ہوم » نیوز » وطن نامہ

بڑی پستان والی خوبصورت خواتین کی طرف متوجہ ہونا فطری، جنسی خواہشات سے متعلق یہ بات آئی سامنے

گزشتہ کچھ سالوں سے میں خوبصورت خواتین کی طرف زیادہ متوجہ ہوتا ہوا محسوس کر رہا ہوں، خاص طور پر ایسی خواتین کے تئیں جن کے پستان بڑے ہیں یا جن کے ہونٹ بھرے ہیں اور جن کا وزن درمیانی سے تھوڑا زیادہ ہے۔ کئی بار ایسی خواتین کے نزدیک ہونے کی خواہش اتنی بڑھ جاتی ہے کہ میں ٹھیک سے سو نہیں پاتا ہوں

  • Share this:
بڑی پستان والی خوبصورت خواتین کی طرف متوجہ ہونا فطری، جنسی خواہشات سے متعلق یہ بات آئی سامنے
بڑی پستان والی خوبصورت خواتین کی طرف متوجہ ہونا فطری، جنسی خواہشات سے متعلق یہ بات آئی سامنے

سوال نمبر9: برائے مہربانی میرے سوالوں کا جواب دیجئے۔ گزشتہ کچھ سالوں سے میں خوبصورت خواتین کی طرف زیادہ متوجہ ہوتا ہوا محسوس کر رہا ہوں، خاص طور پر ایسی خواتین کے تئیں جن کے پستان بڑے ہیں یا جن کے ہونٹ بھرے ہیں اور جن کا وزن درمیانی سے تھوڑا زیادہ ہے۔ کئی بار ایسی خواتین کے نزدیک ہونے کی خواہش اتنی بڑھ جاتی ہے کہ میں ٹھیک سے سو نہیں پاتا ہوں اور ایسا صرف ان کو دیکھ کر نہیں ہوتا ہے، جنہیں میں مستقل طور پر دیکھتا ہوں بلکہ کہیں بھی ایسی کسی خاتون کی ایک جھلک پانے پر بھی ہوتا ہے۔ میں مانتا ہوں کہ اس طرح کے خیال میں کوئی برائی نہیں ہے، لیکن آپ جسے بھی دیکھیں اس کے بارے میں تصور کرنے لگیں یہ بھی اچھا نہیں ہے۔ کئی بار مجھے خود پر کنٹرول کرنا پڑتا ہے اور میں ایسی کچھ خواتین سے آنکھ ملانے یا ان کی طرف دیکھنے سے بچنے کی کوشش کرتا ہوں، یہ سوچ کرکہ انہیں پتہ نہ چل جائے کہ میں انہیں کہاں دیکھ رہا ہوں۔ میں کسی کے لئے پریشانی پیدا نہیں کرنا چاہتا، میں سب کی عزت کرتا ہوں اور میں اس بات میں پورا یقین رکھتا ہوں کہ کسی بھی لڑکی/ عورت کے ساتھ ایسا نہیں کرنا چاہئے، جو اسے بے چین کردے جیسا کہ ان کے ساتھ ہردن ہر جگہ ہوتا ہے!


جواب: پہلے تو میں آپ کی اس بات کے لئے تعریف کرنا چاہتا ہوں کہ اس جنسی توجہ کو آپ نے خود عام اور فطری مانا ہے۔ مجھے اس بات کی بھی زیادہ خوشی ہے کہ آپ اس بات کو بخوبی جانتے ہیں کہ خواتین کو ہر دن کس طرح کی پریشانیاں ان باتوں کو لے کر جھیلنی پڑتی ہے اور اس کے تئیں آپ کے احساس کی تعریف کی جانی چاہئے۔ ہم آپ کے سوال سے جتنا سمجھ پائے ہیں، اس لحاظ سے آپ کی دو پریشانی ہے۔ ایک یہ کہ خواتین کے تئیں اتنا زیادہ متوجہ ہونے سے میں خود کو روک نہیں پا رہا ہوں اور جنسی نظریے سے ہی میں انہیں کیوں دیکھتا ہوں، اور اگر میں کسی کے تئیں خود کو متوجہ پاتا ہوں تو اپنے جذبات کا اظہار بہتر طریقے سے کیسے کروں۔

سب سے پہلے، آپ کو یہ ماننا ہوگا کہ اس طرح کی سوچ رکھنے والے آپ پہلے شخص نہیں ہیں۔ بہت سارے لوگ آپ کو مل جائیں گے جو اسی طرح کا جذبہ رکھتے ہیں۔ جنسی توجہ کا جذبہ رکھ کر آپ کوئی برے انسان نہیں بن گئے ہیں، لیکن اس سے پہلے کہ میں آپ کو یہ بتاوں کہ اتنے سارے لوگوں کے تئیں متوجہ ہونے کی اپنی پریشانی سے آپ کیسے نمٹیں، یا آپ خود کو کیسے روکیں اور دوسرے کے تئیں احترام کا جذبہ رکھیں، مجھے آپ کے دوسرے سوال کا جواب پہلے دینا ہوگا۔ بے حیائی کے بغیر کسی شخص کے تئیں اپنی توجہ کے جذبے کو کسیے ظاہر کریں گے اور کیسے اسے بے چین نہیں ہونے دیں گے؟

آپ کو یہ سمجھنا ہوگا کہ خواتین بھی انسان ہیں اور انسان ہونے کا مطلب صرف کچھ جسمانی اعضا کا ہونا ہی نہیں ہوتا۔ ایسے اعضا جنہیں دیکھ کر آپ متوجہ ہوں، جیسے کہ بڑے پستان یا بھرے ہوئے ہونٹ۔ بڑے پستان اور بھرے ہوئے ہونٹ والی خاتون بھی انسان ہی ہے، جس کا اپنی ایک شخصیت ہے، اس کے جذبات ہیں اور اس کی اپنی زندگی اور اس کی کہانی ہے۔ لہٰذا اگر آپ کسی خاتون کے جسمانی بناوٹ کے تئیں متوجہ ہوتے ہیں تو اسے احترام کی نظر سے اپنا تعارف کرائیں اور اسے بتائیں کہ آپ کو ان کی یہ باتیں اچھی لگتی ہیں۔ لوگوں کو ایماندار اور سچی تعریف اچھی لگتی ہے۔ پھر، اگر کسی کے تئیں آپ متوجہ ہیں تو اس سے کھلے طور پر ایک انسان کے طور پر بات کرنا ہمیشہ ہی ان کو بھونڈے اور غلط طریقے سے گھورنا کے مقابلے اچھا انسان ہوتا ہے۔


ایسے کسی شخص سے جسے آپ نے دیکھا ہے، اس کے بارے میں تصور کرنے سے خود کو نہیں روک پانا عام طور پر اپنی خواہشات کو دبانے کے سبب ہوتا ہے۔ اور دبانے سے میرا مطلب ہے خود کو یہ کہنا کہ کسی کے تئیں متوجہ ہونا غلط ہے اور پھر اپنی خواہشات کے بارے میں کچھ کرنے سے خود کو روکنا ہے۔ ذرا یاد کیججے کہ جب ہم چھوٹے تھے اور ہمارے ماں - باپ ہمیں کسی چیز کو کھانے سے منع کرتے تھے اور اس چیز کو ہم سے دور رکھ دیتے تھے تو اسے پانی کی ہماری خواہش اور کتنی بڑھ جاتی تھی؟ جس چیز کے بارے میں ہم جانتے ہیں کہ ہم اسے حاصل نہیں کرسکتے، اس کو پانے کی خواہش ہمارے اندر مزید بڑھ جاتی ہے۔

خواتین کو ایک ایسی شخصیت کے طور پر پہچاننے کی کی شروعات کردینا جن کی اپنی زندگی اور جن کی اپنی شخصیت ہے اور وہ صرف کچھ اعضا کے بنے نہیں ہیں اور پھر اس خاتون سے جسے آپ جاذب نظر مانتے ہیں، کھلے طور پر ایمانداری اور عزت سے بات کرنے سے آپ کو لگے گا کہ آپ اپنی خواہشات کو کنٹرول کر پا رہے ہیں۔ شروع میں آپ کو یہ سب کرنے میں تھوڑی پریشانی پیش آسکتی ہے، لیکن آخر کار آپ اپنی خواہشات کو ایمانداری، جاذبیت اور احترام کے نظریے سے اظہار کرنا سیکھ جائیں گے۔ پریکٹس کسی کو بہتر بنا سکتا ہے۔


 
Published by: Nisar Ahmad
First published: Nov 30, 2020 11:26 PM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading