ہوم » نیوز » وطن نامہ

کورونا کی دہشت کے درمیان اچھی خبر! ریلائنس نے کووڈ 19 سے لڑنے کیلئے تیار کیا چیٹ باٹ ، ملے گا ہر سوال کا جواب

وزارت صحت سے تصدیق شدہ اعداد و شمار سے لیس یہ چیٹ باٹ نوول کورونا وائرس کے سلسلے میں اکثر پوچھے جانے والے سوالات کا صحیح جواب دے سکتاہے ۔

  • Share this:
کورونا کی دہشت کے درمیان اچھی خبر! ریلائنس  نے کووڈ 19 سے لڑنے کیلئے تیار کیا چیٹ باٹ ، ملے گا ہر سوال کا جواب
کورونا کی دہشت کے درمیان اچھی خبر! ریلائنس نے کووڈ 19 سے لڑنے کیلئے تیار کیا چیٹ باٹ ، ملے گا ہر سوال کا جواب

افواہوں  سے بچنے اور کورونا  سے جڑی صحیح معلومات لوگوں تک پہنچانے کیلئے حکومت ہند نے وہاٹس ایپ کے ساتھ  مل کر ایک چیٹ باٹ لانچ کیا ہے۔ چیٹ باٹ کو ’MyGov Corona Helpdesk‘ کہا جارہا ہے ۔ حکومت ہند کے اس مشن میں ریلائنس کی معاون کمپنی  Jio Haptik Technologies Limited  نے تکنیکی تعاون دیا ہے ۔ جیو ہیپٹک نے اس چیٹ باٹ کو  حکومت ہند کی ضرورتوں کو سمجھتے ہوئے بالکل مفت میں تیار کیا ہے۔


وزیر اعظم نریندرمودی نے ایک ٹویٹ کے ذریعہ اس چیٹ باٹ کو ملک کے عوام کے سامنے رکھا۔ اپنے ٹویٹ میں پی ایم مودی نے کہا کہ’’ صحیح اور  سٹیک جانکاری ہی بے وجہ کی پینک کو روک سکتی ہے۔ حکومت ہند یہ یقینی بنائے گی کہ سبھی عوام کو کورونا وائرس سے متعلق صحیح جانکاری  ملے۔‘




Jio Haptik کے ذریعہ  تیار اس  چیٹ باٹ کا استعمال ایک دم آسان ہے ۔ اگر آپ وہاٹس ایپ استعمال کرتے ہیں تو آپ اس سے جڑ سکتے ہیں۔ اس  کیلئے  ایک خصوص وہاٹس ایپ نمبر +919013151515 جاری کیا گیا ہے ۔ اس نمبر پر ایک وہاٹس ایپ میسج بھیج کر آپ سیدھے چیٹ باٹ  سے جڑ جائیں گے۔ یہ چیٹ باٹ کورونا سے لڑائی میں بڑا ہتھیار ثابت ہوگا کیونکہ ملک میں 40 کروڑ  سے زیادہ لوگ وہاٹس ایپ کا استعمال کرتے ہیں۔  ایسے  سبھی لوگوں کے پاس اب کورونا وائرس سے متعلق تازہ ترین  اور سٹیک معلومات دستیاب ہوگی۔ دیہی علاقوں میں 6 کروڑ سے زیادہ جیو فون  گراہکوں کو بھی وہاٹس ایپ کی سہولت دستیاب ہے۔

 وزارت صحت سے تصدیق شدہ اعداد و شمار سے لیس یہ چیٹ باٹ نوول کورونا وائرس کے سلسلے میں اکثر پوچھے جانے والے سوالات کا صحیح جواب دے سکتاہے ۔ اس میں ضروری احتیاطی اقدام ، علامت، حقائق کی معلومات ، ہیلپ لائن نمبر ،علاقہ میں متاثرہ کیس ، سفر سے متعلق سرکاری صلاح اور معلوماتی ویڈیوز شامل ہیں ۔ چیٹ باٹ ریئل ٹائم میں اپ ڈیٹ ہوتا ہے۔ ریئل ٹائم اپ ڈیٹ سے جھوٹی جانکاریوں کے پھیلاؤ پر روک لگے  گی ، جس سے بڑے پیمانے پر افرا تفری پیدا ہونے کے خدشہ کو روکا جاسکتا ہے۔

First published: Mar 21, 2020 07:07 PM IST