جموں و کشمیر کے ان علاقوں میں ISI نے کرلی ہیں دہشت گردوں کی دراندازی تیاریاں، رپورٹ میں بڑا انکشاف

خیال کیا جاتا ہے کہ یہ بات ضرور امریکہ نے کہی ہوگی کیونکہ اسے یہ بھی معلوم ہے کہ پاکستان اپنی حرکتوں سے باز آنے والا نہیں۔ ایک انٹیلی جنس رپورٹ کے مطابق موسم سرما کے اختتام کے بعد پاکستان شمالی کشمیر میں کنٹرول لائن پر برف پگھلنے کا انتظار تو نہیں کر سکتا، اس لیے وہ جنوبی پیر پنجال یعنی جموں سے دراندازی کے اپنے منصوبے پر کام کر رہا ہے۔

خیال کیا جاتا ہے کہ یہ بات ضرور امریکہ نے کہی ہوگی کیونکہ اسے یہ بھی معلوم ہے کہ پاکستان اپنی حرکتوں سے باز آنے والا نہیں۔ ایک انٹیلی جنس رپورٹ کے مطابق موسم سرما کے اختتام کے بعد پاکستان شمالی کشمیر میں کنٹرول لائن پر برف پگھلنے کا انتظار تو نہیں کر سکتا، اس لیے وہ جنوبی پیر پنجال یعنی جموں سے دراندازی کے اپنے منصوبے پر کام کر رہا ہے۔

خیال کیا جاتا ہے کہ یہ بات ضرور امریکہ نے کہی ہوگی کیونکہ اسے یہ بھی معلوم ہے کہ پاکستان اپنی حرکتوں سے باز آنے والا نہیں۔ ایک انٹیلی جنس رپورٹ کے مطابق موسم سرما کے اختتام کے بعد پاکستان شمالی کشمیر میں کنٹرول لائن پر برف پگھلنے کا انتظار تو نہیں کر سکتا، اس لیے وہ جنوبی پیر پنجال یعنی جموں سے دراندازی کے اپنے منصوبے پر کام کر رہا ہے۔

  • News18 Urdu
  • Last Updated :
  • Jammu and Kashmir | Delhi
  • Share this:
    نئی دہلی: ہندوستان کے خلاف پاکستان میں مسلسل سازشیں کی جا رہی ہیں۔ حال ہی میں امریکہ نے بھی اپنی ایک رپورٹ میں پاکستان کو خبردار کیا ہے کہ اگر ہندوستان میں دہشت گردی کی کارروائیاں کی گئیں تو ہندوستان اس کا سخت جواب دے گا۔ خیال کیا جاتا ہے کہ یہ بات ضرور امریکہ نے کہی ہوگی کیونکہ اسے یہ بھی معلوم ہے کہ پاکستان اپنی حرکتوں سے باز آنے والا نہیں۔ ایک انٹیلی جنس رپورٹ کے مطابق موسم سرما کے اختتام کے بعد پاکستان شمالی کشمیر میں کنٹرول لائن پر برف پگھلنے کا انتظار تو نہیں کر سکتا، اس لیے وہ جنوبی پیر پنجال یعنی جموں سے دراندازی کے اپنے منصوبے پر کام کر رہا ہے۔ دراندازی کے اس منصوبے میں پاکستانی فوج کے افسران بھی دہشت گردوں کی مدد کر رہے ہیں۔

    رپورٹ کے مطابق پاکستان جس طرح کا منصوبہ بنا رہا ہے اسے زمینی سطح پر عملی شکل نہیں دی جا رہی۔ پاکستان کی ملٹری انٹیلی جنس دراندازی کا ذمہ اٹھا رہی ہے۔ انٹیلی جنس رپورٹ کے مطابق 11 فروری کو پاکستان اسلام آباد میں مقبول بھٹ کی برسی منائی گئی اور اس دوران دہشت گردی کی کارروائیوں کے علاوہ آئی ایس آئی بھی موجود تھی تاہم اس بار پاک فوج کے ملٹری انٹیلی جنس افسران بھی اس میں شامل رہے۔

    خفیہ رپورٹ کے مطابق ملٹری انٹیلی جنس کے اس اجلاس میں شرکت کی سب سے بڑی وجہ کنٹرول لائن پر ہندوستانی فوج کی تعیناتی سے متعلق معلومات حاصل کرنا تھی، تاکہ کس جگہ سے دراندازی کرنا آسان ہو اور اس کی معلومات اور حکمت عملی دہشت گرد تنظیموں تک پہنچائی جائے۔

    پاکستان کو چین کی نیند نہیں لینے دے گا تحریک طالبان، بتایا کیا ہے اس کا اصلی مقصد

    11 چینی موبائل برانڈس کے خلاف فوج کا الرٹ، جوانوں کو فون بدلنے کی دی ہدایت

    UNSC میں خواتین کے تحفظ پر تھی بحث، پاک نے کشمیر کا راگ الاپا، ہندوستان نے جواب سے کردیا چپ

    آئی ایس آئی کے پاس دراندازی کی ذمہ داری

    آرمی انٹیلی جنس کو دراندازی کی میٹنگوں میں شامل ہونے سے صرف ایک ماہ قبل، آئی ایس آئی اس قدر ناراض تھا کہ پی او کے میں کوٹلی میں البدر میں لانچنگ کمانڈر کو تبدیل کر دیا گیا۔ انٹیلی جنس رپورٹ کے مطابق اس سے قبل اس سیکٹر سے دراندازی کی ذمہ داری ایوب البدر کے ہاتھ میں تھی جسے اب گزشتہ سال منشیرا میں البدر کے کیمپ بھیج دیا گیا ہے۔ اب کوٹلی کے البدر کے لانچنگ کمانڈر کی ذمہ داری ریاض ملک نامی دہشت گرد کمانڈر کو دی گئی ہے۔ وہ پی او کے ضلع بھمبر کے سمانی کا رہنے والا ہے۔
    Published by:Sana Naeem
    First published: