உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    راجستھان میں کانگریس اراکین اسمبلی کی بغاوت پر سونیا گاندھی کی نظر، اشوک گہلوت-سچن پائلٹ دہلی طلب

    راجستھان میں کانگریس اراکین اسمبلی کی بغاوت پر سونیا گاندھی نے اشوک گہلوت-سچن پائلٹ دہلی طلب کیا۔

    راجستھان میں کانگریس اراکین اسمبلی کی بغاوت پر سونیا گاندھی نے اشوک گہلوت-سچن پائلٹ دہلی طلب کیا۔

    راجستھان میں ہو رہے سیاسی ہلچل کے درمیان سونیا گاندھی نے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت، سچن پائلٹ، کانگریس انچارج اجے ماکن اور ملیکا ارجن کھڑگے کو پیر کے روز دہلی بلایا ہے۔ دوسری طرف، اجے ماکن کا کہنا ہے کہ ہم فی الحال دہلی نہیں جا رہے ہیں۔ ہمیں سونیا گاندھی نے اراکین اسمبلی سے ون ٹو ون بات کرنے کا حکم دیا ہے۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Jaipur, India
    • Share this:
      جے پور: راجستھان میں ہو رہے سیاسی ہلچل کے درمیان سونیا گاندھی نے وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت، سچن پائلٹ، کانگریس انچارج اجے ماکن اور ملیکا ارجن کھڑگے کو پیر کے روز دہلی بلایا ہے۔ دوسری طرف، اجے ماکن کا کہنا ہے کہ ہم فی الحال دہلی نہیں جا رہے ہیں۔ ہمیں سونیا گاندھی نے اراکین اسمبلی سے ون ٹو ون بات کرنے کا حکم دیا ہے۔ آج رات سبھی اراکین اسمبلی سے ملیں گے۔ سب کی رائے لیں گے۔ سبھی اراکین اسمبلی قرارداد پاس کریں گے کہ سونیا گاندھی کو فیصلہ لینے کا اختیار دیا جائے گا۔

      اس معاملے سے متعلق اعلیٰ کمان نے حکم دیا ہے کہ معاملے کو جلد حل کیا جائے۔ اس کے لئے اراکین اسمبلی کی بات سننے کے بعد مرکزی آبزرور انہیں اپنی رپورٹ سونپیں گے۔ ملیکا ارجن کھڑگے مسلسل اعلیٰ کمان سے رابطے میں ہیں۔ اس درمیان سابق وزیر شانتی دھاریوال سی ایم آر کے لئے روانہ ہوگئے ہیں۔ ان کے ساتھ وزیر مہیش جوشی اور پرتاپ سنگھ کھاچریاواس بھی ہیں۔ وہ گہلوت حامیوں کی رائے لے کر آبزرور کو دیں گے۔ دوسری جانب، سی پی جوشی کے گھر گہلوت حامیوں کا مجمع لگا ہوا ہے۔

      یہ بھی پڑھیں۔

      راجستھان کانگریس میں بغاوت، گہلوت خیمہ کے اراکین اسمبلی نے سی پی جوشی کو سونپا استعفیٰ

      یہ بھی پڑھیں۔
      راجستھان میں وزیر اعلیٰ عہدے سے متعلق گھمسان، سابق وزیر کے گھر پر گہلوت گروپ کا مجمع، سچن پائلٹ مشکل میں


      وزرا نے بی جے پی پر لگایا سنگین الزام

      اس سیاسی رسہ کشی کے درمیان وزیر خوراک پرتاپ سنگھ کھاچریاواس نے بی جے پی پر سنگین الزام لگایا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بی جے پی یہاں حکومت گرانے میں لگی ہوئی ہے، جو لوگ استعفیٰ دے رہے ہیں، ان سے ہماری فیملی کے سربراہ بات کریں گے۔ ان کی ناراضگی دور ہوجائے گی۔ اس معاملے پر وزیر اعلیٰ اشوک گہلوت اور اعلیٰ کمان کے درمیان میٹنگ کی پوری تیاری تھی۔

      الزام لگایا جا رہا ہے کہ پارٹی ہماری سنتی نہیں۔ فیصلے اپنے آپ لے لئے جاتے ہیں۔ کھاچریاواس نے کہا، ضرورت ہوگی تو ہم دہلی بھی جائیں گے۔ ہمیں کیا کرنا ہے، یہ ہم طے کریں گے۔ راہل گاندھی کہیں گے تو جان بھی دے دیں گے۔ ہمارے اراکین اسمبلی ناراض نہیں ہونے چاہئے۔ یہ بی جے پی کی سازش ہے۔ 100 سے زیادہ اراکین اسمبلی ایک ساتھ ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: