھی سیٹیں بک کرنے کا حکم دیا گیا تھا۔ بک کرائی گئی سیٹ کا کرایہ ایک عام مسافر کے برابر ہوگا۔ وزارت ریلوے کے مطابق اس کے بعد کوئی نیا حکم نامہ جاری نہیں کیا گیا ہے۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: