حراست کےبعد کل پہلی بارمحبوبہ مفتی سےملےگا پی ڈی پی کا وفد، جموں وکشمیرحکومت کی طرف سے ملی اجازت

مرکزی حکومت کے ذریعہ 5 اگست کوجموں وکشمیرسےدفعہ 370 کے بیشتر التزام ختم کئے جانےکےبعد سے ہی لیڈران نظربند ہیں۔

Oct 06, 2019 07:33 PM IST | Updated on: Oct 06, 2019 07:34 PM IST
حراست کےبعد کل پہلی بارمحبوبہ مفتی سےملےگا پی ڈی پی کا وفد، جموں وکشمیرحکومت کی طرف سے ملی اجازت

جموں وکشمیر میں 500 سے زیادہ لیڈران اورسیاسی کارکنان نظربند کئے گئے ہیں۔

سری نگر: جموں وکشمیرکی سابق وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی سے پیرکوپیپلزڈیموکریٹک پارٹی (پی ڈی پی) کے10 لیڈروں کا وفد ملےگا۔ گورنرکی طرف سے یہ حکم اتوارکوجاری کیا گیا ہے۔ اس سے پہلےاتوارکوفاروق عبداللہ اورعمرعبداللہ سے پارٹی لیڈروں نے ملاقات کی۔ واضح رہے کہ یہ لیڈران پانچ اگست کو راجیہ سبھا میں جموں وکشمیرسے دفعہ 370 اوردفعہ 35 اے ہٹائے جانےکے پہلے سے ہی حراست میں ہیں۔ ریاست کے سابق وزیراعلیٰ عمر عبداللہ بھی حراست میں ہیں۔ گزشتہ دنوں فاروق عبداللہ سے متعلق ایک سماعت کےدوران سپریم کورٹ میں مرکزی حکومت نے اطلاع دی تھی کہ فاروق عبداللہ کوعوامی تحفظ ایکٹ (پی ایس اے) کے تحت گرفتارکیا گیا ہے۔

گورنرکے مشیرنے دیا یہ بیان

Loading...

اس سےقبل جموں وکشمیرانتظامیہ نے جمعرات کویہ اطلاع دی کہ کشمیرمیں نظربند کئے گئےسبھی سیاسی لیڈروں کےمناسب تجزیہ کے بعد انہیں مرحلہ وارطریقہ سے رہا کیا جائے گا۔ جموں میں لیڈروں کی رہائی کے بعد نظربند کشمیری لیڈروں کی رہائی کے متعلق سوال کرنے پرگورنرکے مشیرفاروق خان نے کہا کہ 'اعتماد کریں، ہرایک شخص کے مناسب جائزہ اورتجزیہ کے بعد انہیں ایک ایک کرکے رہا کیا جائے گا'۔

غیربی جے پی جماعتوں کا دعویٰ

جموں میں غیربی جے پی جماعتوں نے بدھ کو دعویٰ کیا کہ انتظامیہ نے ان پرگزشتہ تقریباً دو ماہ سے عائد پابندی کو ہٹالی ہے۔ جموں ڈویژن کے کمشنر سنجیو ورما نے بتایا کہ ان لیڈروں کو کبھی بھی حراست میں نہیں رکھا گیا تھا اوروہ سیاسی تقاریب میں شرکت کرنےکے لئے آزاد تھے۔ انہوں نے کہا کہ 'ہم نے ان پرکبھی کوئی روک نہیں لگائی... انہوں نے خود سے اپنے اوپرروک لگائی تھی'۔ فاروق خان نے اس سے بھی انکارکیا تھا کہ خصوصی درجہ ختم کئے جانے کے بعد جموں وکشمیرمیں دہشت گردی میں اضافہ ہوا ہے۔ وہیں لیڈروں کی رہائی سے متعلق سوال پرمرکزی مرکزی جتیندرسنگھ نے کہا تھا کہ سبھی کو 18 ماہ سے پہلے رہا کردیا جائے گا۔

Loading...