جموں و کشمیر : گاندربل کا لاپتہ نوجوان ہتھیاروں کے ساتھ گرفتار، دہشت گردی کی صف میں شامل ہونے کا تھا ارادہ

جموں کشمیر پولیس نے گذشتہ دنوں وسطی کشمیر کے ضلع گاندربل کے کنگن علاقے کے لاپتہ ہوئے ایک نوجوان کو ہندوارہ میں ہتھیار سمیت گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔

May 03, 2019 03:34 PM IST | Updated on: May 03, 2019 03:34 PM IST
جموں و کشمیر : گاندربل کا لاپتہ نوجوان ہتھیاروں کے ساتھ گرفتار، دہشت گردی کی صف میں شامل ہونے کا تھا ارادہ

علامتی تصویر

جموں کشمیر پولیس نے گذشتہ دنوں وسطی کشمیر کے ضلع گاندربل کے کنگن علاقے کے لاپتہ ہوئے ایک نوجوان کو ہندوارہ میں ہتھیار سمیت گرفتار کرنے کا دعویٰ کیا ہے۔بتادیں کہ کنگن کا شفاعت احمد ملک ولد محمد یوسف ملک نامی نوجوان 28 اپریل سے لاپتہ تھا۔

ایک پولیس ترجمان نے بتایا کہ ایک مصدقہ اطلاع ملنے پر ہندوارہ پولیس اور سیکورٹی فورسز نے جمعہ کے روز چوگل چیک پوسٹ پر ایک نوجوان کو روک کر اس کو حراست میں لیا اور اس کی تحویل سے کچھ قابل اعتراض مواد کے علاوہ ہتھیار بھی ضبط کئے۔گرفتار شدہ نوجوان کی شناخت شفاعت احمد ملک ولد محمد یوسف ملک ساکن تھونی کنگن کے بطور ہوئی ہے۔

انہوں نے بتایا کہ ملک کو ایک دہشت گرد تنظیم نے ہتھیار دیے تھے اوروہ حزب المجاہدین نامی دہشت گرد تنظیم میں شمولیت اختیار کرنے کے لئے محو سفر تھا۔ترجمان نے کہا کہ اس طرح ملک کو ایک دہشت گرد تنظیم میں شمولیت اختیار کرنے سے روکا گیا۔انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں پولیس اسٹیشن ہندوارہ میں ایک کیس درج کرکے تحقیقات شروع کی گئی ہیں۔

بتادیں کہ گھریلو ذرائع کے مطابق شفاعت احمد ملک 28 اپریل کو طبی جانچ کے لئے گھر سے صدر ہسپتال سری نگر روانہ ہوا تھا لیکن واپس نہیں لوٹا تھا۔گھر والوں کے مطابق شفاعت سری نگر میں ایک فٹ ویئر دکان پر سیلز مین کی حیثیت سے کام کرتا تھا جو اس نے حال ہی میں چھوڑی تھی اور اب وہ گھریلو کام کاج میں ہی مصروف رہتا تھا۔

Loading...

Loading...