உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    کشمیر زون کی پولیس نےکہا- سید علی شاہ گیلانی کے لیٹر ہیڈ پر جاری پریس نوٹ 'جعلی'

    کشمیر کے علیٰحدگی پسند لیڈر سید علی شاہ گیلانی کے لیٹر ہیڈ پر جاری پریس نوٹ 'جعلی' ہے: کشمیر زون پولیس

    کشمیر کے علیٰحدگی پسند لیڈر سید علی شاہ گیلانی کے لیٹر ہیڈ پر جاری پریس نوٹ 'جعلی' ہے: کشمیر زون پولیس

    کشمیر زون پولیس نے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے بزرگ علیحدگی پسند رہنما سید علی گیلانی کے ایک مبینہ پریس نوٹ کو جعلی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ در اصل پاکستان سے جاری کیا گیا ہے۔ وائرل 'جعلی' پریس نوٹ میں رہنما نے جموں و کشمیر میں 8 اور 13 جولائی کو مکمل ہڑتال کی کال دی ہے۔

    • UNI
    • Last Updated :
    • Share this:
      سری نگر: کشمیر زون پولیس نے سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والے بزرگ علیحدگی پسند رہنما سید علی گیلانی کے ایک مبینہ پریس نوٹ کو جعلی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ یہ در اصل پاکستان سے جاری کیا گیا ہے۔ وائرل 'جعلی' پریس نوٹ میں  رہنما نے جموں و کشمیر میں 8 اور 13 جولائی کو مکمل ہڑتال کی کال دی ہے۔ 8 جولائی کو حزب المجاہدین کے کمانڈر برہان وانی کی برسی ہے جبکہ 13 جولائی کو یوم شہدا کے بطور منایا جاتا ہے۔
      سید علی گیلانی نے جب گذشتہ ہفتے کل جماعتی حریت کانفرنس سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا تھا تو اس کے متعلق پریس نوٹ بھی اسی طرح کے لیٹر ہیڈ پرجاری کیا گیا تھا۔ کشمیر پولیس زون نے اپنے ایک ٹویٹ میں سید علی گیلانی کے لیٹر ہیڈ پر جاری اس پریس نوٹ کو اپ لوڈ کرتے ہوئے کہا ہے: 'سید علی شاہ گیلانی کے فیملی ذرائع کے مطابق یہ خط جعلی ہے اور ان کی طرف سے جاری نہیں ہوا ہے۔ یہ پاکستان سے شائع ہوا ہے۔ پولیس اس خط کو تشدد بھڑکانے اور امن و قانون میں رخنہ ڈالنے کے لئے سوشل میڈیا پر تشہیر دینے والوں کے خلاف کارروائی کررہی ہے'۔
      سید علی گیلانی سے منسوب اس لیٹر ہیڈ پر جاری پریس ریلیز میں لوگوں سے کہا گیا ہے کہ وہ 8 جولائی کو 'شہدا کے اہل خانہ کے ساتھ اظہار یکجہتی کے بطور منائیں'۔ پریس ریلیز میں کہا گیا ہے کہ قائد (سید علی گیلانی) نے 13 جولائی کے شہدا اور برہان وانی اور اس کے ساتھیوں کو شاندار خراج عقیدت پیش کرتے ہوئے کہا ہے کہ بھارتی فوجی قبضے کے خلاف لوگوں کی جد وجہد در اصل 13 جولائی کے شہدا کی قربانیوں کا ہی نتیجہ ہے اور برہان وانی کی زندگی، جدوجہد آزادی اور قربانی ہمارے لئے حوصلے اور جذبے کا روشن مینار ہیں۔
      Published by:Nisar Ahmad
      First published: