آرٹیکل 370 کی منسوخی کے بعد مودی حکومت کا کشمیر کے لئے یہ بڑا پلان: جانیں یہاں

جموں۔کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹائے جانے اورریاست کومرکز کے زیر انتظام دو خطوں میں تقسیم کئے جانے سے مودی حکومت مسلسل وادی میں امن قائم کرنے کی کوشش کر رہی ہے لیکن اب مودی حکومت یہاں حالات نارمل کرنے کیلئے ایک بڑے پلان کو نافذ کرنے والی ہے۔

Aug 21, 2019 09:59 AM IST | Updated on: Aug 21, 2019 10:00 AM IST
آرٹیکل 370 کی منسوخی کے بعد مودی حکومت کا کشمیر کے لئے یہ بڑا پلان: جانیں یہاں

وزیر اعظم نریندر مودی: فائل فوٹو

مودی حکومت کی کوشش ہے کہ جموں۔کشمیر میں امن وامان قائم ہو۔ اس کیلئے مرکز مسلسل کوشش کررہا ہے لیکن اب تیزی سے وادی کشمیر میں امن قائم کرنے کو لیکر حکومت بڑا پلان تیار کر رہی ہے۔

جموں۔کشمیر سے آرٹیکل 370 ہٹائے جانے اورریاست کومرکز کے زیر انتظام دو خطوں میں تقسیم کئے جانے سے مودی حکومت مسلسل وادی میں امن قائم کرنے کی کوشش کر رہی ہے لیکن اب مودی حکومت یہاں حالات نارمل کرنے کیلئے ایک بڑے پلان کو نافذ کرنے والی ہے۔

اتنا ہی نہیں جتنی توجہ اس مورچے پر لوگوں کو جانکاری دینے پر دی جائے گی اتنی ہی ان منصوبوں کے تیز اور کامیاب نفاذ پر بھی دھیان دیا جانا ہے۔ اس کیلئے کشمیر انتظامیہ کے افسران اور وہاں مقرر آئی اے ایس افسر ترقی یافتہ کاموں کا جائزہ لیں گے اور کوشش کی جائے گی کہ ان پروجیکٹس کو تیزی سے مکمل کیا جاسکے۔

اس کے علاوہ یہاں پر انڈسٹری کو بڑھاوا دینے کیلئے بھی 12 سے 14 اکتوبر تک سری نگر میں انٹرنیٹ سمٹ کا انعقاد ہونا ہے۔ اس میں بڑے۔بڑے صنعتکاروں کو کشمیر میں سرمایہ کاری کیلئے مدعو کیا گیا ہے۔

Loading...

کشمیر کے گاؤں کی ترقی کیلئے مختص کئے گئے 3700 کروڑ روپئے

جموں۔کشمیر کے گاؤں کی ترقی بھی اس پلان میں شامل ہے۔ مرکز کے ساتھ مل کر جموں۔کشمیر کا رولر ڈیولپمینٹ ڈپارٹمنٹ اس کے تحت چلائے جارہے منصوبوں کو پورا کرےگا۔جموں۔کشمیر میں گاؤں کی ترقی کیلئے مرکزی حکومت نے 3700 کروڑ روپئے مختص کئے ہیں۔ جسے  مرکز کے زیر انتظام ریاست کے 40 ہزار سر پنچ گاؤں کی ترقی میں خرچ کریں گے۔

اس کے علاوہ مدھو مکھی پالن کرنے والے کسانوں کیلئے بھی کئی پلان بنائے جارہے  ہیں۔ مدر ڈیری اور امول کے ساتھ بات کرکے یہاں دودھ کی پیداوار کو بھی بڑھاوادینے کا پلان ہے۔ ابھی کشمیرمیں  دودھ پنجاب اور ہریانہ سے منگانا پڑتا ہے۔ اب اس کی پیداوار کیلئے کشمیر کے گاؤں میں ڈیری اور مویشی پالن کیلئے پیسے دئیے جانے کا پلان بھی ہے۔

یہ بھی پڑھیں: جموں۔کشمیر: آرٹیکل370 کی منسوخی کے بعد وادی میں پہلا انکاؤنٹر، پولیس آفیسر شہید

Loading...