بنگلورو میں سماجی کارکنوں کی منفرد کوشش ، غریب طلبہ کیلئے مفت ٹیوشن کا انتظام

ٹرسٹ کے صدر عنایت اللہ خان کہتے ہیں کہ اب تک 900سے زائد طلبہ نے اس کا فائدہ اٹھایاہے۔ ٹیوشن کلاسز میں تربیت پانے والے کئی طلبہ نے 90 فیصد سے زائد نمبرات سالانہ امتحانات میں حاصل کئے ہیں۔

Mar 15, 2019 07:38 PM IST | Updated on: Mar 15, 2019 07:38 PM IST
بنگلورو میں سماجی کارکنوں کی منفرد کوشش ، غریب طلبہ کیلئے مفت ٹیوشن کا انتظام

بنگلورو میں سماجی کارکنوں کی منفرد کوشش ، غریب طلبہ کیلئے مفت ٹیوشن کا انتظام

مسلمانوں کی تعلیمی بدحالی کو خوشحالی میں بدلنے کی منفرد کوشش بنگلورو میں دیکھنے کومل رہی ہے۔ چند سماجی کارکنوں کی محنت کچھ اس طرح رنگ لارہی ہے کہ کمزور بچے ہونہاراور ذہین بن کرسالانہ امتحانات میں رینک حاصل کر رہے ہیں۔

ایک چھوٹی سی کوشش سماج میں نمایاں تبدیلی لاسکتی ہے۔ یونائٹیڈ کرناٹک ٹرسٹ اس کی ایک مثال بن کرسامنے آیا ہے۔ یہ ادارہ معاشی طور پر غریب، تعلیمی طور پرکمزوراور ڈرآپ آوٹ بچوں کیلئے مفت ٹیوشن کاانتظام کرتا ہے۔ سال 2006سےشروع ہوئی یہ کوشش کئی بچوں کے مستقبل کوسنوارچکی ہے۔ مختلف اسکولوں میں زیرتعلیم ایس ایس ایل سی اور پی یوسی کے طلبہ کو یہ ادارہ روزانہ ٹیوشن کلاس چلاتاہے۔ شام 6بجے رات 8:30بجے تک ٹیوشن کلاسز منعقد کئے جاتے ہیں۔

ٹرسٹ کے صدر عنایت اللہ خان کہتے ہیں کہ اب تک 900سے زائد طلبہ نے اس کا فائدہ اٹھایاہے۔ ٹیوشن کلاسز میں تربیت پانے والے کئی طلبہ نے 90 فیصد سے زائد نمبرات سالانہ امتحانات میں حاصل کئے ہیں۔

یونائٹیڈ کرناٹک ٹرسٹ کی سالانہ تقریب میں مقررین نے اس منفرد تعلیمی خدمت کی ستائش کی۔ روزنامہ پاسبان کے ایڈیٹر عبیداللہ شریف نے طلبہ کو یہ پیغام دیاکہ وہ خوب محنت کریں،آئی اے ایس، آئی پی ایس افسر بن کرملک کی خدمت کریں۔ محنت کرنے والے طلبہ کیلئے کوئی چیز رکاوٹ نہیں بنتی۔

Loading...

تقریب میں مقررین نے کہاکہ تعلیمی ترقی کیلئے ضروری نہیں کہ صرف اسکول اورکالج ہی قائم کئےجائیں ۔بلکہ مفت ٹیوشن، اسکالرشپ، گائڈنس پروگرام منعقد کرتے ہوئے بھی غریب طلبہ کی مدد کی جاسکتی ہے۔ یونائٹیڈ کرناٹک ٹرسٹ کی خدمت اس کی ایک مثال ہے۔

Loading...