ہوم » نیوز » وطن نامہ

کرناٹک ضمنی انتخابات : اکثرحلقوں میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان راست مقابلہ

اکثرحلقوں میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان راست مقابلہ ہے ۔وہیں کچھ حلقوں میں جے ڈی ایس کوملاکرسہ فریقی مقابلہ ہے۔

  • Share this:
کرناٹک ضمنی انتخابات : اکثرحلقوں میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان راست مقابلہ
کرناٹک ضمنی انتخابات : اکثرحلقوں میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان راست مقابلہ۔(تصویر:نیوز18اردو)۔

کرناٹک کے15 اسمبلی حلقوں میں ضمنی انتخابات کےلئے ووٹنگ جاری ہے۔ یہ ووٹنگ شام 6 بجےتک چلےگی۔ضمنی انتخابات میں جملہ 165امیدوارمیدان میں ہیں۔ اکثرحلقوں میں کانگریس اور بی جے پی کے درمیان راست مقابلہ ہے ۔وہیں کچھ حلقوں میں جے ڈی ایس کوملاکرسہ فریقی مقابلہ ہے۔ بنگلورو کے4 اسمبلی حلقوں میں ووٹنگ ہورہی ہے۔آپ کوبتادیں کہ کانگریس۔جے ڈی ایس ارکان اسمبلی کے استعفی کے بعد یہ چناؤ ہورہاہے۔


 


شیواجی نگر،مہالکشمی لئے آؤٹ، یشونت پور اور کے آرپورم میں انتخابات ہورہےہیں۔ وہیں شمالی کرناٹک کے گوکاک اتھنی، ہیرے کیرور میں ووٹنگ ہورہی ہے۔توشمالی کرناٹک کے رانی بینور،وجئے نگر،کاگ واڈ میں ضمنی انتخابات کےلیےووٹنگ ہورہی ہے۔جبکہ جنوبی کرناٹک کے ہُنسور، ہوسکوٹے ، چکبلاپور، کے آر پیٹ میں انتخابات ہورہے ہیں۔ کرناٹک میں ضمنی انتخابات ریاست میں وزیراعلیٰ بی ایس یدیورپا کی زیرقیادت بی جے پی حکومت کی تقدیر کا فیصلہ کریں گے۔ تاہم ، سیاسی جماعتوں کو ضمنی انتخابات میں پولنگ فیصد میں کمی آنے کا امکان ہے۔ بی جے پی کو ریاست میں اقتدار میں رہنے کے لئے 22 نشستوں والی اسمبلی (جس میں اسپیکر بھی شامل ہے) میں 15 نشستوں میں کم از کم 6نشستیں جیتنے کی ضرورت ہے۔  





یہ ضمنی انتخابات 17 ارکان اسمبلی کو نااہل قراردینے کے بعد خالی اسمبلی حلقوں میں کرائے جارہے ہیں۔ ان ارکان اسمبلی میں کانگریس اور جے ڈی (ایس) کے باغی ارکان شامل تھے۔ ان اراکین اسمبلی کی بغاوت کے سبب ، ایچ ڈی کمارسوامی کی سربراہی میں کانگریس جے ڈی (ایس) حکومت جولائی میں گر گئی اور بی جے پی کے اقتدار میں آنے کی راہ ہموارہوئی تھی۔ بی جے پی کے پاس اس وقت 105 ارکان اسمبلی (ایک آزاد سمیت) ، کانگریس کے 66 اور جے ڈی (ایس) کے 34 ایم ایل اے ہیں۔ بی ایس پی کے پاس ایک رکن اسمبلی بھی ہے۔ اس کے علاوہ ، نامزد ایم ایل اے اور اسپیکر بھی ہیں۔  13 ارکان اسمبلی کو  نااہل قراردیاگیا۔ ارکان نے گذشتہ ماہ سپریم کورٹ سے ضمنی انتخاب لڑنے کی اجازت ملنے کے بعد بی جے پی میں شمولیت اختیار کی تھی۔

 

بی جے پی اور کانگریس نے کیا جیت کا دعویٰ آج ہونے والے ضمنی انتخابات میں 15 نشستوں میں سے 12 سیٹیں کانگریس کے پاس اور تین جے ڈی (ایس) کے پاس ہیں۔ بی جے پی کےلیڈر نے کہا کہ کسی بھی ضمنی انتخاب میں ووٹنگ کا تناسب کم ریکارڈ ہوتاہے۔ کانگریس کے ایک لیڈر نے یہ بھی کہا کہ پارٹی کے داخلی سروے کے مطابق توقع ہے کہ ووٹنگ کی فیصدکمی آئیگی۔لیکن کانگریس کو اس کا فائدہ ہوگا۔ یہ ضمنی انتخابات 21 اکتوبرکو ریاست میں ہونے تھے ، لیکن الیکشن کمیشن نے 5 دسمبر کے لئے ملتوی کردیا۔ دراصل ، سپریم کورٹ نے نااہل ارکان اسمبلی کی درخواستوں پرسماعت کرنے کا فیصلہ کیا تھا۔



First published: Dec 05, 2019 09:42 AM IST
corona virus btn
corona virus btn
Loading