اپنا ضلع منتخب کریں۔

    اسرائیلی سفیر ناؤر گیلون نے 'دی کشمیر فائلز' پر تنقید کرنے پر مانگی معافی، ندو لاپڈ کو لکھا اوپن لیٹر

    ’دی کشمیر فائلز‘ The Kashmir Files کو ’فحش اور پروپیگنڈہ فلم‘ کہنے کے ایک دن بعد،  ہندوستان میں اسرائیل کے سفیر ناؤر گیلون نے معافی مانگ لی ہے۔

    ’دی کشمیر فائلز‘ The Kashmir Files کو ’فحش اور پروپیگنڈہ فلم‘ کہنے کے ایک دن بعد، ہندوستان میں اسرائیل کے سفیر ناؤر گیلون نے معافی مانگ لی ہے۔

    ’دی کشمیر فائلز‘ The Kashmir Files کو ’فحش اور پروپیگنڈہ فلم‘ کہنے کے ایک دن بعد، ہندوستان میں اسرائیل کے سفیر ناؤر گیلون نے معافی مانگ لی ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | israel
    • Share this:
      لی: اسرائیلی فلم ساز اور انٹرنیشنل فلم فیسٹیول آف انڈیا (آئی ایف ایف آئی) کے جیوری کے سربراہ ندو لاپڈ کی جانب سے ’دی کشمیر فائلز‘ The Kashmir Files کو ’فحش اور پروپیگنڈہ فلم‘ کہنے کے ایک دن بعد، ہندوستان  میں اسرائیل کے سفیر ناؤر گیلون نے معافی مانگ لی ہے۔ انہوں نے ٹویٹ کیا، 'ہندوستان اور اسرائیل، دونوں ممالک اور یہاں کے لوگوں کی دوستی بہت مضبوط ہے۔ آپ (نداو لپڈ) نے جو نقصان پہنچایا ہے وہ ٹھیک ہو جائے گا۔ بحیثیت انسان میں شرمندہ ہوں اور ہم اس برے طریقے کے لیے اپنے میزبانوں سے معافی مانگنا چاہتے ہیں کہ یہ ہم نے ان کی سخاوت اور دوستی کے بدلے میں دیا ہے۔'' مرکزی وزیر اطلاعات و نشریات انوراگ ٹھاکر نے ہندوستان میں اسرائیل کے سفیر کو بتایا کہ گیلون کے ٹویٹ کو ان کے بیان کی تائید میں ریٹویٹ کیا۔ آپ کو بتاتے چلیں کہ انٹرنیشنل فلم فیسٹیول آف انڈیا کا اہتمام وزارت اطلاعات و نشریات کے ذریعے کیا جاتا ہے۔




      جیوری کے سربراہ نداو لپڈ نے گوا میں منعقدہ 53 ویں انٹرنیشنل فلم فیسٹیول آف انڈیا (IFFI) میں 'دی کشمیر فائلز' کی اسکریننگ پر حیرت کا اظہار کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ اس فلم کو دیکھ کر ایسا لگا کہ یہ صرف تشہیر کے لیے بنائی گئی ہے اور بے ہودہ ہے۔ ایسی فلمیں ایک باوقار فلمی میلے اور فنکارانہ، مسابقتی طبقے کے لیے ٹھیک نہیں ہیں۔ مرکزی وزیر انوراگ ٹھاکر اسٹیج پر ان کے پاس کھڑے تھے جب نداو لاپڈ نے ٹی کے ایف کے بارے میں یہ تبصرہ کیا۔

      گیان واپی معاملے پر ہائی کورٹ نے فیصلہ رکھا محفوظ، فریقین 2 ہفتے میں دے سکتے ہیں دلائل



       

      ہندوستانیT20ٹیم کاکپتان تبدیل کرنےکی ہورہی ہےچرچا، ہاردک پانڈیا کےعلاوہ جانیں کون ہیں آپشن

      وویک رنجن اگنی ہوتری اس فلم کے ہدایت کار ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ 'دی کشمیر فائلز' کے ذریعے انھوں نے کشمیری پنڈتوں کی حالت زار کو دنیا کے سامنے بیان کیا ہے، جنہیں 3 دہائیاں قبل اپنی ہی ریاست سے بے گھر ہونا پڑا اور اپنے ہی ملک میں پناہ گزینوں کی طرح رہنا پڑا۔ معلوم ہو ہے کہ اس فلم نے باکس آفس پر بھی ریکارڈ کمائی کی۔ اس فلم کو بنانے میں تقریباً 17 کروڑ خرچ ہوئے اور اس نے دنیا بھر میں تقریباً 400 کروڑ روپے کا کلکشن کیا۔
      Published by:Sana Naeem
      First published: