آرٹیکل 370 کی منسوخی کے خلاف احتجاج ، فاروق عبداللہ کی بیٹی اوربہن حراست میں

سری نگر میں منگل کو خواتین کا ایک گروپ ویمنس آف کشمیر کے تلے مخالف مظاہرہ کر رہاتھا۔ اس میں مخالفت کررہی خواتین آرٹیکل 370 ہٹانے کی مخالفت کر رہی تھیں۔ ان کی اسی مخالفت ک بعد انہیں حراست میں لے لیا گیا ہے۔

Oct 15, 2019 02:44 PM IST | Updated on: Oct 15, 2019 09:10 PM IST
آرٹیکل 370 کی منسوخی کے خلاف احتجاج ، فاروق عبداللہ کی بیٹی اوربہن حراست میں

جموں اور کشمیر کے سابق وزیراعلیٰ اور نیشنل کانفرنس کے سربراہ فاروق عبداللہ کی بیٹی صفیہ اور بہن ثریا کو پولیس نے حراست میں لے لیا ہے۔ یہ دونوں سری نگر میں جموں کشمیر سے آرٹیکل 370 کو ہٹانے کی مخالفت کر رہی تھیں ۔ 5 اگست کو جب مرکزی حکومت نے جموں کشمیر سے آرٹیکل 370 کو ہٹا یا تھا ، تب سے ہی فاروق عبداللہ حراست میں ہیں ۔ انہیں ان کے ہی گھر میں نظر بند رکھا گیا ہے۔

فاروق عبداللہ کے ساتھ ان کے بیٹے عمرعبداللہ اور جموں کشمیر کی سابق وزیراعلیٰ محبوبہ مفتی بھی نظر بند ہیں ۔ جموں۔کشمیر میں پیر سے حکومت نے پوسٹ پیڈ موبائل خدمات شروع کردی ہیں ۔ حالانکہ ایس ایم ایس خدمات کو ایک دن بعد ہی بند کردیاگیا ۔ فاروق عبداللہ کی چار اولاد ہیں ۔ ان میں بیٹے عمر عبداللہ کے علاوہ صفیہ عبداللہ ، حنا عبداللہ اور سارہ تین بیٹیا ہیں۔ سارہ کی شادی کانگریس لیڈر اور راجستھان کے نائب وزیر اعلی سچن پائلٹ سے ہوئی ہے۔

سری نگر میں منگل کو خواتین کا ایک گروپ ویمنس آف کشمیر کے بینر تلے مظاہرہ کر رہاتھا۔ احتجاجی خواتین آرٹیکل 370 ہٹانے کی مخالفت کر رہی تھیں ۔ اسی احتجاج کے بعد انہیں حراست میں لیا گیا ۔

Loading...