ہوم » نیوز » شمالی ہندوستان

15 جولائی تک تمام انٹرنیشنل پروازیں منسوخ، وزارت نے لیا بڑا فیصلہ

ڈائرکٹوریٹ جنرل آف سول ایوی ایشن (ڈی جی سی اے) نے باقاعدہ بین الاقوامی پروازوں پر پابندی میں 15جولائی تک توسیع کردی ہے۔ ڈائرکٹوریٹ کے ذریعہ جاری سرکلر میں کہا گیا ہےکہ باقاعدہ بین الاقوامی مسافر پروازوں پر پابندی 15جولائی کی رات 11:59تک جاری رہے گی۔

  • UNI
  • Last Updated: Jun 27, 2020 12:08 AM IST
  • Share this:
15 جولائی تک تمام انٹرنیشنل پروازیں منسوخ، وزارت نے لیا بڑا فیصلہ
15 جولائی تک تمام انٹرنیشنل پروازیں منسوخ، وزارت شہری ہوا بازی نے لیا بڑا فیصلہ

نئی دہلی: ڈائرکٹوریٹ جنرل آف سول ایوی ایشن (ڈی جی سی اے) نے باقاعدہ بین الاقوامی پروازوں پر پابندی میں 15جولائی تک توسیع کردی ہے۔  ڈائرکٹوریٹ کے ذریعہ جاری سرکلر میں کہا گیا ہے کہ باقاعدہ بین الاقوامی مسافر پروازوں پر پابندی 15جولائی کی رات 11:59تک جاری رہے گی۔ اس میں بین الاقوامی پروازوں کے ملک میں اترنے اور یہاں سے پرواز کرنے دونوں پر پابندی رہے گی۔ یہ پابندی بین الاقوامی کارگو طیاروں اور خصوصی اجازت رکھنے والی مسافر پروازوں پر نافذ نہیں ہوگی۔


ملک میں بین الاقوامی مسافر پروازوں پر 22 مارچ سے پابندی عائد ہے۔ گھریلو مسافر پروازوں پر بھی 25مارچ سے پابندی لگائی گئی تھی لیکن 25مئی سے گھریلو پروازیں شروع ہوگئی ہیں۔ شہری ہوا بازی کے وزیر ہردیپ سنگھ پوری نے واضح کیا ہے کہ بین الاقوامی پرواز شروع کرنے کے لئے اس ملک کا اتفاق کرنا ضروری ہے۔ ساتھ ہی گھریلو سطح پروازوں کی تعداد کووڈ 19 کے مقابلے میں 50-55 فیصد تک پہنچنے کے بعد ہی اس پر غور کیا جائے گا تاکہ بیرون ملک سے آنے والے مسافروں کو کسی بڑے ہوائی اڈے پر اترنے کے بعد مزید سفر کرنے میں دشواری پیش نہ ہو۔


ڈائرکٹوریٹ کے ذریعہ جاری سرکلر میں کہا گیا ہے کہ باقاعدہ بین الاقوامی مسافر پروازوں پر پابندی 15جولائی کی رات 11:59تک جاری رہے گی۔
ڈائرکٹوریٹ کے ذریعہ جاری سرکلر میں کہا گیا ہے کہ باقاعدہ بین الاقوامی مسافر پروازوں پر پابندی 15جولائی کی رات 11:59تک جاری رہے گی۔


شہری ہوا بازی کے وزیر ہردیپ سنگھ پوری نے اشارہ کیا ہے کہ امریکہ ، فرانس ، جرمنی اور برطانیہ جیسے منتخب ممالک کے ساتھ محدود تعداد میں بین الاقوامی پروازیں شروع کی جاسکتی ہیں۔ یہ پروازیں وندے بھارت کی طرز پر ہوں گی اور باقاعدہ پروازیں شروع کرنے میں ابھی وقت لگ سکتا ہے۔
First published: Jun 26, 2020 11:54 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading