உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    جامعہ ملیہ اسلامیہ نے کیمپس میں صفورا زرگر سمیت تین طلبہ کی انٹری پر لگائی پابندی، جانئے وجہ

    جامعہ ملیہ اسلامیہ نے کیمپس میں صفورا جرگر سمیت تین طلبہ کی انٹری پر لگائی پابندی، جانئے وجہ

    جامعہ ملیہ اسلامیہ نے کیمپس میں صفورا جرگر سمیت تین طلبہ کی انٹری پر لگائی پابندی، جانئے وجہ

    Jamia Millia Islamia ban Safoora Zargar entry: جامعہ ملیہ اسلامیہ نے اپنے تین سابق طلبہ کی انٹری پر پابندی لگادی ہے ، جس میں 2020 کے فسادات کی ملزمہ صفورا زرگر بھی شامل ہیں ۔ داخلے پر پابندی لگانے کی وجہ 'غیر متعلقہ اور قابل اعتراض' معاملات پر یونیورسٹی میں 'آندولن' کرنا بتایا گیا ہے ۔

    • News18 Urdu
    • Last Updated :
    • Delhi | New Delhi | New Delhi
    • Share this:
      نئی دہلی : جامعہ ملیہ اسلامیہ نے اپنے تین سابق طلبہ کی انٹری پر پابندی لگادی ہے ، جس میں 2020 کے فسادات کی ملزمہ صفورا زرگر بھی شامل ہیں ۔ داخلے پر پابندی لگانے کی وجہ 'غیر متعلقہ اور قابل اعتراض' معاملات پر یونیورسٹی میں 'آندولن' کرنا بتایا گیا ہے ۔ چیف پراکٹر کے ذریعہ دستخط شدہ 14 ستمبر کے آرڈر میں کہا گیا ہے کہ مجاز اتھاریٹی نے پرامن تعلیمی ماحول کو برقرار رکھنے کیلئے سابق طلبہ پر کیمپس میں داخلے پر پابندی کو منظوری دی ہے ۔

      اس سے پہلے جامعہ ملیہ اسلامیہ یونیورسٹی نے تحقیقی کام میں "غیر تسلی بخش" پیش رفت کی وجہ سے سماجی کارکن صفورا زرگر کا داخلہ منسوخ کر دیا تھا۔ زرگر کو 2020 کے فسادات کے سلسلہ میں گرفتار کیا گیا تھا۔ شعبہ سوشیالوجی میں ایم فل/پی ایچ ڈی پروگرام میں داخلہ لینے والی زرگر نے کہا کہ داخلہ کی منسوخی سے "میرا دل ٹوٹا ہے، لیکن میرا حوصلہ نہیں "۔

       

      یہ بھی پڑھئے: وزیر اعظم نے لانچ کی نئی لاجسٹکس پالیسی، کہا: پہلے کتوبر چھوڑتے تھے، آج چیتا چھوڑ رہے ہیں


      26 اگست کے نوٹیفکیشن میں فیکلٹی آف سوشل سائنسز کے ڈین آفس نے کہا کہ زرگر نے اپنا ایم فل تحقیقی مقالہ پانچ سمسٹرز کے زیادہ سے زیادہ مقررہ وقت کے اندر جمع نہیں کیا، "ایم فل/پی ایچ ڈی (سوشیالوجی) صفورا زرگر کا رجسٹریشن 22 اگست 2022 سے منسوخ کر دیا گیا ہے۔

       

      یہ بھی پڑھئے: عام آدمی پارٹی کے ممبر اسمبلی امانت اللہ خان اے سی بی کی چار دن کی ریمانڈ پر


      نوٹیفکیشن میں کہا گیا ہے کہ آر اے سی کے 5 جولائی کی سفارش پر 22 اگست کو ڈی آر سی (ڈپارٹمنٹ ریسرچ کمیٹی) اور سپروائزر کی رپورٹ کی بنیاد پر بورڈ آف اسٹڈیز نے پروفیسر کلویندر کور کے تحت رجسٹرڈ ایم فل/پی ایچ ڈی اسکالر صفورا زرگر کا داخلہ منسوخ کرنے کی منظوری دیدی ۔

      دریں اثنا زرگر نے ٹویٹ کیا کہ ان کا داخلہ منسوخ کرنے کو کتنی جلد منظوری دی گئی۔ زرگر نے ٹویٹ کیا : عام طور پر سست رفتار سے چلنے والے جامعہ انتظامیہ نے تمام ضروری عمل کو نظرانداز کرتے ہوئے میرا داخلہ منسوخ کرنے میں تیزی سے کام کیا۔ بتا دوں اس سے میرا دل ٹوٹا ہے، لیکن میرا حوصلہ نہیں ۔
      Published by:Imtiyaz Saqibe
      First published: