ہوم » نیوز » وسطی ہندوستان

جھارکھنڈ اسمبلی انتخابات : تیسرے مرحلے میں 62.53 فیصد ووٹنگ ، 309 امیدواروں کی قسمت ای وی ایم میں بند

جھارکھنڈ میں تیسرے مرحلے کی 17 اسمبلی سیٹ کے لئے ہوئی ووٹنگ میں 62.35 فیصد ووٹروں نے اپنے حق رائے دہی کا استعمال کیا ۔

  • UNI
  • Last Updated: Dec 12, 2019 11:04 PM IST
  • Share this:
  • author image
    NEWS18-Urdu
جھارکھنڈ اسمبلی انتخابات : تیسرے مرحلے میں 62.53 فیصد ووٹنگ ، 309 امیدواروں کی قسمت ای وی ایم میں بند
جھارکھنڈ اسمبلی انتخابات : تیسرے مرحلے میں 62.53 فیصد ووٹنگ

جھارکھنڈ میں تیسرے مرحلے کی 17 اسمبلی سیٹ کے لئے ہوئی ووٹنگ میں 62.35 فیصد ووٹروں نے اپنے حق رائے دہی کا استعمال کرکے شہری ترقی کے وزیر سی پی سنگھ ، جھارکھنڈ وکاس مورچہ کے صدر بابو لال مرانڈی اور سابق نائب وزیر اعلی اور آل جھارکھنڈ اسٹوڈنٹس یونین کے سربراہ سدیش مہتو سمیت 309 امیدواروں کے انتخابی قسمت کا فیصلہ الیکٹرانک ووٹنگ مشین (ای وی ایم) میں بند کر دیا۔


چیف الیکشن افسر ونے کمار چوبے نے بتایا کہ ریاست کی 17 اسمبلی سیٹ کوڈرما، بركٹھا، برهي، بڑكاگاوں، رام گڑھ، مانڈو، ہزاری باغ، سمريا (محفوظ)، دھنوار، گوميا، بیرمو، ایچاگڑھ، سلی، كھجري (م)، رانچی ، هٹيا اور کانکے (م) کے لئے سخت سیکورٹی انتظامات کے درمیان پرامن طریقے سے پولنگ شام پانچ بجے ختم ہوئی۔ اس دوران تقریبا 62.35 فیصد ووٹروں نے اپنےحق رائے دہی کا استعمال کیا۔


ووٹنگ ختم ہونے پر سلی سیٹ پر ووٹنگ کا فیصد سب سے زیادہ 76.98 فیصد رہا وہیں سب سے کم 49.1 فیصد پولنگ رانچی میں ہوئی ۔ علاوہ ازیں کوڈرما میں 58.2 فیصد، بركٹھا میں 65.19 فیصد، برهي میں 63.40 فیصد، بڑكاگاو میں 64.53 فیصد، رام گڑھ میں 70.5 فیصد، مانڈو میں 62.41 فیصد، ہزاری باغ میں 57.18 فیصد، سمريا (م) میں 62 فیصد، دھنوار میں 61.68 فیصد، گوميا میں 67.18 فیصد، بیرمو میں 61.13 فیصد،ا يچاگڑھ میں 73.11 فیصد، كھجري میں 64.28 فیصد، هٹيا میں 53.63 فیصد اور کانکے (م) میں 62.83 فیصد ووٹ پڑے۔

First published: Dec 12, 2019 11:02 PM IST