உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Omicron: اومی کرون کے خلاف ہندوستان کی پیش رفت! ’’ہر گھر دستک‘‘ کے ذریعہ کورونا کو شکست دینا کا عزم

    تصویر ٹوئٹر : @DrJitendraSingh

    تصویر ٹوئٹر : @DrJitendraSingh

    حکومتی اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ مرکزی حکومت کی گھر گھر ویکسینیشن مہم ’ہر گھر دستک‘ (Har Ghar Dastak) کووڈ۔19 ویکسینیشن کو فروغ دینے میں کامیابی کی طرف بڑھ رہی ہے۔

    • Share this:
      کرناٹک میں کورونا وائرس کے دو اومی کرون (Omicron) کیسوں کی تصدیق کے بعد لوگوں کو حفاظتی اقدامات پر زور دیا جارہا ہے۔ تاکہ وہ وقت سے پہلے ہی ان اقدامات کے ذریعہ تحفظ حاصل کرسکے۔ اسی لیے اب ماسکے کے استعمال اور سماجی دوری پر عمل ضروری ہوگیا ہے۔

      حکومتی اعداد و شمار سے پتہ چلتا ہے کہ مرکزی حکومت کی گھر گھر ویکسینیشن مہم ’ہر گھر دستک‘ (Har Ghar Dastak) کووڈ۔19 ویکسینیشن کو فروغ دینے میں کامیابی کی طرف بڑھ رہی ہے۔ لہذا اومی کرون کے بارے میں عالمی سطح پر خوف و ہراس کے درمیان ہندوستان میں ویکسینیشن کی رفتار کو بڑھایا جارہا ہے۔ یہ کوشش نئے ویرینٹ کے خلاف بھی موثر ثابت ہوسکتی ہے۔


      میڈیا کو پیش کردہ اعداد و شمار کے مطابق اس اقدام کے آغاز کے بعد سے پہلی خوراک کی کوریج میں 5.9 فیصد اضافہ ہوا ہے جبکہ دوسری خوراک کی کوریج میں 11.7 فیصد اضافہ ہوا ہے۔ مرکزی حکومت نے ویکسینیشن کوریج کو بڑھانے کے لیے نومبر میں ’ہر گھر دستک‘ شروع کیا تھا۔


      مہم کے تحت صحت کی دیکھ بھال کرنے والے کارکنان دوسری خوراک دینے کے لیے گھر گھر کا دورہ کیا جارہا ہے اور ان لوگوں کو پہلی خوراک دی جارہی ہے، جنہوں نے ابھی تک ویکسین نہیں لیا ہے۔ اس مہم کا مقصد بیداری پیدا کرنا، وسائل کا بہتر استعمال کرنا اور تمام اہل استفادہ کنندگان کو ویکسین فراہم کرنا ہے۔

      میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ یہ مہم بہت سی وجوہات کی وجہ سے سست رہی۔ لیکن اب یہ متحرک ہوگئی ہے۔ یہ مہم ہماچل پردیش، مدھیہ پردیش، انڈمان اور نکوبار جزائر، جموں اور کشمیر کے ساتھ ساتھ گجرات جیسی ریاستوں میں نمایاں طور پر بڑھ گئی ہے۔
      Published by:Mohammad Rahman Pasha
      First published: