اجودھیا معاملہ میں مسلم فریق اقبال انصاری کا راہل گاندھی کو چیلنج- ہمت ہے توپاکستان مقبوضہ کشمیرپرکرو سیاست

اجودھیا معاملےکےمسلم فریق اقبال انصاری نےکانگریس لیڈروں پرناراضگی ظاہرکرتےہوئےکہا کہ راہل گاندھی پاکستان مقبوضہ کشمیرجوہندوستان کا حصہ ہے، وہاں جاکرسیاست کیوں نہیں کرتےہیں؟َ

Aug 24, 2019 09:44 PM IST | Updated on: Aug 24, 2019 09:55 PM IST
اجودھیا معاملہ میں مسلم فریق اقبال انصاری کا راہل گاندھی کو چیلنج- ہمت ہے توپاکستان مقبوضہ کشمیرپرکرو سیاست

اقبال انصاری نے راہل گاندھی اورکانگریس سے پوچھا ہےکہ ملک میں کئی جگہ مسئلے ہیں، راہل گاندھی وہاں کیوں نہیں جاتےہیں اورصرف کشمیر پر ہی کیوں سیاست کرتے ہیں۔

اجودھیا معاملےکےمسلم فریق اقبال انصاری  کانگریس کے سابق صدرراہل گاندھی سمیت اپوزیشن لیڈروں کےکشمیردورے پربھڑک گئے ہیں۔ اقبال انصاری نے راہل گاندھی اور کانگریس سے پوچھا ہےکہ ملک میں کئی جگہ مسئلے ہیں، راہل گاندھی وہاں کیوں نہیں جاتے ہیں۔ راہل گاندھی پاکستان مقبوضہ کشمیرجوہندوستان کا حصہ ہے، وہاں جاکرسیاست کیوں نہیں کرتےہیں؟َ کشمیرجا کرسیاست کیوں کررہے ہیں راہل گاندھی؟

کانگریس نےکشمیرمیں دفعہ 370 نافذ کیا تھا۔ کانگریس کےلیڈر70 سال تک کشمیرکےنام پر سیاست کرکےاپنا فائدہ لیتے رہےہیں۔ کشمیرمیں عوام کا برا حال رہا ہے۔ نریندرمودی حکومت نےدفعہ 370 ہٹاکرملک میں ایک قانون کا راج قائم کیا ہے۔ دفعہ 370 کےختم ہونے سے کشمیرکےلوگوں کا بھلا ہوا ہے۔ اقبال انصاری نےسوال اٹھایا ہےکہ راہل گاندھی اورکانگریس کوملک کی فکرہےتوپاکستان جاکرمسئلےکا حل کریں یا دیگرمقامات پرجاکرمسئلےکوحل کریں، لیکن کشمیرپرکانگریس کو سیاست نہیں کرنی چاہئے۔

Loading...

ملک کےلئے پاکستان سےلڑنے کوتیارہیں ہندوستانی مسلمان

اقبال انصاری نے ہندوستانی مسلمانوں کا موازنہ ویرعبدالحمید سےکرتے ہوئےکہا کہ ہندوستانی مسلمان ملک کےلئےپاکستان سےلڑنےکوتیارہیں۔ پاکستان ہمیشہ ہندوستان سے شکست کھاتا رہا ہے۔ وہیں کانگریس کشمیرپرسیاست کررہی ہے۔ ملک کے ہندو، مسلمان، سکھ اورعیسائی امن چاہتے ہیں۔ کانگریس نےکشمیرپرسیاست کرکےفائدہ اٹھایا ہے۔ کانگریس کی سیاست اب ختم ہونے والی ہے۔

Loading...