کملیش تیواری قتل معاملہ میں ڈلیوری بوائے گرفتار، زومیٹو نے کہا۔ مجرموں کو ملنی چاہئے سخت سزا

گجرات پولیس کے اے ٹی ایس کے ذریعہ راجستھان سے متصل ریاست کی سرحد کے پاس ایک مقام سے دو مبینہ قاتل اشفاق حسین اور معین الدین پٹھان کی گرفتاری کے بعد سوشل میڈیا پر زومیٹو کو کافی ٹرول کیا گیا۔

Oct 24, 2019 10:22 AM IST | Updated on: Oct 24, 2019 10:23 AM IST
کملیش تیواری قتل معاملہ میں ڈلیوری بوائے گرفتار، زومیٹو نے کہا۔ مجرموں کو ملنی چاہئے سخت سزا

کملیش تیواری قتل معاملہ: ڈلیوری بوائے گرفتار، زومیٹو نے کہا۔ مجرموں کو ملے سخت سزا

نئی دہلی۔ ہندووادی لیڈر کملیش تیواری قتل معاملہ میں اپنے ایک ڈلیوری بوائے کی گرفتاری کے بعد آن لائن فوڈ ڈلیوری کمپنی زومیٹو نے بدھ کو کہا کہ قانون توڑنے والوں کے لئے اس کی کمپنی میں کوئی بھی جگہ نہیں ہے۔ مجرم کے خلاف تیزی سے کارروائی ہونی چاہئے۔ گجرات پولیس کے اے ٹی ایس کے ذریعہ راجستھان سے متصل ریاست کی سرحد کے پاس ایک مقام سے دو مبینہ قاتل اشفاق حسین اور معین الدین پٹھان کی گرفتاری کے بعد سوشل میڈیا پر زومیٹو کو کافی ٹرول کیا گیا۔

سوشل میڈیا یوزرس نے ہندو سماج پارٹی کے لیڈر کے قتل معاملہ میں زومیٹو کے ایک ملازم کے رول کو لے کر اس پر سوال اٹھائے۔ کچھ ماہ پہلے بھی زومیٹو تب چرچا میں آیا تھا جب ایک کسٹمر نے زومیٹو کے ڈلیوری بوائے سے صرف اس لئے کھانا نہیں لیا تھا کیونکہ وہ مسلمان تھا۔ اس پر زومیٹو نے کھانا لینے سے انکار کرنے والے کسٹمر کو کرارا جواب دیا تھا۔

Loading...

ردعمل کے لئے پوچھے جانے پر زومیٹو کے ایک ترجمان نے کہا کہ ایک آزاد ایجنسی کے ذریعہ پٹھان کا آدھار کارڈ، ڈرائیونگ لائسنس، پین کارڈ اور ماضی کے ریکارڈ کے ساتھ ساتھ اس کے بیک گراؤنڈ کی جانچ کے بعد اسے سورت میں نوکری پر رکھا گیا تھا۔ اس نے آخری بار 6 اکتوبر کو کھانے کی ڈلیوری کی تھی۔ اس کے بعد وہ خود اپنی مرضی سے ہمارے پلیٹ فارم پر کام سے ہٹ گیا تھا۔

جلد از جلد مجرم کو سزا ملے

انہوں نے کہا کہ زومیٹو قانون پر عمل پیرا ایک ذمہ دار کمپنی ہے۔ ہم چھان بین میں پوری مدد کریں گے۔ زومیٹو نے کہا کہ قانون توڑنے والے کسی بھی شخص کے تئیں ہماری ہمدردی نہیں ہے۔ ہم چاہیں گے کہ قانون کے تحت مجرم کو جلد سے جلد سزا ملے۔

Loading...