فارغین مدارس رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی حیات طیبہ اورتقویٰ وپرہیزگاری کو اپنی زندگی کا حصہ بنالیں: محمد رحمانی مدنی

جامعہ اسلامیہ سنابل کے 32 ویں بیچ کے مابین تفویض اسناد کے پروگرام میں جامعہ ملیہ اسلامیہ کے اوایس ڈی نے کہا کہ جامعہ اسلامیہ سنابل جیسا معیاری ادارہ میری نظرمیں کوئی اورنہیں ہے۔

Jul 21, 2019 08:24 PM IST | Updated on: Jul 21, 2019 08:24 PM IST
فارغین مدارس رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی حیات طیبہ اورتقویٰ وپرہیزگاری کو اپنی زندگی کا حصہ بنالیں: محمد رحمانی مدنی

جامعہ اسلامیہ سنابل کے فضلا اور حفاظ کو خطاب کرتے ہوئے سینٹر کے صدر مولانا محمد رحمانی مدنی۔

نئی دہلی: اپنے اند رشکرگزاری کا جذبہ پیدا کریں، احساس ذمہ داری پیدا کریں، آپ کو جوسنابلی ہونےکا لقب ملا ہےاس کی قدرکریں۔ جوسند آپ کودی گئی ہے درحقیقت یہ سند فراغت نہیں بلکہ سند مصروفیت ہے، آپ کےکندھوں پرایک عظیم ذمہ داری ڈال دی گئی ہے اورموجودہ عہد میں آپ کی ذمہ داری مزید بڑھ جاتی ہے۔ آپ سیرتِ نبوی کوسامنے رکھیں اوردین اسلام کا مشن جس کےآپ علمبردارہیں اسے کما حقہ دوسروں تک پہنچائیں۔ ان خیالات کا اظہارجامعہ اسلامیہ سنابل، نئی دہلی میں منعقد ہونے والے فارغین فضلاء وحفاظ کے مابین تقسیم اسناد کے پروگرام میں صدارت کے فرائض انجام دے رہےابوالکلام آزاد اسلامک اویکننگ سنٹرکے صدرمولانا محمد رحمانی سنابلی، مدنی نےاپنے صدارتی خطاب کے دوران کیا۔

محمد رحمانی نبی صلی اللہ علیہ وسلم کی زندگی سے تواضع، انکساری اورقناعت کا سبق حاصل کریں۔ رسول اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نےمشکل ترین حالات میں اللہ کے پیغام کو انسانوں تک پہنچایا۔ صلاحیت اورصالحیت کے ساتھ میدانِ عمل میں اتریں، اللہ پربھروسہ رکھیں اورتقویٰ و پرہیزگاری کے ساتھ قدم آگے بڑھائیں۔ اللہ کی مدد شاملِ حال ہوگی کیونکہ اللہ تقویٰ شعار و ں کے لئےایسے وسائل اورذرائع فراہم کرتا ہے، جن کا بندہ کو وہم وگمان بھی نہیں ہوتا۔ آپ ادارہ اورقوم وملت کی شان اورعزت ہیں اپنےاندراصالت اورمنہجیت پیدا کریں اس کے لئےعلامہ ابن باز،علامہ عثیمین، علامہ ألبانی، مرکزکے بانی علامہ عبدالحمید رحمانی اورمیاں سید نذیرحسین محدث دہلوی رحمہم اللہ اوران کے شاگردوں کا جوعظیم سلسلہ رہا ہےاس کا مطالعہ کریں۔

Loading...

انہوں نے طلبا کو نصیحت کرتے ہوئے کہا کہ آپ جہاں بھی رہیں اپنی پوری وجاہت اور اسلامی تشخص کے ساتھ رہیں ، تقویٰ اورقناعت کے ساتھ زندگی گزارنے کی تلقین کرتے ہوئے قرآنی آیت کے حوالے سے کہا کہ تقویٰ وپرہیزگاری کو اپنی زندگی کا حصہ بنالیں۔ نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی حیات طیبہ اورآپ کی ازواج مطہرات کی زندگیاں اس سلسلے میں ہمار ے لئے بہترین نمونہ ہیں، آپ حضرات نے جوکچھ سیکھا ہےاس کواپنی عملی زندگی میں نافذ کریں۔

سنابل کے 54 فضلاء اور 47  حفاظ کواسناد تقسیم

جامعہ اسلامیہ سنابل کے فضلا اور حفاظ۔ جامعہ اسلامیہ سنابل کے فضلا اور حفاظ۔

واضح رہے کہ یہ پروگرام جامعہ اسلامیہ سنابل سے فارغ ہونے والے علماء ، فضلاء اورمعہد عثمان بن عفان لتحفیظ وتجوید القرآن الکریم جوگابائی سے حفظ کی تکمیل کرنے والے طلبہ کےاعزاز میں ہرسال منعقد ہوتا ہے۔اس مرتبہ فضلاء کی تعداد 54  جبکہ حفاظ کی تعداد 47 تھی۔ پروگرام کا آغازمحمد طالب طفیل احمد متعلم ثالثہ متوسطہ کی تلاوت کلام پاک سےہوا۔اس کے بعدوصی اللہ رفیق اللہ، امین لجنۃ الثقافہ نےخطبۂ استقبالیہ پیش کیا۔ پھرابوسفیان وحید الزماں،محمد آصف محمد اسماعیل او رمحمدمعین جلیس احمد نے با لترتیب عربی،اردو اور انگریزی میں اپنی طرف سےاوراپنے فارغین ساتھیوں کی جانب سے تاثراتی کلمات پیش کئے۔ اس کے بعد عمید جامعہ مولانا نثار احمد سنابلی ، مدنی صاحب نے تقسیم اسانید کا سلسلہ شروع کیا۔ دہلی اور بیرون دہلی سے تشریف لائے علماء ودانشوران اور ذمہ داران مرکز و اساتذۂ جامعہ کے ہاتھوں یہ سلسلہ تکمیل کو پہنچا۔ اس سلسلے کے معاً بعد مسابقہ سیرت النبی جس کا انعقاد جمعیت ابنائے سنابل ممبئی کی جانب سے جامعہ سنابل میں ز یرِتعلیم طلبہ کے مابین منعقد ہوا تھا اس میں اوّل ، دوم اورسوم پوزیشن حاصل کرنےوالے طلبہ کونقدی انعامات سے نوازا گیا۔

اسلام کا نام روشن کریں طلبا: پروفیسرسعید الدین

مہمان خصوصی کی حیثیت سے تشریف لائے پروفیسرسعید الدین او،ایس ڈی، برائے وائس چانسلرآفس جامعہ ملیہ اسلامیہ، نئی دہلی نے اپنے خطاب میں فارغین جامعہ کونصیحت کرتے ہوئےکہا کہ جوکچھ آپ نےسیکھا ہے اب اس پرعمل کا وقت آیا ہے ۔ آپ جہاں کہیں بھی رہیں اسلام کا نام روشن کرتے رہیں ،ادارہ کی نیک نامی کا سبب بنیں اوراپنی عملی زندگی کو اسلامی تعلیمات سے بہرہ مند کریں اورقوم ووطن کی خدمت کا پرخلوص جذبہ رکھیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ میں سنابل جیسا معیاری تعلیمی ادارہ نہیں جانتا اس لئےاس سے بھرپورفائدہ اٹھائیں۔

جامعہ اسلامیہ سنابل میں تقسیم اسناد کے موقع پر علمائے کرام اور مہمانان۔ جامعہ اسلامیہ سنابل میں تقسیم اسناد کے موقع پر علمائے کرام اور مہمانان۔

 اپنی شناخت، اپنی روایات اورمنہج: مولانا صلاح الدین

معروف عالم دین مولانا صلاح الدین مقبول احمد مدنی نےذمہ داران مرکز و جامعہ کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ جذبۂ شکرسے پیمانۂ دل لبریزہے۔ رحمانی رحمہ اللہ کی یاد آتے ہی آبدیدہ ہوگئے۔ فارغین جامعہ کونصیحت کرتے ہوئےکہا کہ اپنی شناخت، اپنی روایات اورمنہج ومسلک کوآپ کبھی نہ بھولیں۔ تدریس اورخطابت میں حسن لائیں اور اپنی عملی زندگی میں اللہ ہی پربھروسہ رکھیں۔ مدرسہ ، مسجد اورقرآن وحدیث سے اپنا رشتہ مضبوط رکھیں۔ اس کےعلاوہ مرکزی جمعیت اہلحدیث ہند کے ناظم عمومی مولانامحمد ہارون سنابلی، سینٹر کے جنرل سکریٹری مولانا عاشق علی اثری اورچیئر مین خدیجۃ الکبریٰ گرلس پبلک اسکول، شہاب الدین انصارینے فارغین جامعہ کے حق میں دعا کرتے ہوئے کہا کہ حصولِ علم کی راہ میں آپ لوگوں نے جووقت صرف کیا ہے اللہ اسے شرفِ قبولیت بخشے۔ اخیر میں جامعہ اسلامیہ سنابل کے عمید مولانا نثار احمد سنابلی، مدنی نے تمام حاضرین کا شکریہ اداکیا اور اس کے بعد ناظم جلسہ مشرف نادی الطلبہ جامعہ اسلامیہ سنابل مولانا عبدالبر صاحب سنابلی مدنی نے پروگرام کے اختتام کا اعلان کیا۔ اس موقع پر جامعہ اسلامیہ سنابل اورمعہد عثمان بن عفان کے اساتذہ وطلبہ کے علاوہ دہلی وبیرون دہلی کی مشہور علمی وسماجی شخصیات بھی موجود تھیں۔

Loading...