کشمیری عوام پرپابندی عائد کرکے نہیں جیتا جا سکتا ان کا دل، اس لئے ہٹائی جائے پابندی: جماعت اسلامی ہند

امیرجماعت اسلامی ہند سید سعاد ت اللہ حسینی نےکہا کہ تنظیم برائےانسانی حقوق اور سول سوسائٹی کی سربراہی میں فیکٹ فائنڈنگ ٹیم نے وادی کشمیرکےسلسلے میں جورپورٹیں پیش کی ہیں وہ باعث تشویش ہیں۔

Oct 01, 2019 10:26 PM IST | Updated on: Oct 02, 2019 04:16 PM IST
کشمیری عوام پرپابندی عائد کرکے نہیں جیتا جا سکتا ان کا دل، اس لئے ہٹائی جائے پابندی: جماعت اسلامی ہند

جماعت اسلامی ہند کےعہدیداران نے ماہانہ پریس کانفرنس میں کشمیرکی صورتحال پرتشویش کا اظہارکیا۔

نئی دہلی: جماعت اسلامی ہند نےکشمیرکی صور تحال پرشدید تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم چاہتے ہیں کہ حکومت کشمیری عوام پرسےسخت پابندیوں کوہٹایا جائے۔ وہاں کےلوگ تقریبا دو ماہ سےانٹرنیٹ اورمواصلاتی خدمات سے محروم ہیں ۔ ریاست کے سیاسی لیڈران کونظربند کرنا جمہوری اقدارکےخلاف ہے۔ مرکزجماعت اسلامی ہند میں منعقدہ ماہانہ پریس کانفرنس کوخطاب کرتے ہوئےامیرجماعت اسلامی ہند سید سعاد ت اللہ حسینی نےکہا کہ تنظیم برائےانسانی حقوق اور سول سوسائٹی کی سربراہی میں فیکٹ فائنڈنگ ٹیم نے وادی کشمیرکےسلسلے میں جورپورٹیں پیش کی ہیں وہ باعث تشویش ہیں۔ ان میں کہا گیا ہے کہ کشمیرمیں بڑے پیمانے پرنوجوانوں کوقید کیا جا رہا ہے، احتجاج پرقابو پانے کےلئے ضرورت سے زیادہ فوج تعینات کی گئی ہے اورطب و صحت کی سہولیات بھی بری طرح متاثرہیں۔ انہوں نےکہا کہ کشمیری عوام پرپابندی عائد کرکے ان کا دل نہیں جیتا جا سکتا، لہٰذا ہمارا مطالبہ ہے کہ فوراً پابندیاں ہٹائی جائیں۔

جموں وکشمیرمیں بلاک کی سطح پرانتخابات کےاعلان کے سلسلے میں پوچھےگئے سوال کےجواب میں امیرجماعت نےکہا کہ یہ انتخابات ہونےچاہئے، لیکن اس سے زیادہ اہم اسمبلی انتخابات اورسیاسی لیڈران کی آزادی ہے۔ دیگر پابندیاں، مثلاََ لوگوں کے اطلاع اورنقل و حرکت کےحق پرپابندی ہٹائی جانی چاہئے، تب ہی جمہوری عمل معنٰی خیزہوسکتا ہے۔

Loading...

پریس کانفرنس کے آغازمیں جماعت اسلامی ہند کےنائب امیرمحمد سلیم انجینئرنے موضوعات پربریفنگ دیتے ہوئےکہا کہ جماعت چاہتی ہےکہ حکومت ریاست جمو ں وکشمیر کےعوام اوران کےنمائندوں کے ساتھ بات چیت اورمشورے کےذریعہ معاملات کوحل کرے۔ انہوں نے ملک کی سست معیشت پر بھی تشویش کا اظہارکیا ۔ انہوں نےاس بات کی نشان دہی کی کہ کس طرح ہمیں اپنی سرمایہ کاری کی ضروریات کو پورا کرنےکےلئےسود پرمبنی فنانسنگ کےبجائے ایکویٹی پرمبنی فنانسنگ کی طرف بڑھنا ہوگا۔

Loading...