உங்கள் மாவட்டத்தைத் தேர்வுசெய்க

    ممبئی:معشوقہ کوسبق سکھانے کے لئےعاشق نے کیایہ شرمناک کام،کاندیولی پولیس نے دوگھنٹوں میں معاملہ کوکیاحل

    پولیس کے مطابق اغواء کی گئی لڑکی ، کی ماں کی 1 سال پہلے گوریگاؤں میں ایک شادی کی تقریب کے دوران کیٹرنگ کا کام کرتے ہوئے ہوئی تھی۔جس دیکھتے ہی دیکھتے دوستی اور پھر محبت میں تبدیل ہوگئی ہے۔

    پولیس کے مطابق اغواء کی گئی لڑکی ، کی ماں کی 1 سال پہلے گوریگاؤں میں ایک شادی کی تقریب کے دوران کیٹرنگ کا کام کرتے ہوئے ہوئی تھی۔جس دیکھتے ہی دیکھتے دوستی اور پھر محبت میں تبدیل ہوگئی ہے۔

    پولیس کے مطابق اغواء کی گئی لڑکی ، کی ماں کی 1 سال پہلے گوریگاؤں میں ایک شادی کی تقریب کے دوران کیٹرنگ کا کام کرتے ہوئے ہوئی تھی۔جس دیکھتے ہی دیکھتے دوستی اور پھر محبت میں تبدیل ہوگئی ہے۔

    • Share this:
      وسیم انصاری

      ممبئی کاندیولی پولیس نے 7 سالہ معذور بچی کے اغوا کا معاملہ صرف 2 گھنٹوں میں حل کرنے میں کامیابی حاصل کی۔ملزم، اغوا کا شکار لڑکی ، کی ماں کے ساتھ عشق میں مبتلا تھا اور اس کی ماں سے بدلہ لینے کے مقصد سے اغوا کیا تھا۔پولیس نے ملزم کو ایرانی واڑی کے علاقے سے گرفتار کیا ہے۔ پولیس یہ جاننے کی کوشش کر رہی ہے کہ آخر کار اغوا کار نے معذور بچی کو کس مقصد کےتحت اغوا کیاتھا۔

      کاندیولی پولیس اسٹیشن کے سینئر پی آئی باباصاحب سالونکےکے مطابق ، اغوا کار کی شناخت 40 سالہ عبدالمالک ولد شفیق عالم شیخ کی حیثیت سے کی گئی ہے جو 38 سالہ متاثرہ بچی کی والدہ کے ساتھ عشق میں مبتلا تھا۔ پولیس کے مطابق اغواء کی گئی لڑکی ، کی ماں کی 1 سال پہلے گوریگاؤں میں ایک شادی کی تقریب کے دوران کیٹرنگ کا کام کرتے ہوئے ہوئی تھی۔جس دیکھتے ہی دیکھتے دوستی اور پھر محبت میں تبدیل ہوگئی ہے ۔پولیس کے مطابق ، لڑکی کے والد بھی نابینا ہےاور ان کی بیٹی بھی نابیناہے۔ اس کا فائدہ اٹھاتے ہوئے ، اغوا کار بچی کی ماں سے تعلقات قائم کیا کرتا تھا۔

      کاندیولی پولیس اسٹیشن کے سینئر پی آئی باباصاحب سالونکےکے مطابق ، اغوا کار کی شناخت 40 سالہ عبدالمالک ولد شفیق عالم شیخ کی حیثیت سے کی گئی ہے
      کاندیولی پولیس اسٹیشن کے سینئر پی آئی باباصاحب سالونکےکے مطابق ، اغوا کار کی شناخت 40 سالہ عبدالمالک ولد شفیق عالم شیخ کی حیثیت سے کی گئی ہے


      24 فروری کی شام کو جب ملزم عبد الملک اپنی گرل فرینڈ سے ملنے کے لئے ایرانی واڑ ی میں واقع گھر گیا تو دونوں کے درمیان بحث ہوگئی اور بعد میں جمع کر جھگڑا ہوا۔شکایت کنندہ کے مطابق عبد الملک اکثر اس کے ساتھ جھگڑا کرتا تھا۔ اس کا بدلہ لینے کے لئے ،عبد الملک زبردستی اپنی 7 سالہ بچی کو اپنے ساتھ لے گیا ۔جب بچی زیادہ دیر تک واپس نہیں آیا تو متاثرہ لڑکی کی والدہ نے کاندیولی پولیس اسٹیشن میں اغوا کی شکایت درج کروائی۔جہاں کاندیولی پولیس نے سینئر پی آئی باباصاحب سالونکے کی سربراہی قیادت میں پی آئی وجئے کانڈلگونکر کی ٹیم کے ساتھ 2 دیگر ٹیمیں تشکیل دے کر تفتیش شروع کردی۔

      کاندیولی کے تمام علاقوں کی تلاشی لینے کے بعد ، صرف 2 گھنٹوں میں ، ابھیلاگ نگر علاقے سے معذور لڑکی کو ڈھونڈ نکالا گیااور ملزم عبد الملک کو گرفتار کرلیا۔پولیس کی تفتیش میں انکشاف ہوا ہے کہ ملزم ، عبد الملک آسام کا رہنے والا ہے ، 10 سال سے ممبئی میں کیٹرنگ کا کام کر رہا تھا ۔ اس نے قبول کیا ہے کہ معشوقہ کو سبق سکھانے کے لئے بیٹی کو اغوا کرنے کی سازش رچی تھی ۔ پولیس کو شبہ ہے کہ عبد ل نے معذور لڑکی کو فروخت کرنے کی نیت سے اغوا کیا تھا۔پولیس اس معاملے کی مزید تفتیش کر رہی ہے۔
      Published by:Mirzaghani Baig
      First published: