جموں و کشمیر سے ماسٹر مائنڈ کو پولیس نے کیا گرفتار ، شرپسندوں کو اکٹھا کرکے کرواتا تھا حملہ

جموں و کشمیر پولیس نے سری نگر کے باہری علاقہ سورا میں اگست میں ہوئے پرتشدد مظاہرہ کے ماسٹر مائنڈ حیات احمد بھٹ کو بدھ کو گرفتار کرلیا ہے ۔

Oct 16, 2019 07:30 PM IST | Updated on: Oct 16, 2019 07:30 PM IST
جموں و کشمیر سے ماسٹر مائنڈ کو پولیس نے کیا گرفتار ، شرپسندوں کو اکٹھا کرکے کرواتا تھا حملہ

جموں و کشمیر سے ماسٹر مائنڈ کو پولیس نے کیا گرفتار، شرپسندوں کو اکٹھا کرکے کرواتا تھا حملہ

جموں و کشمیر پولیس نے سری نگر کے باہری علاقہ سورا میں اگست میں ہوئے پرتشدد مظاہرہ کے ماسٹر مائنڈ حیات احمد بھٹ کو بدھ کو گرفتار کرلیا ہے ۔ جموں و کشمیر کو خصوصی درجہ دینے والے آرٹیکل 370 کو ختم کرنے کے مرکزی حکومت کے پانچ اگست کے فیصلہ کے کچھ وقت بعد یہ واقعہ پیش آیا تھا ۔

پولیس نے بتایا کہ انچر علاقہ کے پولیس سب انسپکٹر کی قیادت میں ایک ٹیم نے بھٹ کو گرفتار کرنے کیلئے شہر کے باہری علاقہ میں چھاپہ ماری کی ۔ پولیس نے اس گرفتاری کو ایک اہم واقعہ قرار دیا ۔ حیات احمد بھٹ کو گرفتار کرنے کے بعد اس سے پوچھ گچھ کی گئی ۔ پانچ اگست کے بعد علاقہ میں پرتشدد واقعات میں مبینہ طور پر اس کا ہاتھ تھا ۔

Loading...

پولیس کے مطابق سری نگر – لیہہ ہائی وے پر واقع جناب صاحب سورا کے آس پاس شرپسندوں کو اکٹھا کرنے میں بھٹ کا ہاتھ رہا تھا ۔ ماضی میں مسلم لیگ سے وابستہ رہ چکے بھٹ پر پبلک سیفٹی ایکٹ کے تحت بھی معاملہ درج کیا جاچکا ہے ۔ لا اینڈ آرڈر میں خلل ڈالنے کو لے کر اس کے خلاف 16 معاملات درج کئے گئے تھے ۔ تخریبی سرگرمیوں میں ملوث ہونے کی وجہ سے پولیس نے اس سال بھٹ کے خلاف سورا پولیس تھانہ میں نئے معاملات درج کئے تھے۔

ادھر گزشتہ تین دنوں میں کشمیر میں دہشت گردوں نے دو لوگوں کا قتل کردیا ہے ۔ دو دن پہلے کشمیر میں دہشت گردوں نے ایک ٹرک ڈرائیور کا قتل کرکیا تھا وہیں بدھ 16 اکتوبر کو دہشت گردوں نے پلوامہ میں ایک مزدور کا قتل کردیا ۔ یہ مزدور چھتیس گڑھ کا رہنے والا تھا ۔

Loading...