உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    مدھیہ پردیش: اندور میں مساج پارلرکی آڑ میں ہو رہی تھی جسم فروشی، واٹس اپ پر چلتا تھا کھیل

    مدھیہ پردیش: اندور میں مساج پارلرکی آڑ میں ہو رہی تھی جسم فروشی

    مدھیہ پردیش: اندور میں مساج پارلرکی آڑ میں ہو رہی تھی جسم فروشی

    Indore News: مدھیہ پردیش کی تجارتی راجدھانی اندور میں جسم فروشی کے کاروبار بڑھتے جا رہے ہیں۔ ہر دوسرے دن پولیس کسی نہ کسی تھانہ علاقے میں اس طرح کے کاموں میں ملوث اور اس کو چلانے والے لڑکے لڑکیوں کو پکڑ رہی ہے۔ اسی ضمن میں ایک بار پھر اندور پولیس نے مساج پارلر کی آڑ لے کر کئے جارہے غیر اخلاقی کاموں کا پردہ فاش کیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Indore, India
    • Share this:
      اندور: اندور میں مسلسل مساج پارلر (Massage Parlor) کی آڑ میں جسم فروشی کا کاروبار چل رہا ہے۔ اندور کی بھنور کنواں پولیس (Indore Police) نے مخبر کی اطلاع کی بنیاد پر کارروائی کرکے تین خواتین اور ایک نوجوان کو گرفتار کیا ہے۔ کچھ لوگ پولیس کی دبش (Police raid on sex racket) کے دوران وہاں سے فرار ہوگئے، جنہیں اب پولیس تلاش کرنے میں مصروف ہے۔ پولیس نے پہلے بھی جسم فروشی میں شامل لوگوں کی گرفتاری کی تھی۔ اب اس معاملے میں پولیس باریکی سے جانچ پڑتال میں مصروف ہے۔

      اندور کے بھنورکنواں تھانہ انچارج ششی کانت چورسیا کو علاقے میں مساج پارلر کی آڑ میں جسم فروشی کا ریکٹ چلانے کی اطلاع مل رہی تھی۔ اس اطلاع کی بنیاد پر بھنور کنواں پولیس نے علاقے میں ہی موجود ایک مساج پارلر پر دبش دی۔ اس دوران پر تین لڑکیاں اور ایک لڑکا غیر اخلاقی سرگرمیوں میں ملوث ملے۔ اس کے بعد پولیس نے تینوں لڑکیوں اور ایک لڑکے کو حراست میں لے کر پورے معاملے کی جانچ پڑتال شروع کی۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      بہار کے ہوٹل میں قابل اعتراض حالت میں ملیں اسکول کی لڑکیاں، پولیس بھی دیکھ کر رہ گئی حیران 

      یہ بھی پڑھیں۔

      Indore Sex Racket: اندور میں سیکس ریکٹ کا پردہ فاش، 6 لڑکیوں سمیت 9 افراد گرفتار 

      مساج پارلر چلانے والا ہوگیا فرار

      اندور کے اے سی پی دشیش اگروال کے مطابق، پولیس نے مساج پارلر پر دبش دی۔ اس وقت ایک نوجوان اور لڑکی ایک کمرے میں قابل اعتراض حالت میں ملے۔ اس پورے معاملے میں پولیس نے تین لڑکیوں اور ایک لڑکے کو حراست میں لیا ہے۔ پورے معاملے کی کافی باریکی سے جانچ پڑتال کی جا رہی ہے تو وہیں دبش کے دوران مساج پارلر چلانے والا وجے کمار فرار ہوگیا، جس کی تلاش میں پولیس مصروف ہوگئی ہے۔

      واٹس اپ سے بھیجتے تھے لڑکیوں کی تصویر

      پولیس نے ملزمین کے خلاف غیر اخلاقی کاروبار ایکٹ کے تحت معاملہ درج کیا ہے۔ وہیں اہم ملزم وجے پرمار کی تلاش کی جارہی ہے۔ جانچ پڑتال میں اس بات کی بھی جانکاری سامنے آئی کہ لڑکیوں کی تصویر واٹس اپ کے ذریعہ سے متعلقہ گراہکوں کو بھیجی جاتی تھی۔ روپئے طے ہوجانے کے بعد متعلقہ لڑکا یہاں آتا تھا اور اس کے بعد اسے مختلف طرح کی سہولیات دستیاب کروائی جاتی۔ پولیس نے جب پکڑی گئی لڑکیوں کے فون کو کھنگالا تو اس میں کئی لڑکیوں کی تصاویر ملیں۔ پولیس پورے معاملے کی جانچ پڑتال کر رہی ہے۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: