ہوم » نیوز » جنوبی ہندوستان

ایم سی اے کی فہرست سے گلبرگہ کا نام خارج ، مرکز کے اقدام پر رکن اسمبلی کنیز فاطمہ سخت برہم

بنگلورو میں کنیزفاطمہ نے کہا کہ گلبرگہ میں اقلیتوں کی کثیر تعداد آباد ہے۔ اقلیتیوں کی ترقی اور فلاح وبہبودی کیلئے مرکزی اور ریاستی حکومتوں کو مزید اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔

  • Share this:
ایم سی اے کی فہرست سے گلبرگہ کا نام خارج ، مرکز کے اقدام پر رکن اسمبلی کنیز فاطمہ سخت برہم
ایم سی اے کی فہرست سے گلبرگہ کا نام خارج ، مرکز کے اقدام پر رکن اسمبلی کنیز فاطمہ سخت برہم

حال ہی میں مرکزی وزارت اقلیتی امور نے کرناٹک کے تاریخ شہر گلبرگہ کو ا یم سی اے کی فہرست سے خارج کردیا ہے ۔ ایم سی اے یعنی مائناریٹیز کنسنٹریٹیڈ ائیریا کی فہرست میں اب گلبرگہ کا نام نہیں ہے ۔ مرکز کے اس اقدام پرگلبرگہ کی رکن اسمبلی کنیز فاطمہ نے سخت برہمی کا اظہار کیاہے ۔ بنگلورو میں کنیزفاطمہ نے کہا کہ گلبرگہ میں اقلیتوں کی کثیر تعداد آباد ہے۔ دیگر طبقوں کے مقابلہ اقلیتیں تعلیمی، سماجی اور معاشی میدان میں کافی پیچھے ہیں ۔ اقلیتیوں کی ترقی اور فلاح وبہبودی کیلئے مرکزی اور ریاستی حکومتوں کو مزید اقدامات کرنے کی ضرورت ہے۔ کنیزفاطمہ نے کہا کہ ایم سی اے کی فہرست سے گلبرگہ کو باہر رکھنا ، گلبرگہ کے عوام کے ساتھ بڑی نا انصافی ہے۔ اس سلسلے میں وزیراعلی بی ایس یدی یورپا کو تحریری طور پر مطالبہ پیش کیا گیا ہے۔


گیارہ فروری کو بنگلورو کے ودھان سودھا میں وزیراعلی یدی یورپا کے ساتھ ہوئی مسلم نمائندوں کی میٹنگ میں گلبرگہ کی ایم ایل اے کنیز فاطمہ نے بھی حصہ لیا ۔ اس میٹنگ میں کنیز فاطمہ نے وزیراعلی کو یاد داشت پیش کی ۔ گلبرگہ شہر کی ترقی اورمسائل کے حل کیلئے کئی مطالبات تحریری طور پرحکومت کے سامنے رکھے گئے۔ واضح رہے کہ آنے والے ریاستی بجٹ کی تیاریوں کے سلسلے میں وزیراعلی نے مسلم نمائندوں کے ساتھ اہم میٹنگ کی تھی۔


ایم سی اے کی فہرست میں گلبرگہ کودوبارہ شامل کرنے کی مانگ کے علاوہ شہر میں حج ہاوس کی تعمیر کیلئے 10 کروڑروپئے فراہم کرنے کا کنیز فاطمہ نے مطالبہ کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ سابق ریاستی وزیر مرحوم قمرالاسلام کی کوشش کے بعد ریاستی حکومت نے گلبرگہ میں حج ہاوس کیلئے پانچ ایکڑاراضی فراہم کی ہے ۔ آنے والے بجٹ میں ریاستی حکومت حج بھون کی تعمیر کیلئے فنڈ مختص کرے ۔ انہوں نے کہا کہ حال ہی میں گلبرگہ میں ائیرپورٹ تعمیر ہوا ہے۔ گلبرگہ سے ہی سفر حج کیلئے راست پروازوں کا سلسلہ شروع ہونا چاہئے ۔ گلبرگہ اور چند دیگر اضلاع کے عازمین حج اب تک حیدرآباد سے سفر حج کیلئے روانہ ہوتے آرہے ہیں۔


حیدرآباد ۔ کرناٹک خطہ کے عازمین حج کی سہولت اور آسانی کیلئے گلبرگہ سے ہی حج کی راست پروازیں شروع کرنےکی ضرورت ہے ۔ اس کیلئے مرکزی اور ریاستی حکومتیں پہل کریں۔ وزیراعلی کو پیش کی گئی یادداشت میں کنیز فاطمہ نے بدائی اسکیم میں توسیع کرنے کی مانگ کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ گلبرگہ ضلع میں بدائی اسکیم کی کئی درخواستیں زیر التوا ہیں۔ حکومت آنے والے بجٹ میں شادی کی اسکیم کیلئے مزید فنڈ فراہم کرے ۔ واضح رہے کہ بدائی اسکیم کے تحت غریب لڑکی کی شادی کیلئے حکومت کی جانب سے50 ہزارروپئے کی مالی مدد دی جاتی ہے۔
کرناٹک کی واحد مسلم خاتون ایم ایل اے کنیزفاطمہ نے ریاستی حکومت سے مانگ کی ہے کہ وہ محکمہ اقلیتی بہبود کے بجٹ کو 5 ہزار کروڑ روپے تک بڑھائے۔
First published: Feb 13, 2020 10:30 PM IST