وزیر داخلہ امت شاہ کا جموں و کشمیر کا دورہ ، ملی ٹینٹسی اور ٹیرر فنڈنگ کو لے کر دی یہ سخت ہدایت

مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے ریاست کی مجموعی سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لینے کے دوران اعلان کیا کہ وادی میں ملی ٹینسی اور ملی ٹینوں کے خلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی اپنائی جائے گی اور ٹیرر فنڈنگ کے خلاف کارروائی جاری رکھی جائے گی۔

Jun 27, 2019 05:10 PM IST | Updated on: Jun 27, 2019 05:10 PM IST
وزیر داخلہ امت شاہ کا جموں و کشمیر کا دورہ ، ملی ٹینٹسی اور ٹیرر فنڈنگ کو لے کر دی یہ سخت ہدایت

وزیر داخلہ امت شاہ: فائل فوٹو۔

مرکزی وزیر داخلہ امت شاہ نے جموں و کشمیر کے دو روزہ دورے کے آخری دن جمعرات کو سری نگر میں ریاست کی مجموعی سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لینے کے دوران اعلان کیا کہ وادی میں ملی ٹینسی اور ملی ٹینوں کے خلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی اپنائی جائے گی اور ٹیرر فنڈنگ کے خلاف کارروائی جاری رکھی جائے گی۔ انہوں نے جموں وکشمیر پولیس کے ملی ٹینسی کے انسداد میں کردار کی سراہنا کرتے ہوئے ہدایت جاری کی کہ ملی ٹینوں کا مقابلہ کرنے کے دوران شہید ہونے والے پولیس اہلکاروں و افسران کی برسیاں اُن کے آبائی قصبوں یا دیہات میں منائی جانی چاہیے۔ نیز اہم عوامی مقامات کو مہلوک پولیس اہلکاروں و افسران کے ساتھ منسوب کیا جانا چاہیے۔

یہ تفصیلات جمعرات کو یہاں اسپیشل سکریٹری برائے اندرونی سلامتی اے پی مہیشوری نے نامہ نگاروں کو پریس بریفنگ میں دی۔ اس موقع پر ریاستی چیف سکریٹری بی وی آر سبھرامینم، وزارت داخلہ میں ایڈیشنل سکریٹری برائے جموں وکشمیر گنیش کمار اور دیگر سینئر افسران بھی موجود تھے۔ اے پی مہیشوری نے کہا کہ امت شاہ نے جمعرات کی صبح ریاست کی مجموعی سیکورٹی صورتحال کا جائزہ لیا۔ اجلاس میں کہا گیا کہ ملی ٹینسی اور ملی ٹینوں کے خلاف زیرو ٹالرنس کی پالیسی اپنائی جائے گی۔ ٹیرر فنڈنگ کے خلاف کارروائی جاری رکھی جائے گی۔ قانون کی حکمرانی ہر قیمت پر نافذ ہونی چاہیے'۔

Loading...

انہوں نے کہا کہ مرکزی وزیر داخلہ نے انسداد ملی ٹینسی کی کارروائیوں میں جموں وکشمیر پولیس کے کردار کی سراہنا کی۔ نیز ہدایت جاری کی کہ  شہید پولیس اہلکاروں کی برسیاں اُن کے اپنے آبائی قصبوں اور دیہات میں منائی جانی چاہیے۔ اہم جگہیں شہید پولیس اہلکاروں سے منسوب کی جانی چاہیے ۔ چیف سکریٹری بی وی آر سبھرامنیم نے کہا کہ امت شاہ کی توجہ تین معاملات بشمول مرکزی اسکیموں کے ریاست میں صحیح نفاذ، امرناتھ یاترا اور سیکورٹی اداروں کی کارکردگی پر مرکوز رہی۔

سرکاری ذرائع نے بتایا کہ وزیر داخلہ امت شاہ کی جمعرات کو گجر بکروال طبقے اور سرپنچوں کے وفود بھی ملاقات ہوئی۔ انہوں نے بتایا کہ گجر بکر وال طبقے کا ایک وفد کی امت شاہ سے ملاقات  ہوئی اور وفد نے انہیں اپنی روایتی پگڑی پہنائی۔  انہوں نے بتایا کہ اس کے علاوہ وزیر داخلہ سرپنچوں کے ایک وفد سے بھی ملاقات کی اور انہوں نے حالیہ مہینوں کے دوران ملی ٹینٹوں کے ہاتھوں مارے گئے بی جے پی کے کارکنوں کے اہل خانہ میں چیکس بھی تقسیم کیں۔

قابل ذکر ہے کہ وزیر داخلہ نے بدھ کے روز اپنے دورے کے پہلے دن شہرہ آفاق جھیل ڈل کے کنارے پر واقع شیر کشمیر انٹرنیشنل کنونشن سنٹر میں دو اعلیٰ سطحی اجلاسوں میں یکم جولائی سے شروع ہونے والی سالانہ امرناتھ یاترا کے سلسلے میں کئے گئے انتظامات اور جاری ترقیاتی سرگرمیوں کا جائزہ لیا۔ یہ امت شاہ کا مرکزی وزیر داخلہ کے عہدے کا چارج سنبھالنے کے بعد پہلا دورہ کشمیر تھا۔

Loading...