உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    Jahangirpuri Violence:قصورواروں کو سخت سزا ملنی چاہیے: اروند کیجریوال

    Youtube Video

    اس واقعہ پر اپنے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال(Arvind Kejriwal) نے کہا کہ دہلی کے جہانگیر پوری (Jahangirpuri Violence)میں جلوس پرمبینہ طورپر پتھراؤ کا واقعہ انتہائی قابل مذمت ہے۔ قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ انہوں نے ہاتھ جوڑ کر تمام لوگوں سے امن برقرار رکھنے کی اپیل ہے۔

    • Share this:
      Jahangirpuri Violence:راجدھانی دہلی کے جہانگیرپوری علاقے میں آج ہنومان جینتی کے موقع پر نکالے جانے والے جلوس پر  مبینہ طورپر پتھراؤ اور کے بعد کئی گاڑیوں میں آگ لگادی گئی ۔ دیکھتے ہی دیکھتے بحث و تکرار نے تشدد کی شکل اختیار کرلی اور کئی پولیس اہلکار زخمی ہوگئے۔ حالانکہ حالات اب قابو میں ہیں لیکن امن و امان برقرار رکھنے کے لیے جہانگیر پوری میں آر اے ایف کی دو کمپنیاں تعینات کی گئی ہیں۔ یہی نہیں دہلی پولیس نے دیگر مقامات پر RAF یعنی ریپڈ ایکشن فورس کو بھی تعینات کیا ہے۔

      وزیر داخلہ امت شاہ نے پولیس کمشنر سے کی بات

      جہانگیر پوری میں فرقہ وارانہ کشیدگی پر مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے دہلی پولیس کے سینئر افسران سے بات کی ہے اور انہیں ملزمین کے خلاف فوری کارروائی کرنے کی ہدایت دی ہے۔ وزارت داخلہ نے دہلی پولیس کو ضروری فورس بھیجنے کے احکامات بھی جاری کیے ہیں۔ وزارت داخلہ صورتحال پر مسلسل نظر رکھے ہوئے ہے۔ وزیر داخلہ امت شاہ نے اس واقعہ کے بارے میں دہلی پولیس کمشنر سے فون پر بات کی۔ اس کے علاوہ انہوں نے اسپیشل سی پی لاء اینڈ آرڈر دیپیندر پاٹھک سے بھی بات کی جو موقع پر موجود تھے فون پر۔ مرکزی وزیر نے امن و امان اور ماحول کو پرامن رکھنے کی ہدایات بھی دی ہیں۔

      قصورواروں کو سخت سزا ملنی چاہیے: اروند کیجریوال

      وہیں اس واقعہ پر اپنے شدید ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے دہلی کے وزیر اعلی اروند کیجریوال نے کہا کہ دہلی کے جہانگیر پوری میں جلوس پر  مبینہ طور پر پتھراؤ کا واقعہ انتہائی قابل مذمت ہے۔ قصورواروں کے خلاف سخت کارروائی کی جائے۔ انہوں نے ہاتھ جوڑ کر تمام لوگوں سے امن برقرار رکھنے کی اپیل ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ امن کے بغیر کوئی بھی ملک ترقی نہیں کر سکتا۔اروند کیجریوال نے کہا کہ سیکورٹی ایجنسیاں اور دہلی پولیس مرکزی حکومت کی ذمہ داری ہے اس لیے مرکزی حکومت کو دہلی میں امن و امان برقرار رکھنا چاہیے۔

      مبینہ پتھراؤ سازش کے تحت ہوا: منوج تیواری

      بی جے پی کے رکن پارلیمنٹ منوج تیواری نے کہا کہ آج ہنومان کی جینتی کے موقع پر جہانگیر پوری علاقے میں  مبینہ طورپر  پتھراؤ کا واقعہ پیش آیا۔ یہ ایک بڑی سازش کے تحت دارالحکومت دہلی میں ہو رہا ہے۔ اس کی فوری تحقیقات کرائی جائے اور مجرموں کو سخت سے سخت سزا دی جائے۔

      جلوس پر پتھراؤ

      یاد رہے کہ کہ ہنومان جینتی کے موقع پر ملک بھر میں مہا اتسو منایا جا رہا ہے۔ اس دوران دہلی کے جہانگیر پوری علاقے میں جلوس نکالا گیا۔ شام 5.30 بجے کے قریب کشال سنیما کے قریب جلوس میں پیدل چل رہے لوگوں پر مبینہ طورپر پتھراؤ کرنے کی اطلاعات ہیں جس کے بعد کئی گاڑیوں کو آگ لگادی گئی اور ہنگامہ آرائی کے دوران کئی پولیس اہلکار زخمی بھی ہوئے۔
      Published by:Mirzaghani Baig
      First published: